ہوم » نیوز » عالمی منظر

خاتون صحافی کا سنسنی خیز دعویٰ- پاکستان کے سابق وزیر داخلہ نے کی آبروریزی، سابق وزیر اعظم نے بھی کی بدتمیزی

امریکہ کی خاتون صحافی ویڈیو میں کہہ رہی ہیں کہ پاکستان کے سابق وزیر داخلہ رحمن ملک نے راشٹرپتی بھون میں ان کی آبروریزی کی تھی۔ سنتھیا کے مطابق اس وقت راشٹرپتی بھون میں اس وقت کے وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی بھی موجود تھے۔ گیلانی نے بھی ان سے بدتمیزی کی تھی۔

  • Share this:
خاتون صحافی کا سنسنی خیز دعویٰ- پاکستان کے سابق وزیر داخلہ نے کی آبروریزی، سابق وزیر اعظم نے بھی کی بدتمیزی
میاں بیوی کے رشتوں کو شرمسار کرنے والی اس واردات کو سن کر ہر کوئی حیران ہے ۔ پولیس نے ملزم شوہر اور اس کے دوست کو گرفتار کرلیا ہے ۔ یہ واردات انیس دن پہلے کی بتائی جارہی ہے ۔ علامتی تصویر ۔

نئی دہلی: امریکہ کی خاتون صحافی کے الزامات کے بعد پاکستان کی سیاست میں بھونچال آگیا ہے۔ خاتون صحافی سنتھیا ڈی رچی (Cynthia D Ritchie) نے جمعہ کو مسلسل کئی ٹوئٹ کئے۔ ایک دیگر صحافی نے سنتھیا کا ویڈیو بھی جاری کیا۔ سنتھیا ویڈیو میں کہہ رہی ہیں کہ پاکستان کے سابق وزیر داخلہ رحمن ملک (Pakistan Ex-Interior Minister Rehman Malik) نے راشٹرپتی بھون میں ان کی آبروریزی کی تھی۔ سنتھیا کے مطابق اس وقت راشٹرپتی بھون میں اس وقت کے وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی (Yousaf Raza Gillani) بھی موجود تھے۔ گیلانی نے بھی ان سے بدتمیزی کی تھی۔




سنتھیا ڈی رچی نے جمعہ کو مسلسل کئی ٹوئٹ کئے۔ انہوں نے کہا ’2011 میں ایک پروگرام کے لئے مجھے  پاکستان کے راشٹرپتی بھون بلایا گیا۔ مجھے لگا کہ ویزا پر بات کرنے کے لئے ایسا کیا گیا ہو۔ میں وہاں پہنچی تو مجھے بکے دیا گیا، پھر ڈرنکس میں نشیلی اشیا دی گئی... اس وقت وہاں پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کی حکومت تھی۔ ایسے میں میں پی پی پی کے لیڈروں کی شکایت کس سے کرتی’۔

سنتھیا ڈی رچی کے ٹوئٹ کے بعد پاکستان کے صحافی غلام عباس شاہ نے ایک ویڈیو ٹوئٹ کیا۔ اس میں سنتھیا کہہ رہی ہیں، ’2011 میں اس وقت کے وزیر داخلہ رحمن ملک نے میری آبروریزی کی۔ آپ صحیح سن رہے ہیں۔ میری عصمت دری ہوئی تھی۔ اس وقت کے وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی اور وزیر صحت مکب الدین شہاب الدین نے بھی چھیڑ چھاڑ کی تھی۔ یہ سب وہاں راشٹرپتی بھون میں موجود تھے’۔

 



سنتھیا ڈی رچی کے ٹوئٹ سے کچھ صارف پوچھ رہے ہیں کہ انہوں نے یہ بات اسی وقت کیوں نہیں بتائی۔ اس پر سنتھیا نے کہا کہ پی پی پی کی حکومت میں اسی پارٹی کے لیڈروں کی شکایت کون سنتا۔ میں نے یہ بات یوایس سفارت خانے میں بتائی تھی۔ اس وقت پاکستان اور امریکہ کے تعلقات اچھے نہیں تھے۔ شاید اس وجہ سے رسپانس سست رہا۔ میں نے شریف شخص سے شادی کی ہے، جس سے میری ملاقات پاکستان میں ہی ہوئی تھی۔ انہوں نے مجھے یہ بات سب کے سامنے لانے کی ہمت دی۔

 

 
First published: Jun 06, 2020 06:24 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading