اپنا ضلع منتخب کریں۔

    ’امریکہ، ہندوستان اور پاکستان کے درمیان تعمیری دوستی و مصروفیت کا خواہاں‘ مسئلہ کشمیر پر امریکی محکمہ خارجہ کا اظہار خیال

    انھوں نے کہا کہ ہم نے ہندوستان کے ساتھ تین جنگیں کی ہیں اور وہ صرف لوگوں کے لئے مزید مصائب، غربت اور بے روزگاری لے کر آئے ہیں، ہم نے اپنا سبق سیکھا ہے اور ہم ہندوستان کے ساتھ امن سے رہنا چاہتے ہیں۔

    انھوں نے کہا کہ ہم نے ہندوستان کے ساتھ تین جنگیں کی ہیں اور وہ صرف لوگوں کے لئے مزید مصائب، غربت اور بے روزگاری لے کر آئے ہیں، ہم نے اپنا سبق سیکھا ہے اور ہم ہندوستان کے ساتھ امن سے رہنا چاہتے ہیں۔

    انھوں نے کہا کہ ہم نے ہندوستان کے ساتھ تین جنگیں کی ہیں اور وہ صرف لوگوں کے لئے مزید مصائب، غربت اور بے روزگاری لے کر آئے ہیں، ہم نے اپنا سبق سیکھا ہے اور ہم ہندوستان کے ساتھ امن سے رہنا چاہتے ہیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • USA
    • Share this:
      امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نیڈ پرائس (Ned Price) نے کشمیر کے معاملے پر میڈیا کے سوال کے جواب میں کہا کہ امریکہ، ہندوستان اور پاکستان کے درمیان تعمیری مصروفیات کا حامی ہے، تاہم بات چیت کی نوعیت کا فیصلہ دونوں ممالک کو کرنا ہوگا۔ کانگریس کے رکن پارلیمنٹ راہول گاندھی کے حالیہ دعووں کے بارے میں پوچھے جانے پر پرائس نے ایک پریس بریفنگ کے دوران کہا کہ امریکہ تعمیری مشغولیت کی حمایت کرتا ہے۔

      کانگریس کے رکن پارلیمنٹ راہول گاندھی نے سابق میں کہا تھا کہ اگر ان کی پارٹی اقتدار میں آتی ہے تو کشمیر پر خودمختاری کا مسئلہ ان کی پہلی ترجیح ہو گی۔ اس پر نیڈ پرائس نے کہا کہ امریکہ، ہندوستان اور پاکستان کے درمیان تعمیری مشغولیت کی حمایت کرتا ہے لیکن اس طرح کی بات چیت کی نوعیت کا فیصلہ دونوں ممالک کو کرنا ہے۔

      قبل ازیں پیر کو پاکستان کے وزیر اعظم شہباز شریف کی جانب سے ہندوستان کے ساتھ مذاکرات کی کال اور اس پیشکش پر نئی دہلی کے ردعمل کے حوالے سے پوچھے گئے سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ہم نے طویل عرصے سے جنوبی ایشیا میں علاقائی استحکام کا مطالبہ کیا ہے، یقیناً ہم یہی دیکھنا چاہتے ہیں۔ ہم اسے ترقی یافتہ دیکھنا چاہتے ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں: 

      انہوں نے مزید کہا کہ جب ہماری شراکت داری کی بات آتی ہے، تو ہندوستان اور پاکستان کے ساتھ ہماری شراکت داری ہوگی۔ یہ وہ تعلقات ہیں جو اپنے طور پر کھڑے ہیں۔ ہم ان تعلقات کو صفر کے طور پر نہیں دیکھتے۔ گزشتہ ہفتے پاکستان کے وزیر اعظم شہباز شریف نے وزیر اعظم نریندر مودی سے تصفیہ طلب مسائل کے حل کے لیے سنجیدہ اور مخلصانہ بات چیت پر زور دیا۔

      پاکستان کے وزیر اعظم شہباز شریف نے دبئی میں قائم العربیہ ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان نے ہندوستان کے ساتھ تین جنگوں کے بعد اپنا سبق سیکھا ہے اور اس بات پر زور دیا کہ اب وہ اپنے پڑوسی کے ساتھ امن چاہتا ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: