ہندوستان اور پاکستان کے درمیان کم ہوئی کشیدگی ، دونوں ممالک چاہیں تو مدد کرنے کیلئے تیار ہوں : ڈونالڈ ٹرمپ

ہندوستان اور پاکستان کے درمیان حالات کے بارے میں ایک سوال کے جواب میں ٹرمپ نے کہا کہ مجھے دونوں ممالک کا ساتھ بہت پسند ہے ، اگر دونوں ممالک چاہیں ، تو میں ان کی مدد کرنے کیلئے تیار ہوں ۔

Sep 10, 2019 07:58 AM IST | Updated on: Sep 10, 2019 07:58 AM IST
ہندوستان اور پاکستان کے درمیان کم ہوئی کشیدگی ، دونوں ممالک چاہیں تو مدد کرنے کیلئے تیار ہوں : ڈونالڈ ٹرمپ

امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ: فائل فوٹو

امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ گزشتہ دو ہفتوں کے مقابلہ میں ہندوستان اور پاکستان کے درمیان کشیدگی کم ہوئی ہے ۔ ساتھ ہی ساتھ انہوں نے ایک مرتبہ پھر کہا کہ اگر جنوبی ایشیا کے دونوں پڑوسی ممالک چاہیں گے تو وہ ثالثی کرنے کیلئے تیار ہیں ۔ 26 اگست کو فرانس میں ہوئی جی 7 میٹنگ میں وزیر اعظم مودی سے ملاقات کے دو ہفتے بعد ٹرمپ نے یہ بیان دیا ہے ۔ فرانس میں ملاقات کے دوران وزیر اعظم مودی نے ٹرمپ سے واضح طور پر کہہ دیا تھا کہ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان کسی معاملہ پر تیسرے ملک کی مداخلت کی ضرورت نہیں ہے ۔

پیر کو صدر ٹرمپ نے وہائٹ ہاوس میں نامہ نگاروں سے کہا کہ آپ جانتے ہیں کہ کشمیر کو لے کر ہندوستان اور پاکستان میں ٹکراو ہے ، میرا ماننا ہے کہ دو ہفتے پہلے دونوں پڑوسی ممالک میں جتنی کشیدگی تھی ، اب اس میں کمی آئی ہے ۔ آپ کو بتادیں کہ ہندوستانی حکومت نے جموں و کشمیر کو خصوصی درجہ دینے والے آرٹیکل 370 کو ختم کردیا ہے ، جس کے بعد سے ہی ہندوستان اور پاکستان میں کشیدگی بڑھ گئی ہے ، جو اب وقت کے ساتھ ساتھ رفتہ رفتہ کم ہورہی ہے۔

Loading...

ہندوستان اور پاکستان کے درمیان ثالثی کی کئی مرتبہ خواہش ظاہر کرچکے ٹرمپ نے ایک مرتبہ پھر ثالثی کرنے کی خواہش ظاہر کی ۔ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان حالات کے بارے میں ایک سوال کے جواب میں ٹرمپ نے کہا کہ مجھے دونوں ممالک کا ساتھ بہت پسند ہے ، اگر دونوں ممالک چاہیں ، تو میں ان کی مدد کرنے کیلئے تیار ہوں ، دونوں ممالک جانتے ہیں کہ ان کے سامنے ثالثی کی تجویز ہے ۔

قابل ذکر ہے کہ اس سے پہلے جولائی 2019 میں ہی پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان کے امریکہ دورے کے وقت ٹرمپ نے کشمیر کے معاملہ پر ثالثی کرنے کی تجویز پیش کی تھی ۔ ہندوستان نے اس تجویز کو فوری طور خارج کردیا تھا ۔ گزشتہ ماہ فرانس میں مودی اور ٹرمپ کی ملاقات کے وقت ٹرمپ نے کہا تھا کہ ہندوستان اور پاکستان کو کشمیر معاملہ کا حل کرنا ہے تو وزیر اعظم مودی نے انہیں واضح طور پر کہہ دیا تھا کہ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان سبھی معاملات دو طرفہ ہیں اور کسی تیسرے ملک کا اس میں کوئی کردار نہیں ہوسکتا ہے ۔

Loading...