اپنا ضلع منتخب کریں۔

    Russia - Ukraine War: امریکہ نے چین کوکیاخبردار! ’روسی افواج کیف پرقبضہ کرنے کی کوششیں کررہی ہیں‘

    یوکرین کے خلاف روس کی جنگ 19 ویں دن میں داخل ہوئی ہے۔ یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی (Volodymyr Zelenskyy) نے ایک اور ویڈیو پوسٹ کر کے حوصلے بلند رکھے، جس میں انہوں نے اپنے ہم وطنوں سے حملہ آوروں کے خلاف ملک کا دفاع کرنے اور ریلی نکالنے کی اپیل کی۔ انھوں نے کہا کہ ایک دوسرے کی مدد کریں!

    یوکرین کے خلاف روس کی جنگ 19 ویں دن میں داخل ہوئی ہے۔ یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی (Volodymyr Zelenskyy) نے ایک اور ویڈیو پوسٹ کر کے حوصلے بلند رکھے، جس میں انہوں نے اپنے ہم وطنوں سے حملہ آوروں کے خلاف ملک کا دفاع کرنے اور ریلی نکالنے کی اپیل کی۔ انھوں نے کہا کہ ایک دوسرے کی مدد کریں!

    یوکرین کے خلاف روس کی جنگ 19 ویں دن میں داخل ہوئی ہے۔ یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی (Volodymyr Zelenskyy) نے ایک اور ویڈیو پوسٹ کر کے حوصلے بلند رکھے، جس میں انہوں نے اپنے ہم وطنوں سے حملہ آوروں کے خلاف ملک کا دفاع کرنے اور ریلی نکالنے کی اپیل کی۔ انھوں نے کہا کہ ایک دوسرے کی مدد کریں!

    • Share this:
      روسی افواج نے یوکرین میں مسلسل بڑھتے ہوئے حملے کو جاری رکھا اور پیر (14 مارچ 2022) کو دارالحکومت کیف (Kyiv) پر قبضے کی کوششوں کو دوگنا کردیا ہے۔ رات بھر جنگ زدہ ملک میں فضائی حملے کے سائرن سنائی دیے اور اقوام متحدہ نے اس کی ہلاکتوں کی تعداد ایک درجے زیادہ بتائی۔

      جیسا کہ یوکرین کے خلاف روس کی جنگ 19 ویں دن میں داخل ہوئی ہے۔ یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی (Volodymyr Zelenskyy) نے ایک اور ویڈیو پوسٹ کر کے حوصلے بلند رکھے، جس میں انہوں نے اپنے ہم وطنوں سے حملہ آوروں کے خلاف ملک کا دفاع کرنے اور ریلی نکالنے کی اپیل کی۔ انھوں نے کہا کہ ایک دوسرے کی مدد کریں! ایک دوسرے کا ساتھ دیں! دفاع کی حمایت کریں! اور ریاست کی حفاظت کریں! ایک ساتھ مل کر ہم جیتیں گے۔

       

      دریں اثنا دونوں فریقوں کے درمیان سفارتی مذاکرات کی بحالی پر امید بھر آئی تھی اور محصور شہر ماریوپول (Mariupol) میں پہلی محفوظ گزرگاہ کے ذریعے شہریوں کی آمد نے اس بات کا اشارہ دیا تھا کہ کہ جنگ کے خاتمے کی امیدیں کی جاسکتی ہیں۔ اگرچہ عارضی طور پر جنگ بندی کے آثار یقینی طور پر اب بھی موجود ہیں۔

      آپریشن کیف کنٹرول:

      روسی صدر ولادیمیر پوتن (Vladimir Putin) کی افواج نے پیر کے روز کیف پر اپنے حملے کو مزید بڑھاتے ہوئے مضافاتی قصبوں ارپن، بوچا اور ہوسٹومیل پر توپ خانے اور گولے داغے۔ یوکرائنی حکام نے بتایا کہ روسی افواج کے کیف میں ایک ہوائی جہاز کے کارخانے پر حملے کے بعد دو افراد ہلاک اور سات زخمی ہو گئے، جس سے ایک بڑی آگ بھڑک اٹھی۔

      روسی توپ خانے کی آگ نے شہر کے شمالی ضلع اوبولونسکی میں نو منزلہ اپارٹمنٹ کی عمارت کو بھی نشانہ بنایا، جس سے مزید دو افراد ہلاک ہو گئے، جبکہ فائر فائٹرز نے تباہ شدہ ڈھانچے سے بچ جانے والوں کو نکالنے کے لیے دوڑ لگا دی۔

      مزید پڑھیں: DHC: یوکرین سےوطن واپس ہوئےمیڈیکل طلباکوہندوستان میں تعلیم جاری رکھنے کی اجازت دینے دہلی ہائی کورٹ میں درخواست

      امریکہ نے چین کو اتحادی روس کے بارے میں خبردار کر دیا:

      امریکی قومی سلامتی کے مشیر جیک سلیوان نے چین کو خبردار کیا کہ وہ روس کو عالمی پابندیوں سے بچنے کی سزا سے بچنے میں مدد کرے جس سے روسی معیشت کو نقصان پہنچا ہے یا یوکرین کے خلاف اس کی جنگ میں ماسکو کو فوجی امداد فراہم کرنا ہے۔

      امریکی حکام کے حوالے سے رپورٹس کے بارے میں پوچھے جانے پر کہ روس نے چین سے یوکرین میں فوجی سازوسامان استعمال کرنے کے لیے کہا ہے، چینی وزارت خارجہ کے ترجمان ژاؤ لیجیان نے کہا کہ بیجنگ امن مذاکرات کو فروغ دینے کے لیے تعمیری کردار ادا کر رہا ہے۔ انہوں نے اس معاملے پر غلط معلومات پھیلانے پر واشنگٹن پر بھی تنقید کی اور اسے بد نیتی پر مبنی اقدام قرار دیا۔

      مزید پڑھیں: Russia Ukraine War:یوکرین کے صدر زیلنسکی کا دعویٰ-روس سے جاری جنگ میں 1300 یوکرینی فوجی مارے گئے

      ہلاکتوں میں اضافہ اور پناہ گزینوں کا بحران مزید گہرا ہوتا جا رہا ہے:

      اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے دفتر نے پیر کو کہا کہ اس نے 24 فروری 2022 سے روسی حملے کے آغاز کے بعد سے یوکرین میں کم از کم 636 شہریوں کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے، جن میں 46 بچے بھی شامل ہیں۔ اس نے کہا کہ اصل تعداد اس سے کہیں زیادہ ہے، کیونکہ خارکیف اور ماریوپول سے اطلاعات موصول ہونے میں تاخیر ہوئی ہے، جہاں روسی افواج نے مسلسل حملہ جاری رکھا ہوا ہے۔

      جنگ کی وجہ سے 28 لاکھ سے زائد افراد یوکرین سے نقل مکانی پر مجبور ہو چکے ہیں۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: