Choose Municipal Ward
    CLICK HERE FOR DETAILED RESULTS
    ہوم » نیوز » عالمی منظر

    اس ملک میں لڑکیوں کے شارٹ اسکرٹ پہننے اور مردوں کے شرٹ لیس ہونے پر لگے گی پابندی ، جانئے کیوں

    مشرقی ایشیائی ملک کمبوڈیا (Cambodia) ایک عجیب و غریب قانون بنانے جارہا ہے ۔ کمبوڈیا کی پارلیمنٹ جلد ہی لڑکیوں کے شارٹ اسکرٹ پہننے اور مردوں کے شرٹ لیس ہونے پر پابندی عائد کرنے جارہی ہے ۔

    • Share this:
    اس ملک میں لڑکیوں کے شارٹ اسکرٹ پہننے اور مردوں کے شرٹ لیس ہونے پر لگے گی پابندی ، جانئے کیوں
    اس ملک میں لڑکیوں کے شارٹ اسکرٹ پہننے اور مردوں کے شرٹ لیس ہونے پر لگی گی پابندی ، جانئے کیوں ۔ علامتی تصویر ۔

    مشرقی ایشیائی ملک کمبوڈیا (Cambodia) ایک عجیب و غریب قانون بنانے جارہا ہے ۔ کمبوڈیا کی پارلیمنٹ جلد ہی لڑکیوں کے شارٹ اسکرٹ پہننے اور مردوں کے شرٹ لیس ہونے پر پابندی عائد کرنے جارہی ہے ۔ اس سلسلہ میں پارلیمنٹ میں ایک تجویز پیش کی گئی ہے ، جس میں کہا گیا ہے کہ ایسے کپڑے پہننا سماج میں جنسی تشدد کو بڑھاوا دے رہا ہے ۔ اس تجویز کو کافی اراکین پارلیمنٹ کی حمایت حاصل ہے اور ایسا مانا جارہا ہے کہ یہ پاس ہوکر جلد ہی قانون بن سکتا ہے ۔


    اگر یہ تجویز پارلیمنٹ میں پاس ہوجاتی ہے ، تو یہ قانون بن جائے گا اور مقامی پولیس کو ایسے کپڑے پہننے والوں کے خلاف قانونی کارروائی کا اختیار مل جائے گا ۔ اس تجویز کو کمبوڈیا کی کئی سرکاری وزارتوں اور قومی پارلیمنٹ سے اجازت مل جانے کا پورا امکان ہے ۔ اس کے بعد اگر کوئی مرد عوامی مقامات پر شرٹ لیس دکھائی دیا یا کوئی خاتون یا لڑکی شارٹ اسکرٹ میں نظر آئی تو اس پر بھاری جرمانہ لگایا جائے گا ۔ قانون کی بار بار خلاف ورزی کرنے پر جیل کی بھی سزا دی جاسکتی ہے ۔


    کمبوڈیا میں حقوق نسواں کیلئے کام کرنے والی خواتین نے اس قانون کو قدامت پسندی بتایا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس قانون کے ذریعہ قدامت پسند لوگ اپنا ایجنڈہ نافذ کرنا چاہتے ہیں اور خواتین پر کنٹرول کیلئے اس قانون کا غلط استعمال کیا جاسکتا ہے ۔ اس قانون میں بھلے ہی اسکرٹ کا ذکر کیا گیا ہے ، لیکن یہ اس طرح کے دیگر کپڑوں پر بھی لاگو ہوگا اور پولیس طے کرے گی کہ پہنا ہوا کپڑا کلچر کے حساب سے نازیبا کے زمرہ میں آئے گا یا نہیں ۔


     قانون کی بار بار خلاف ورزی کرنے پر جیل کی بھی سزا دی جاسکتی ہے ۔ علامتی تصویر ۔
    قانون کی بار بار خلاف ورزی کرنے پر جیل کی بھی سزا دی جاسکتی ہے ۔ علامتی تصویر ۔


    کمبوڈین سینٹر فار ہیومن رائٹس چیریٹی کے ایگزیکٹو ڈٓائریکٹر چک سوپے نے کہا کہ حالیہ مہینوں میں کمبوڈیائی حکومت میں شامل کئی لوگوں نے خواتین کے کپڑوں کو لے کر کئی متنازع بیانات دئے ہیں ۔ وہیں حکومت نے خواتین کے خلاف تشدد کیلئے ان کے کپڑوں کو ذمہ دار ٹھہرایا ہے ۔ 2020 کی شروعات میں کمبوڈیا میں ایک خاتون کو فیس بک لائیو پر کپڑے اور میک اپ کے ساز و سامان بیچنے کے دوران چھوٹے کپڑے پہننے کے الزام میں سزا سنائی گئی تھی ۔
    Published by: Imtiyaz Saqibe
    First published: Aug 03, 2020 04:44 PM IST
    corona virus btn
    corona virus btn
    Loading