ہوش اڑا دے گا یہ معاملہ: جس 8 سال کی بچی کو لیا تھا گود وہ نکلی 30 کی! کرنے والی تھی ماں۔باپ کا قتل

اینا نے بتایا کہ پیدائش کے وقت نٹالیہ کو یہ کہتے ہوئے چھوڑ دیا کہ اس کی چھوٹی ٹانگیں ، چھوٹے بازو ہیں۔ اس کی گردن نہیں تھی۔ انہوں نے کہا کہ میں نے اس کے بعد اپنی بچی کو نہیں دیکھا۔

Oct 10, 2019 12:37 PM IST | Updated on: Oct 10, 2019 02:46 PM IST
ہوش اڑا دے گا یہ معاملہ: جس 8 سال کی بچی کو لیا تھا گود وہ نکلی 30 کی! کرنے والی تھی ماں۔باپ کا قتل

(Photo Credit- Daily Star)

واشنگٹن: سال 2010 میں  امریکی جوڑے نے ایک 8 سالہ بچی کو گود لیا تھا۔ کچھ دن کے بعد جب انہیں  لڑکی کی جسمانی سرگرمیوں پر شبہ ہوا تو جوڑے نے ڈاکٹر سے رابطہ کیا اور پھر ایک حیرت انگیز بات سامنے آئی۔ ڈاکٹر نے بتایا کہ یہ لڑکی 8 سال کی نہیں بلکہ 14 سال سے زیادہ کی ہے۔ ڈیلی اسٹار کی خبر کے مطابق  یہ معاملہ امریکہ کے انڈیانا کا ہے جہاں ایک جوڑے نے سال 2010 میں ایک لڑکی کو گود لیا تھا۔ اس بچی کا قد ایسا تھا کہ انہیں شک ہی نہیں ہوا کہ اس کی عمر کتنی ہے۔ تاہم  اس کے فورا بعد ہی  جوڑے نے لڑکی پر الزام لگا دیا کہ وہ لڑکی اپنی ماں کے کہنے پر ان کے کنبے کو ختم کرنے کی سازش رچ رہی ہے۔

نٹالیہ نام کی یہ لڑکی  ایک نایاب طرح کے بونے پن  کی شکار ہے اور اسے گود لینے والے والدین کرسٹین اور مائیکل بارنیٹ کے چھوڑنے کے بعد اب یہ کرمنل کیس میں ہے۔

کرسٹین اور مائیکل پر بھی الزام ہے کہ انہوں نے یوکرین کی 3 فٹ اس بالغ لڑکی کا خیال نہیں رکھا۔۔  وہیں اب  مائیکولائیو رہنے والی 40 سال کی اس کی ماں اینا ولوڈائمی ورنا گاوا سامنے آئی ہیں جن کا ماننا ہے کہ ان کی بیٹی ایک بچہ ہے جس کی عمر 16 سال ہے۔

Loading...

(Photo Credit- Daily Star) ۔لڑکی کی حیاتیاتی ماں اینا

اینا نے کہا کہ وہ ان الزامات کے بارے میں جان کر حیرت زدہ ہیں اوراس نے انکشاف کیا ہے کہ بچی کے معذورہونے کی وجہ سے بچی کو گود دے دیا تھا۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ ان کی ماں اور ڈاکٹروں دونوں نے ان سے کہا تھا کہ وہ بچی کو چھوڑ دیں اور اپنی زندگی برباد نہ کریں اور جانتی تھی کہ وہ اس بچی کی پرورش نہیں کرسکے گی۔

जिस 8 साल की बच्ची को लिया था गोद वो निकली 30 की! करने वाली थी मां-बाप का मर्डर

اینا نے بتایا کہ پیدائش کے وقت نٹالیہ کو یہ کہتے ہوئے چھوڑ دیا کہ اس کی چھوٹی ٹانگیں ، چھوٹے بازو ہیں۔ اس کی گردن نہیں تھی۔ انہوں نے کہا کہ میں نے اس کے بعد اپنی بچی کو نہیں دیکھا۔ انہوں نے کہا کہ وہ لڑکی کبھی ٹھیک نہیں ہوتی ، اسے کرسی یا بستر پر باندھنا پڑتا ۔ اینا نے بتایا کہ انہیں لگتا تھا کہ اس کی بچی امریکہ میں بہت اچھی طرح سے رہ رہی ہے۔

مجھے لگتا تھا کہ سب کچھ بالکل صحیح ہے۔ لیکن اب مجھے یہ سب پتہ چلا۔ اب وہ چاہتی ہیں کہ  جب وہ 18 سال کی ہو جائے تو اسے مناکر یوکرین واپس لے آئیں۔ پروسکیوٹرس کا دعویٰ ہے کہ برنیٹس اسے فلیٹ میں اکیلا چھوڑ کر کناڈا میں شفٹ ہوگئے۔ اس سے پہلے انہوں نے قانونی طور پر اس کی عمر 22 کروا دی۔

(Photo Credit-Daily Star) اب اس فیملی کے ساتھ رہ رہی ہے نتالیہ: (Photo Credit-Daily Star) اب اس فیملی کے ساتھ رہ رہی ہے نتالیہ:

کرسٹین نے دعوی کیا کہ نتالیہ ایک بالغ ہے اور وہ ان کے کنبے کو مارنا چاہتی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ وہ 2010 میں اس سے پہلی بارملے تھے۔ وہ یوکرین کی رہنے والی تھیں اور انہیں لگا کہ وہ یتیم ہیں ، لہذا انہوں نے اس کو گود لے لیا۔ حالانکہ ڈاکٹروں نے اس کی عمر 8 سال بتائی تھی لیکن پھر بھی کرسٹین کو اس پر شک ہوا تھا۔

انہوں نے بتایا کہ نتالیہ نے انہیں زہر دینے کی کوشش کی اور ان کے بچوں کو جان سے مارنے کی دھمکی بھی دی۔ انہوں نے ڈیلی میل ٹی وی کو بتایا کہ وہ کہا کرتی تھی کہ وہ ان سب کو مار ڈالے گی اور ایسی تصویریں بناتی تھی جس سے صاف ظاہر ہوتا تھا کہ وہ انہیں مارنا چاہتی ہیں۔ صرف یہی نہیں ، وہ انہیں کمبل میں لپیٹ کر گھر کے پیچھے چھوڑ آتی تھی۔

کئی مرتبہ کی مارنے کی کوشش

کرسٹین نے بتایا کہ وہ آدھی  رات میں ان لوگوں کے درمیان آکر کھڑی ہوجاتی تھی۔ اس طرح سے کہ وہ لوگ سو نہیں پاتے تھے۔ کرسٹین نے بتایا کہ اس نے گھر میں موجود تمام تیز ہتھیاروں کو چھپا رکھا تھا۔

کرسٹین نے بتایا کہ میں نے اسے اپنی کافی میں کیمیکل ، بلیچ اور ونڈ یکس جیسا کچھ  ملاتے ہوئے دیکھا۔ جب میں نے اس سے پوچھا کہ وہ کیا کررہی ہے تو اس نے کہا کہ وہ مجھے مارنا چاہتی ہے۔ انہوں نے یہ بھی دعوی کیا کہ نتالیہ نے شیشوں پر خون پھینکا اور چلتی گاڑی سے چھلانگ لگانے کی کوشش کی۔

بچی میں تھیں بالغ والی علامات

کرسٹین نے بتایا کہ جب اس نے دیکھا کہ نتالیہ  کو پیریڈس ہو رہے ہیں اور وہ انہیں چھپانے کی کوشش کر رہی ہے تو اسے شک ہونے لگا۔ وہیں اور  بہت سی دوسری تبدیلیوں کے بارے میں جاننے کے بعد وہ اسے فیملی ڈاکٹر کے پاس لے گئی جہاں انہیں پتہ چلا کہ لڑکی کی عمر 14 سال سے زیادہ ہے۔ صرف یہی نہیں ، 2012 میں اس نے سالگرہ کی تقریب کے دوران  کرسٹین کو بجلی کے کرنٹ سے  مارنے کی بھی کوشش کی تھی۔

نتالیہ کو ریاست کے نفسیاتی یونٹ میں داخل کرایا گیا تھا کیونکہ وہ مبینہ طور پر دوسروں کے لئے خطرہ بن گئی تھی۔ جہاں اس نے ایک نرس کو بتایا کہ اس کی عمر 18 سال ہے۔ 2012 میں لکھے گئے ایک ڈاکٹر کے خط کے مطابق ، نتالیہ کی 2003 کی پیدائش جھوٹی ہے۔ اس سے قبل مائیکل کرسٹین نے الزام لگایا تھا کہ لڑکی کی عمر 30 سال ہے۔ جس کی وجہ سے ان کی اصل والدہ اینا غلط بتایا تھا۔ نتالیہ نے زندگی بھر ایک بچے کی طرح ناٹک کیا۔ یہ اطلاع ملنے کے بعد برنیٹس نے اسے وہیں ایک کرائے کے مکان میں چھوڑ دیا اور کناڈا شفٹ ہوگئے۔

پولیس کو نتالیہ فلیٹ میں ملی اور اس نے انہیں بتایا کہ جب سے اس کے اہل خانہ اسے چھوڑکر گئے ہیں تو وہ ان سے نہیں ملی ہے۔ پانچ سال کی جانچ و تفتیش کے بعد  گزشتہ ہفتے اس جوڑے پرلڑکی کو اکیلا چھوڑ دینے کا الزام لگا ہے۔ حالانکہ کرسٹین نے ان الزامات سے انکار کیا ہے اور کہا ہے کہ یہ اڈاپشن یعنی گود لینا غلط تھا۔

Loading...