உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    خاتون گھر میں ہی بنا رہی تھی بوگس کوپن، اب تک 240 کروڑ کا کیا فرضی واڑہ

     ورجینیا سے تعلق رکھنے والی یہ خاتون گھر پر بڑے برانڈز کے جعلی کوپن چھاپ رہی تھی۔ پولیس کو اس کے گھر سے پراکٹر اینڈ گیمبل، کوکا کولا اور زپلوک برانڈز سمیت لاکھوں کوپن ملے ہیں۔

    ورجینیا سے تعلق رکھنے والی یہ خاتون گھر پر بڑے برانڈز کے جعلی کوپن چھاپ رہی تھی۔ پولیس کو اس کے گھر سے پراکٹر اینڈ گیمبل، کوکا کولا اور زپلوک برانڈز سمیت لاکھوں کوپن ملے ہیں۔

    ورجینیا سے تعلق رکھنے والی یہ خاتون گھر پر بڑے برانڈز کے جعلی کوپن چھاپ رہی تھی۔ پولیس کو اس کے گھر سے پراکٹر اینڈ گیمبل، کوکا کولا اور زپلوک برانڈز سمیت لاکھوں کوپن ملے ہیں۔

    • Share this:
      ورجینیا۔ آج کل امیر بننے کے لیے لکی کوپن یا لاٹری خریدنے کا رجحان بڑھتا ہی جا رہا ہے۔ لوگ تیزی سے امیر ہونے کے لیے ایسے کوپن خرید کر اپنی قسمت آزماتے ہیں۔ اس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ایک خاتون نے لوگوں سے 32 ملین ڈالر یعنی 240 کروڑ کیٹھگی کر لی۔ ورجینیا سے تعلق رکھنے والی یہ خاتون گھر پر ہی بڑے برانڈز کے جعلی کوپن چھاپ ( Bogus Coupons) رہی تھی۔ پولیس کو اس کے گھر سے پراکٹر اینڈ گیمبل، کوکا کولا اور زپلوک برانڈز سمیت لاکھوں کوپن ملے ہیں۔
      عدالت نے خاتون کو اس فراڈ کے جرم میں 12 سال قید کی سزا سنائی ہے۔ پولیس کے مطابق خاتون نے ان بوگس کوپنوں کے ذریعے اپنے گھر کی مرمت کروائی۔ لگزری گاڑیاں خریدیں اور بیرون ملک چھٹیاں گزارنے کے پیسے بھی ادا کئے۔
      نیویارک ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق 41 سالہ لوری این ولانوئیوا ٹیلنس نے دو سال قبل بوگس کوپن چھاپنا شروع کیا تھا۔ وہ گھر پر کئی کمپنیوں کے کوپن ڈیزائن اور پرنٹ کرتی تھی۔ یہ فیس بک اور ٹیلی گرام جیسی سوشل میڈیا سائٹس پر 'ماسٹر شیف' کے نام سے شیئر کیے گئے تھے۔
      پھر انہیں 2000 سے زیادہ صارفین کو بیچ دیا۔ اس سے لوری نے موٹی رقم حاصل کی۔ بعد میں جب یہ کوپن کمپنیوں تک پہنچے تو دکانداروں کو معلوم ہوا کہ یہ فرضی ہیں۔

      اس معاملے کی تفتیش کرنے والے افسر جیسن تھامسن نے کہا کہ 'ان کی ہر جیکٹ کی جیب میں کوپن ہوتے تھے'۔ ایف بی آئی FBI کو لوری این ولانوئیوا ٹیلنس کے کمپیوٹر پر 13,000 سے زیادہ مختلف مصنوعات کے کوپن تیار کرنے کے ڈیزائن بھی ملے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: