ہوم » نیوز » عالمی منظر

اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے درمیان ویزا میں چھوٹ کا معاہدہ

اسرائیل اورمتحدہ عرب امارات کے درمیان ویزا کی چھوٹ کے اس معاہدے کا مطلب یہ ہوگا کہ دونوں ممالک کے شہریوں کو پہلے ویزا کے لئے درخواست دینے کی پریشانی سے گزرے بغیر ایک دوسرے کے ممالک میں داخل ہونے کی اجازت ہوگی۔

  • UNI
  • Last Updated: Oct 20, 2020 11:01 AM IST
  • Share this:
اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے درمیان ویزا میں چھوٹ کا معاہدہ
ٹرمپ کی موجودگی میں اسرائیل کا متحدہ عرب امارات اور بحرین کے ساتھ معاہدہ۔ فائل فوٹو

تل ابیب۔ اسرائیل اور متحدہ عرب امارات آج بروز منگل ویزا میں چھوٹ کے ایک معاہدے پر دستخط کرنے والے ہیں جو اسرائیل کا کسی عرب ملک کے ساتھ اپنی نوعیت کا پہلا معاہدہ ہوگا۔ اس معاہدے پر یہاں ایک اعلیٰ سطحی میٹنگ میں دستخط کیے جائیں گے۔ تقریب میں وزیر اعظم بنیامین نیتن یاہو اور متحدہ عرب امارات کے دو سینئر وزراء کے علاوہ امریکی وزیر خزانہ اسٹیون منوچن بھی شرکت کریں گے۔ اماراتی وفد اسرائیل کا دورہ کرنے والا خلیجی ممالک کا پہلا اعلی سطحی وفد ہوگا۔ یہ اطلاع ٹائمز آف اسرائیل نے دی ہے۔


اسرائیل اورمتحدہ عرب امارات کے درمیان ویزا کی چھوٹ کے اس معاہدے کا مطلب یہ ہوگا کہ دونوں ممالک کے شہریوں کو پہلے ویزا کے لئے درخواست دینے کی پریشانی سے گزرے بغیر ایک دوسرے کے ممالک میں داخل ہونے کی اجازت ہوگی۔

بہر حال یہ معاہدہ دونوں ممالک کے توثیق کے بعد ہی عمل میں آجائے گا۔ اس کے لئے اسرائیلی پارلیمان میں ووٹنگ کے ذریعہ منظوری کی ضرورت ہوگی۔


اسرائیل اس وقت چار عرب ممالک مصر ، اردن ، بحرین اور متحدہ عرب امارات کے ساتھ امن کے رخ پر معاہدہ بند ہے، لیکن اب تک صرف مؤخر الذکر کے ساتھ ہی بغیر ویزا آنے جانے کی اجازت دینے پر اتفاق کیا جا رہا ہے۔ اسرائیل کے قریب ترین حلیف امریکہ کے ساتھ ابھی تک اسرائیل کا ویزا کی چھوٹ کا کوئی معاہدہ نہیں۔

قابل ذکر ہے کہ 1948 میں اسرائیل کی آزادی کے اعلان کے بعد سے اسرائیل نے 1979 میں مصر اور 1994 میں اردن کے ساتھ معاہدوں پر دستخط کیا تھا، جبکہ رواں سال ستمبر میں متحدہ عرب امارات اور بحرین کے ساتھ امن معاہدہ طے پایا۔متحدہ عرب امارات اور بحرین کا کبھی بھی اسرائیل کے ساتھ جنگ ​​نہیں ہوا ہے اور دونوں عرب ممالک کے برسوں سے اسرائیل کے ساتھ غیر سرکاری تعلقات استوار رہے ہیں۔ نیتن یاہو نے اس سے پہلے 15 ستمبر کو وائٹ ہاوس میں معاہدے پر دستخط کے بعد کہا تھا کہ اسرائیل ، متحدہ عرب امارات اور بحرین شراکت داری، خوشحالی اور امن کے ساتھ مستقبل میں سرمایہ کاری کے خواہاں ہیں۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Oct 20, 2020 11:01 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading