உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    War in Ukraine: روسی جارحیت کے بعد سے تقریباً 80,000 روسی فوجی ہلاک، پینٹاگون کادعویٰ

    یوکرین نے امریکہ سے بھاری ہتھیاروں کی فراہمی کا مطالبہ کیا ہے۔ (فائل فوٹو)

    یوکرین نے امریکہ سے بھاری ہتھیاروں کی فراہمی کا مطالبہ کیا ہے۔ (فائل فوٹو)

    امریکہ سے آنے والے مغربی ہتھیاروں اور کھیپوں کی وجہ سے روسی افواج کو بھی یوکرائنی افواج کی مزاحمت کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ یوکرین میں جنگ کے آغاز کے بعد سے امریکہ اپنے ہتھیاروں اور فوجی مدد کی 18ویں کھیپ بھیجے گا۔

    • Share this:
      پنٹاگون (Pentagon) کے اہلکار نے اس ہفتے کے شروع میں تصدیق کی کہ یوکرین کے خلاف جنگ کے آغاز کے بعد سے روس نے 70,000 سے 80,000 فوجیوں کو کھو دیا ہے۔ روسی صدر ولادیمیر پوٹن (Vladimir Putin) نے فروری میں یوکرین میں فوجی آپریشن شروع کیا تھا۔ امریکہ اور اس کے یورپی اتحادیوں نے اسے حملہ قرار دیا ہے۔

      پینٹاگون کے اہلکار اور انڈر سیکریٹری برائے دفاع کولن کاہل (Colin Kahl) نے ایک پریس بریفنگ کے دوران کہا کہ درست اعداد و شمار مختلف ہو سکتے ہیں لیکن پریس کے ساتھ شیئر کیے گئے اعداد و شمار 'بال پارک میں' ہیں۔ اس سے قبل اتوار کو یوکرین کی مسلح افواج کے جنرل سٹاف نے دعویٰ کیا تھا کہ اب تک 42,200 فوجی ہلاک ہو چکے ہیں۔

      ملٹری ٹائمز کی ایک رپورٹ سے پتہ چلتا ہے کہ فوجی نقصانات کی زیادہ تعداد کا مطلب یہ ہے کہ روسی فوج بھاری نقصان اٹھاتے ہوئے یوکرائنی حملے پر ثابت قدم ہے۔ روسی فوج کو لاجسٹکس، سپلائی سسٹم کی ناکامی اور شہری آبادیوں اور رہائشی علاقوں پر بمباری جیسے مسائل کا سامنا ہے۔

      جنگ اب یوکرین کے مشرقی علاقے میں بھی جاری ہے۔ کاہل نے پریس سے خطاب کرتے ہوئے اس بات پر روشنی ڈالی کہ 40 ملین سے زیادہ یوکرینی اپنے ملک کی بقا کی جنگ لڑ رہے ہیں۔ کاہل کے حوالے سے ملٹری ٹائمز نے کہا کہ جنگ میں بہت زیادہ دھند ہے لیکن آپ جانتے ہیں کہ اس کا نقصان کس کو ہوا؟ میرے خیال میں یہ تجویز پیش کرنے درست ہے کہ روسیوں نے چھ ماہ سے بھی کم عرصے میں 70,000 یا 80,000 ہلاکتیں کی ہیں۔

      کاہل نے کہا کہ اس تعداد میں کارروائی میں ہلاک ہونے والے اور زخمی ہونے والے دونوں شامل ہیں۔ یوکرین کے حکام نے میڈیا کو یہ نہیں بتایا کہ انہیں کتنا نقصان ہوا ہے لیکن یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی (Volodymyr Zelensky) کے ایک معاون نے کہا کہ نقصانات روزانہ 200 اہلکاروں تک پہنچ سکتے ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں:
      UNSC: غزہ پٹی پر لگاتار اسرائیلی حملے، اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نےطلب کیاہنگامی اجلاس

      کاہل نے کہا کہ پوٹن کی افواج نے زیلنسکی کو یوکرین سے بے دخل کرنے اور وہاں کریملن کی حمایت یافتہ حکومت قائم کرنے کے اپنے مقصد کو پس پشت ڈالنے کی کوششوں کے پیش نظر نقصانات میں اضافہ ہوا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      UAE: یو اے ای کی شہزادی نےغزہ پٹی پر اسرائیلی فضائی حملوں کے خلاف اٹھائی آواز!

      امریکہ سے آنے والے مغربی ہتھیاروں اور کھیپوں کی وجہ سے روسی افواج کو بھی یوکرائنی افواج کی مزاحمت کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ یوکرین میں جنگ کے آغاز کے بعد سے امریکہ اپنے ہتھیاروں اور فوجی مدد کی 18ویں کھیپ بھیجے گا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: