உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    PM Modi: وزیراعظم مودی کوپن ہیگن میں ڈھول بجانے میں مصروف، ڈنمارک میں مودی کا پرتپاک خیرمقدم 

    وزیر اعظم ہند نریندر مودی (Prime Minister Narendra Modi)

    وزیر اعظم ہند نریندر مودی (Prime Minister Narendra Modi)

    مودی نے کہا کہ 'استعمال کرنا اور پھینک دینے‘ کی ذہنیت کرہ ارض کے لیے منفی ہے۔ کھپت پر مبنی نقطہ نظر سے باہر نکلنا ضروری ہے اور وقت کی ضرورت ہے کہ 'لائف - طرز زندگی برائے ماحولیات' (LIFE -- Lifestyle for Environment) کو فروغ دیا جائے۔ آب و ہوا کو نقصان پہنچانے میں ہندوستان کا کردار نہ ہونے کے برابر ہے۔ کرۂ ارض کو نقصان پہنچانے میں ہندوستانیوں کا کوئی کردار نہیں ہے۔

    • Share this:
      وزیر اعظم ہند نریندر مودی (Prime Minister Narendra Modi) نے منگل کے روز اپنے تین ملکوں کے یورپ کے دورے کے ایک حصے کے طور پر ڈنمارک کے کوپن ہیگن (Denmark's Copenhagen) کے دورے کے دوران ڈھول بجانے میں اپنا ہاتھ آزمایا۔ نریندر مودی جب دن کے اوائل میں ڈنمارک پہنچے تو ہندوستانی برادری کے لوگوں نے ان کا پرتپاک استقبال کیا۔

      ایک ویڈیو میں سرمئی ہندوستانی لباس میں ملبوس نریندر مودی کو ایک ہاتھ سے ڈھول بجاتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے جبکہ دوسرے ہاتھ سے موسیقی کے ساز پر آرام کر رہے ہیں۔ وہ ہندوستانی تارکین وطن کے ممبروں سے گھرے ہوے ہیں جو ڈھول کی تھاپ پر پرفارم کرتے نظر آتے ہیں۔

      مودی نے ڈنمارک میں آباد ہندوستانی کمیونٹی سے بھی خطاب کیا، اس بات پر زور دیا کہ ہندوستانیوں کا سیارے کو نقصان پہنچانے میں کوئی کردار نہیں ہے اور وقت کی ضرورت ہے کہ 'ماحول کے لیے طرز زندگی' کو فروغ دیا جائے۔ انہوں نے مزید کہا کہ وہ کم از کم اپنے پانچ غیر ہندوستانی دوستوں کو ہندوستان آنے پر راضی کریں۔

      مزید پڑھیں: راج ٹھاکرے کی مشکلات میں ہوگا اضافہ؟ پہلے سے ہی جاری ہے غیر ضمانتی وارنٹ

      مودی نے کہا کہ 'استعمال کرنا اور پھینک دینے‘ کی ذہنیت کرہ ارض کے لیے منفی ہے۔ کھپت پر مبنی نقطہ نظر سے باہر نکلنا ضروری ہے اور وقت کی ضرورت ہے کہ 'لائف - طرز زندگی برائے ماحولیات' (LIFE -- Lifestyle for Environment) کو فروغ دیا جائے۔ آب و ہوا کو نقصان پہنچانے میں ہندوستان کا کردار نہ ہونے کے برابر ہے۔ کرۂ ارض کو نقصان پہنچانے میں ہندوستانیوں کا کوئی کردار نہیں ہے۔

      مزید پڑھیں:

      انہوں نے اس بات پر بھی زور دیا کہ ہندوستان کا ہماری ماں دھرتی کا استحصال کرنے میں کوئی ہاتھ نہیں ہے اور کہا کہ اس نے اسے بچانے کے چیلنج کو قبول کیا ہے۔ سال 2070 تک ہم نے نیٹ زیرو کا ہدف مقرر کیا ہے... ہندوستان اپنی آب و ہوا کی کارروائی کو پورا کرنے میں کامیاب رہا ہے کیونکہ دوسروں کے برعکس جنہوں نے کرہ ارض کو بچانے کی تمام تر ذمہ داری کثیر الجہتی تنظیموں پر ڈالی ہے، ہم اسے ہر شہری کی ذمہ داری کے طور پر دیکھتے ہیں۔ ان کا تھوڑا سا دنیا کو بچانے کے لیے کوشاں ہیں۔

      واضح رہے کہ مودی جرمنی سے کوپن ہیگن پہنچے، ہوائی اڈے پر ڈنمارک کے ہم منصب نے خصوصی اشارے کے طور پر ان کا استقبال کیا۔ وہ آئندہ فرانس کا دورہ کریں گے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: