உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دہشت گرد حافظ سعید کا قریبی ہے سدھو کے ساتھ تصویرکھنچوانے والا خالصتانی حامی گوپال سنگھ چاولہ

    نوجوت سنگھ سدھو کے ساتھ خالصتانی حامی گوپال سنگھ نے کھنچوائی تصویر۔

    نوجوت سنگھ سدھو کے ساتھ خالصتانی حامی گوپال سنگھ نے کھنچوائی تصویر۔

    گوپال سنگھ کو ہندوستان کا سخت مخالف سمجھا جاتا ہے۔ وہ شدت پسندانہ طورپرخالصتانی تحریک کا حامی اورہندوستان مخالف سمجھا جاتا ہے۔ گوپل سنگھ چاولہ پاکستان کے ننکانہ صاحب میں رہتا ہے۔

    • Share this:
      کرتار پورصاحب کاریڈورکے جس پروگرام میں پاکستان نے پنجاب کے وزیراورسابق کرکٹر نوجوت سنگھ سدھوکومدعوکیا تھا، اس میں خالصتان حامی سکھ لیڈرگوپال سنگھ چاولہ کو بھی مدعو کیا گیا تھا۔ اس نے اس پروگرام میں نہ صرف سدھو کے ساتھ تصویریں کھنچوائیں بلکہ پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل قمرباجوا کے ساتھ ہاتھ بھی ملایا۔

      گوپال سنگھ کوہندوستان کا سخت مخالف سمجھا جاتا ہے۔ وہ شدت پسندانہ طورپرخالصتانی تحریک کا حامی اورہندوستان مخالف سمجھا جاتا ہے۔ گوپال سنگھ چاولہ پاکستان کے ننکانہ صاحب میں رہتا ہے۔ وہ پاکستان سکھ گرودوارہ منیجنگ کمیٹی کا جنرل سکریٹری اورپنجابی سکھ سنگت کا چیئرمین ہے۔ اسے پاکستان کے سکھوں سے منسلک سبھی پروگراموں میں مدعو کیا جاتا ہے۔

      فیس بک پرپاکستان کی تعریف

      اس کے فیس بک پیج پرپاکستان کی تعریف اورہندوستان کی تنقید کی باتیں نظرآتی ہیں۔ اسے ہمیشہ پاکستان کے چینلوں میں ڈبیٹ میں بلایا جاتا ہے، جس میں وہ خالصتان کی آوازبلند کرتا ہے اورہندوستان اورہندوستانی سیکورٹی اہلکاروں کے خلاف زہراگلتا ہے، لیکن وہ یہ بھی چاہتا ہے کہ خالصتان ایک الگ ملک بنے اوراس میں پاکستان کے پنجاب کے علاقے بھی شامل ہوں۔

      عمران خان کے ساتھ بھی تصویر

      imran-gopal

      حال فی الحال میں اس نے اگرنوجوت سنگھ سدھو کے ساتھ فیس بک پرتصویرپوسٹ کی تو ساتھ ہی عمران خان کے ساتھ بھی گرودوارہ پروگراموں میں پاکستان کے وزیراعظم کے ساتھ اس کی تصویریں بھی ہیں۔ مانا جاتا ہے کہ پاکستان کے نوجوان پنجابیوں میں وہ مقبول ہے۔ اس کی تعلیم کراچی کے پرانے اسکول اسلامیہ ہائی اسکول میں ہوئی ہے، اسے گوپی کے نام سے جانا جاتا ہے۔

      ہندوستانی افسران کو روکا تھا

      فیس بک پیج پراس کی تنقید کرنے والے بھی کم نہیں ہیں۔ چاولہ وہ شخص ہے، جس نے حال میں ہی ہندوستان سے گئے سکھ عقیدتمندوں سے ملنے گئے ہندوستانی سفارت خانہ کے افسران کو روکا تھا۔ 42 سالہ گوپال سنگھ کا نام کچھ دن پہلے پنجاب کے نرنکاری سماگم میں گرینیڈ حملے میں آیا تھا، جس میں تین لوگ مارے گئے تھے۔

      دہشت گردوں سے بھی بھی قربت

      saeed-gopal

      گوپال سنگھ کو پاکستان کے ماسٹرمائنڈ دہشت گرد اورلشکرطیبہ کے سربراہ حافظ سعید کا قریبی بھی مانا جاتا ہے۔ ان کی کئی تصویریں بھی ساتھ ساتھ دیکھی گئی ہیں۔ مانا جاتا ہے کہ پاکستان کے دہشت گرد تنظیموں سے بھی اس کے رشتے ہیں۔
      First published: