உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کون ہیں پاکستان کے نئے آرمی چیف عاصم منیر؟ مانے جاتے ہیں عمران خان اور کٹر ہندوستان مخالف

    کون ہیں پاکستان کے نئے آرمی چیف عاصم منیر؟ مانے جاتے ہیں عمران خان اور کٹر ہندوستان مخالف

    کون ہیں پاکستان کے نئے آرمی چیف عاصم منیر؟ مانے جاتے ہیں عمران خان اور کٹر ہندوستان مخالف

    نئے فوجی سربراہ کے طور پر منیر کی تقرری سابق وزیراعظم کے لیے ایک جھٹکا ہونے کا امکان ہے کیونکہ یہ فوج اور خان کے درمیان تانزعہ کے ساتھ جڑا ہوا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Islamabad
    • Share this:

      پاکستان کے نئے فوجی سربراہ عاصم منیر کو سابق وزیراعظم عمران خان اور ہندوستان کا کٹر مخالف مانا جاتا ہے۔ منیر کو فوجی سربراہ بنائے جانے کا اعلان پاکستان کی وزیراطلاعات مریم اورنگ زیب نے کیا ہے۔ بتادیں کہ عاصم منیر موجودہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجواہ کی جگہ لیں گے، جو 29 نومبر کو سبکدوش ہونے والے ہیں۔ فی الحال، عاصم منیر کا نام صدر کے پاس منظوری کے لیے بھیجا گیا ہے جو صرف ایک رسم ہے۔ وہیں لیفٹیننٹ جنرل ساحر شمشاد مرزا کو جوائنٹ چیف آف اسٹاف کمیٹی کا صدر منتخب کیا گیا ہے۔ فوج نے تقرری کے لیے 6 اعلیٰ لیفٹیننٹ جنرلوں کے نام بھیجے تھے، جس میں عاصم منیر کا نام بھی تھا۔


      عاصم منیر کو ستمبر 2018 میں لیفٹیننٹ جنرل کے عہدے پر پروموٹ کیا گیا تھا اور بعد میں انہیں ڈی جی انٹر سروسز انٹلیجنس (آئی ایس آئی) کے طور پر مقرر کیا گیا۔ اس کے ایک سال بعد فروری 2019 میں پلوامہ میں خودکشی حملہ ہوا، جس کے نتیجے میں سی آر پی ایف کے 40 جوان شہید ہوگئے تھے۔ تبھی سے ہندوستان اور پاکستان کے درمیان کشیدگی بڑھ گئی تھی۔ اس معاملے سے واقف لوگوں کے مطابق، منیر اس وقت پاکستان کے ردعمل اور سیکورٹی پارلیسیوں کو شکل دینے کے لیئے فوجی فیصلہ سازوں میں شامل تھے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      پاکستانی معیشت تباہی کاشکار! ذخائرہورہے ہیں ختم، معاشی غیر یقینی صورتحال میں مسلسل اضافہ

      یہ بھی پڑھیں:
      پاکستان کےنئے آرمی چیف کےنام کودی گئی قطعیت، لیفٹیننٹ جنرل عاصم منیرنئے ہوں گےآرمی چیف

      اس کے بعد آئی ایس آئی سربراہ کے طور پر ان کا دور اچانک ختم ہوگیا کیونکہ ان کا رویہ اور نظریہ مبینہ طو رپر سابق وزیراعظم عمران خان کے ساتھ اچھا نہیں رہا تھا۔ نئے فوجی سربراہ کے طور پر منیر کی تقرری سابق وزیراعظم کے لیے ایک جھٹکا ہونے کا امکان ہے کیونکہ یہ فوج اور خان کے درمیان تانزعہ کے ساتھ جڑا ہوا ہے۔ منیر موجودہ وزیراعظم شہباز شریف کے حامی بھی ہیں۔ اس لیے یہ قیاس لگائے جارہے ہیں کہ عمران خان کی سیاست پر اس کا برا اثر پڑسکتا ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: