உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    WHO  کے ٹیکنیکل گروپ کا سجھاؤ، Omicron Variant سے بچاؤ کیلئے Covid Vaccine میں تبدیلی کی ضرورت 

    WHO says COVID-19 vaccines may need to be updated for Omicron: ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے ٹیکنیکل ایڈوائزری گروپ نے منگل کو یہ سجھاؤ دیا۔ اس تکنیکی گروپ کا کہنا ہے کہ اومیکرون جیسے ویریئنٹ Variant  سے لڑنے کے لیے موجودہ کووڈ 19 ویکسین  COVID-19 vaccine میں تبدیلیوں کی ضرورت پڑ سکتی ہے۔

    WHO says COVID-19 vaccines may need to be updated for Omicron: ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے ٹیکنیکل ایڈوائزری گروپ نے منگل کو یہ سجھاؤ دیا۔ اس تکنیکی گروپ کا کہنا ہے کہ اومیکرون جیسے ویریئنٹ Variant سے لڑنے کے لیے موجودہ کووڈ 19 ویکسین COVID-19 vaccine میں تبدیلیوں کی ضرورت پڑ سکتی ہے۔

    WHO says COVID-19 vaccines may need to be updated for Omicron: ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے ٹیکنیکل ایڈوائزری گروپ نے منگل کو یہ سجھاؤ دیا۔ اس تکنیکی گروپ کا کہنا ہے کہ اومیکرون جیسے ویریئنٹ Variant سے لڑنے کے لیے موجودہ کووڈ 19 ویکسین COVID-19 vaccine میں تبدیلیوں کی ضرورت پڑ سکتی ہے۔

    • Share this:
      جنیوا: دنیا بھر میں  (Omicron Variant) کے بڑھتے ہوئے انفیکشن اور خوف کے درمیان عالمی ادارہ صحت (World Health Organization)  نے کہا ہے کہ اس Variant کے سے بچاؤ کیلئے کووڈ-19 ویکسین کو اپ ڈیٹ کرنے کی ضرورت ہے۔ ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے ٹیکنیکل ایڈوائزری گروپ نے منگل کو یہ سجھاؤ دیا۔ اس تکنیکی گروپ کا کہنا ہے کہ اومیکرون جیسے ویریئنٹ Variant  سے لڑنے کے لیے موجودہ کووڈ 19 ویکسین  COVID-19 vaccine میں تبدیلیوں کی ضرورت پڑ سکتی ہے۔ ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے ٹیکنیکل ایڈوائزری گروپ نے کہا کہ موجودہ کورونا ویکسین کی ساخت کو تبدیل کرنے کی ضرورت پڑسکتی ہے تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جاسکے کہ یہ ویکسین اومیکرون اور کورونا وائرس کی مستقبل کے دیگر تمام Variant   کے خلاف موثر ہو۔

      اس گروپ میں شامل آزاد ماہرین نے یہ بیان جاری کیا ہے اور اسے تمام میڈیا اور صحافیوں کو بھیجا گیا ہے۔ بتادیں کہ گزشتہ سال نومبر میں جنوبی افریقہ میں Omicron ویریئنٹ کی شناخت کے بعد سے یہ Variant  تیزی سے پھیلا اور اس نے دنیا بھر میں لاکھوں افراد کو متاثر کیا۔ اس ویریئنٹ  نے ان لوگوں کو بھی دوبارہ متاثر کیا جنہوں نے ویکسین لی تھی۔ اس کے بعد سے یہ سوالات اٹھ رہے ہیں کہ کیا موجودہ کووڈ 19 ویکسین اومیکرون ویریئنٹ  کے کے خلاف موثر ہیں۔

      برطانیہ اور امریکہ سمیت کئی مغربی ممالک میں اومیکرون ویریئنٹ کی وجہ سے کورونا وائرس کے کیسز میں اضافہ ہوا ہے۔ ان میں سے یورپی ممالک اور امریکہ میں کووڈ-19 کے معاملے میں زبردست چھلانگ آئی ہے۔ اس کے ساتھ ہی، ہندوستان میں، دہلی اور ممبئی میں اومیکرون ویریئنٹ کے کیسز کی سب سے زیادہ تعداد دیکھی گئی ہے۔ جس کی وجہ سے ملک کی مختلف ریاستوں میں کورونا وائرس کے کیسز میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے۔

      عالمی ادارہ صحت نے کورونا انفیکشن سے بچنے کے لیے ویکسین، ماسک اور سماجی دوری پر عمل کرنے پر زور دیا ہے۔ ایک ہی وقت میں، بہت سے ممالک نے انفیکشن کو روکنے کے لیے بہت سی پابندیاں نافذ کی ہیں۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: