உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Omicron: ویکسین کی کم کوریج اورجانچ کے خلاف ڈبلیوایچ اونے دیا انتباہ! ٹیڈروس نے کہی یہ بڑی بات

    ’’اومی کرون ویرینٹ کے ظہور نے عالمی توجہ حاصل کی ہے‘‘۔

    ’’اومی کرون ویرینٹ کے ظہور نے عالمی توجہ حاصل کی ہے‘‘۔

    ڈبلیو ایچ او کے سربراہ ٹیڈروس اذانوم گیبریسو (Tedros Adhanom Ghebreyesu) نے کہا کہ اومی کرون ویرینٹ کے ظہور نے عالمی توجہ حاصل کی ہے۔ ڈبلیو ایچ او کے چھ میں سے پانچ خطوں میں سے کم از کم 23 ممالک میں اب اومی کرون کے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں اور ہمیں خدشہ ہے کہ اس تعداد میں اضافہ ہو گا‘‘۔

    • Share this:
      عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) نے کہا کہ وہ توقع کر رہا ہے کہ کورونا وائرس کے نئے اومی کرون ویرینٹ (Omicron) کی اطلاع دینے والے ممالک کی تعداد بڑھے گی۔ عالمی ادارہ صحت نے ویکسینیشن کی کم کوریج اور کم ٹیسٹنگ کے ’زہریلے مکس‘ کے خلاف انتباہ دیا ہے اور اسے کورونا کی نئی اقسام کی افزائش کے لیے ایک نسخہ قرار دیا۔

      ڈبلیو ایچ او کے سربراہ ٹیڈروس اڈانوم گیبریسو (Tedros Adhanom Ghebreyesu) نے کہا کہ اومی کرون ویرینٹ کے ظہور نے عالمی توجہ حاصل کی ہے۔ ڈبلیو ایچ او کے چھ میں سے پانچ خطوں میں سے کم از کم 23 ممالک میں اب اومی کرون کے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں اور ہمیں خدشہ ہے کہ اس تعداد میں اضافہ ہو گا‘‘۔


      انہوں نے ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’’عالمی سطح پر ہمارے پاس ویکسین کی کم کوریج اور بہت کم ٹیسٹنگ کا زہریلا مرکب ہے۔ یہ افزائش نسل اور مختلف قسموں کو بڑھانے کا ایک نسخہ ہے‘‘۔

      ڈبلیو ایچ او کے سربراہ کا یہ انتباہ اومی کرون کے حوالے سے بڑے پیمانے پر خدشات کے درمیان سامنے آیا ہے، جس کا سب سے پہلے پچھلے مہینے جنوبی افریقہ میں پتہ چلا تھا اور بعد میں برطانیہ اور جرمنی سمیت دیگر کئی ممالک میں بھی اس کی شناخت کی جارہی ہے۔


      ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ قسم پیشرو ڈیلٹا ویرینٹ سے زیادہ ممکنہ طور پر زیادہ خطرناک ہے۔ جب کہ کورونا وبا کی ابتدائی لہروں نے پوری دنیا میں تباہی مچا دی تھی۔ اس سے پہلے دن میں کوویڈ 19 پر ڈبلیو ایچ او کی تکنیکی ماہر ماریا وین کرخوف نے کہا کہ وہ دنوں میں کورونا وائرس کے نئے اومی کرون ویرینٹ کی منتقلی کے بارے میں مزید معلومات کی توقع کر رہے ہیں۔

      اس دوران دنیا بھر کے بہت سے ممالک نے ایسے ممالک سے آنے والے مسافروں پر سفری پابندیاں عائد کرنے کے لیے جلدی کی ہے جہاں نئے کورونا کے مختلف کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔

      قومی، بین الااقوامی، جموں و کشمیر کی تازہ ترین خبروں کے علاوہ  تعلیم و روزگار اور بزنس  کی خبروں کے لیے  نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں۔ 
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: