ہوم » نیوز » عالمی منظر

اگر مسلمان ظلم کرے تو ہندوؤں کا ساتھ دوں گا: شریف

اسلام آباد۔ پاکستان کے وزیر اعظم محمد نواز شریف نے پاکستان میں مقیم ہندوؤں کو یقین دلاتے ہوئے کہاکہ اگر ان کے ساتھ ظلم ہوتا ہے اور ظلم کرنے والا مسلمان ہو، تو وہ ہندوؤں کے ساتھ کھڑے ہونگے۔

  • UNI
  • Last Updated: Nov 12, 2015 01:43 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
اگر مسلمان ظلم کرے تو ہندوؤں کا ساتھ دوں گا: شریف
اسلام آباد۔ پاکستان کے وزیر اعظم محمد نواز شریف نے پاکستان میں مقیم ہندوؤں کو یقین دلاتے ہوئے کہاکہ اگر ان کے ساتھ ظلم ہوتا ہے اور ظلم کرنے والا مسلمان ہو، تو وہ ہندوؤں کے ساتھ کھڑے ہونگے۔

اسلام آباد۔  پاکستان کے وزیر اعظم محمد نواز شریف نے پاکستان میں مقیم ہندوؤں کو یقین دلاتے ہوئے کہاکہ اگر ان کے ساتھ ظلم ہوتا ہے اور ظلم کرنے والا مسلمان ہو، تو وہ ہندوؤں کے ساتھ کھڑے ہونگے۔


مسٹر شریف نے ملک کے سب سے بڑے شہر اور اقتصادی مرکز کراچی میں کل دیوالی کے موقع پر منعقدہ ایک پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہ ان کی ذمہ داری ہے کہ اگر کوئی ظلم کا شکار ہے تو اس کا تعلق چاہے کسی بھی مذہب یا فرقہ سے ہو اس کی مدد کی جائے گی۔ پاکستانی میڈیا کے مطابق پاکستان میں پہلی بار کسی وزیر اعظم نے ہندؤوں کےتہوار میں شرکت کی ہے۔ مسٹر شریف نے کہا، ’ہندو کے خلاف ظلم ہوتا ہے اور ظلم کرنے والا مسلمان ہے، تو میں مسلمان کے خلاف کارروائی کروں گا۔ میرا مذہب مجھے یہی سکھاتا ہے اور صرف اسلام ہی نہیں ہر مذہب یہی سکھاتا ہے کہ ظالم کا نہیں، مظلوم کا ساتھ دو‘۔


پاکستانی وزیر اعظم نے کہا، ’ہم ایک قوم اور ملک ہیں، جتنا ہو سکے آپس میں اتحاد و اتفاق سے رہیں۔ ایک دوسرے کی مدد کریں۔ مسلمان ہندوؤں کو خوشیاں بانٹیں اور ہندو شہری مسلمانوں اور سکھوں سے۔ رب اس میں راضی نہیں ہے کہ ہم ایک دوسرے میں فرق کریں‘۔

دریں اثنا انھوں نے ملک کی سمندری حدود اور بحری تجارت کے تحفظ کے لئے ہونے والی پاک بحریہ کی مشقوں کا جائزہ لیا۔


سرکاری ذرائع ابلاغ کے مطابق بحریہ کی مشقیں ملک کی سرحدی حدود اور بحری تجارتی راستوں سمیت گوادر کی بندرگاہ کی حفاظت کے لئے کی جا رہی ہیں۔ سرکاری ذرائع کے مطابق بحریہ کی مشقیں ’سی اسپارک‘ تین سال کے تعطل کے بعد ہو رہی ہیں اور اس میں بحریہ کے ساتھ ساتھ آرمی ایئر ڈیفنس اور پاکستان فضائیہ نے بھی حصہ لیا۔ صوبہ سندھ میں ہندو برادری کی نمایاں شخصیت مکھی ایشور نے ایک انٹرویو میں کہا کہ وزیر اعظم نے کراچی میں اور پی پی پی کے سربراہ بلاول بھٹو زرداری نے اندرون سندھ میں دیوالی کی تقریب میں شرکت کی اور یہ ایک خوش آئند بات ہے۔


اس سے قبل کراچی آمد پر وزیر اعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ نے وزیر اعظم کا استقبال کیا تھا۔ وزیر اعظم نے اپنے دورے کے دوران کراچی کی سیاسی صورت حال، امن و امان اور کراچی آپریشن کے حوالے سے بھی متعلقہ حکام کے ساتھ ملاقاتیں اور اجلاس کیے۔

First published: Nov 12, 2015 01:43 PM IST