شادی شدہ خاتون ٹیچر 13 سال کے طالب علم کے ساتھ بناتی تھی جسمانی تعلقات ، کھلا راز تو اڑ گئے سب کے ہوش

ایک خاتون ٹیچر کو اپنے طالب عالم سے جسمانی تعلقات قائم کرنے کے الزام میں 20 سال کی جیل کی سزا ملی ہے ۔ خاتون ٹیچر پر الزام ہے کہ وہ 13 سال کے طالب علم کو فحش میسیج بھیجا کرتی تھی ۔

Jul 13, 2019 05:00 PM IST | Updated on: Jul 13, 2019 05:00 PM IST
شادی شدہ خاتون ٹیچر 13 سال کے طالب علم کے ساتھ بناتی تھی جسمانی تعلقات ، کھلا راز تو اڑ گئے سب کے ہوش

شادی شدہ خاتون ٹیچر 13 سال کے طالب علم کے ساتھ بناتی تھی جسمانی تعلقات ، کھلا راز تو اڑ گئے سب کے ہوش

ایک خاتون ٹیچر کو اپنے طالب عالم سے جسمانی تعلقات قائم کرنے کے الزام میں 20 سال کی جیل کی سزا ملی ہے ۔ خاتون ٹیچر پر الزام ہے کہ وہ 13 سال کے طالب علم کو فحش میسیج بھیجا کرتی تھی ۔ اس معاملہ کا انکشاف بچے کے والدین نے ایک ایپ کے ذریعہ کیا ۔ یہ واقعہ امریکہ کے ایریجونا میں پیش آیا ۔

عدالت میں سماعت کے دوران خاتون ٹیچر نے خود کو بے گناہ ثابت کرنے کی پوری کوشش کی ۔ شادی شدہ خاتون ٹیچرنے کہا کہ میں ایک اچھی اور سچی انسان ہوں ، میں نے غلطی کی اور اس کیلئے مجھے کافی افسوس بھی ہے ۔ ٹیچر نے عدالت کو بتایا کہ وہ کسی بھی طرح سے سماج کیلئے خطرہ نہیں ہے ۔

Loading...

ساتھ ہی ساتھ ٹیچر نے عدالت سے کہا کہ وہ جیل کے اندر پڑھائی کرنا چاہتی ہے تاکہ جیل سے باہر آنے کے بعد وہ نئی زندگی کی شروعات کرسکے ۔ حالانکہ نے عدالت کے فیصلہ میں یہ شرط رکھی گئی ہے کہ ٹیچر کے اچھے رویہ کے بدلے میں بھی اس کو جیل سے نہیں چھوڑا جائے گا ۔ جیل سے باہر آنے کے بعد ٹیچر کو سیکس افینڈر رجسٹر میں اپنا نام درج کرانا ہوگا ۔ خاتون ٹیچر کو مارچ 2018 میں گرفتار کیا گیا تھا ۔

بتایا جاتا ہے کہ متاثرہ بچے کے والدین نے جب بیٹے کے رویہ میں تبدیلی دیکھی تو انہوں نے پیرنٹل کنٹرول ایپ کے ذریعہ بچے کے فون کو کنیکٹ کردیا اور اس کی ہر سرگرمی پر نظر رکھنے لگے ۔ ایپ کے ذریعہ ہی والدین کو طالب علم اور ٹیچر کے درمیان ہونے والی قابل اعتراض بات چیت کی جانکاری ملی ۔ پوچھ گچھ کے بعد بچے نے ٹیچر سے وابستہ ہر جانکاری انہیں بتادی اور جسمانی تعلقات کی بات کا بھی اعتراف کرلیا ۔

Loading...