ہوم » نیوز » عالمی منظر

ایف اے ٹی ایف کی لسٹ سے نکلنے کیلئے پاکستان کی نئی چال ، ہندوستان نے کہا : کچھ کام نہیں آئے گا

ایک افسر نے کہا کہ پاکستان کو اپنا نام گرے لسٹ سے ہٹانے کیلئے 39 میں سے 12 ممالک کی حمایت کی ضرورت ہے ۔ صرف امریکہ 20 ممالک کے بلاک کو کنٹرول کرتا ہے ۔

  • Share this:
ایف اے ٹی ایف کی لسٹ سے نکلنے کیلئے پاکستان کی نئی چال ، ہندوستان نے کہا : کچھ کام نہیں آئے گا
ایف اے ٹی ایف کی لسٹ سے نکلنے کیلئے پاکستان کی نئی چال ، ہندوستان نے کہا : کچھ کام نہیں آئے گا

دہشت گردوں کی پناہ گاہ بننے پر ایف اے ٹی ایف کی فہرست میں شامل پاکستان اب اس فہرست سے باہر نکلنے کیلئے نئی چال چلنے کی کوشش کر رہا ہے ۔ ایسے ہی ایک کوشش میں پاکستان اب ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ سے باہر نکلنے کیلئے امریکی لابیئنگ فرموں پر بھروسہ کررہا ہے ، کیونکہ اسلام آباد کی قسمت کا فیصلہ کرنے کیلئے ایف اے ٹی ایف کی ورچوئل میٹنگ اسی مہینے میں ہونے جارہی ہے ۔


ایف اے ٹی ایف میں ہندوستان کی نمائندگی کرنے والے افسران نے نیوز18 کو بتایا کہ ڈونالڈ ٹرمپ انتظامیہ کے ساتھ لابیئنگ کرنے کیلئے ٹیکساس میں واقع لنڈن اسٹریٹجیز کو پاکستانی حکومت نے کام پر رکھا ہے ۔ ایک افسر نے کہا کہ پاکستان کو اپنا نام گرے لسٹ سے ہٹانے کیلئے 39 میں سے 12 ممالک کی حمایت کی ضرورت ہے ۔ صرف امریکہ 20 ممالک کے بلاک کو کنٹرول کرتا ہے ۔


پیرس میں واقع ایف اے ٹی ایف کی میٹنگ 21 سے 23 اکتوبر تک ہونے والی ہے ۔ پاکستان پر اقوام متحدہ کے ذریعہ نامزد مسعود اظہر ، حافظ سعید ، ذکی الرحمان لکھوی جیسے دہشت گردوں کے علاوہ القاعدہ ، جیش محمد ، لشکر طیبہ اور حقانی نیٹ ورک جیسی دہشت گرد تنظیموں کے خلاف کارروائی کرنے کا دباو ہے ۔


امریکہ نے پہلے ان افراد اور تنظیموں کے خلاف کارروائی کے پاکستان کے دعووں کو خارج کردیا تھا ۔ دہشت گردی کے خلاف امریکی وزارت خارجہ کی رپورٹ 2019 نے دعوی کیا تھا کہ پاکستان نے اس سال کی شروعات میں ایف اے ٹی ایف کے سامنے یہ دعوی کیا تھا کہ دہشت گرد مسعود اظہر لاپتہ ہے ۔

ایف اے ٹی ایف کے ذریعہ پاکستان کو گرے لسٹ میں بنائے رکھنے سے عین قبل شائع ہوئی امریکی رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ دیگر نامعلوم دہشت گردوں جیسے جیش محمد کے بانی اور اقوام متحدہ کے نامزد دہشت گرد مسعود اظہر اور 2008 کے ممبئی حملہ کے پروجیکٹ مینیجر ساجد میر دونوں کے خلاف کارروائی نہیں کی ، جن کے بارے میں مانا جاتا ہے کہ وہ پاکستان میں آزاد رہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Oct 11, 2020 07:45 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading