ہوم » نیوز » عالمی منظر

پاکستان میں 12سال کی بچی کی ادھیڑ عمر کے شخص سے کردی شادی، نہیں رک رہے معاملے

غور طلب ہےکہ لڑکی کی شادی تو کرائی جاچکی ہے لیکن 13اپریل کو اس کی وداعی کی جانی تھی۔ اس سے پہلے ہی پولیس پہنچ گئی اور وداعی سے پہلے لڑکی کے والدین، دولہااور رشتہ داروں کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے۔ وہیں دولہے سمیت دیگر ملزمین کی تلاش جاری ہے۔

  • Share this:
پاکستان میں 12سال کی بچی کی ادھیڑ عمر کے شخص سے کردی شادی، نہیں رک رہے معاملے
غور طلب ہےکہ لڑکی کی شادی تو کرائی جاچکی ہے لیکن 13اپریل کو اس کی وداعی کی جانی تھی۔ اس سے پہلے ہی پولیس پہنچ گئی اور وداعی سے پہلے لڑکی کے والدین، دولہااور رشتہ داروں کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے۔ وہیں دولہے سمیت دیگر ملزمین کی تلاش جاری ہے۔

پاکستان ،یں سخٹ قانون کے باوجود آج بھی نابالغ بچیوں کی جبرا شادی کے معاملے سامنے آرہے ہیں۔ تازہ معاملہ پاکستان پنجاب صوبہ کے مظفر گڑھ کا ہے۔ یہاں ایک 12 سالہ لڑکی کی شادی جبرا 50 سال کے شخص س کرائی گئی ہے۔ مظفر گڑھ کی تحصیل کوٹ ادو کے علاقے چوک سرور شہید علاقے میں حال ہی میں یہ معاملہ سامنے آیا ہے۔ اس میں پولیس کو ایک 12 سالہ لڑکی کی شادی کی ایک ادھیڑ عمر کے شخص سے کئے جانے کی اطلاع ملی تھی۔ اطلاع ملنے پر پولیس نے کارروائی کی اور لڑکی کو وہاں سے ہٹاکر محفوظ مقام پر پہنچا دیا ہے۔


غور طلب ہےکہ لڑکی کی شادی تو کرائی جاچکی ہے لیکن 13اپریل کو اس کی وداعی کی جانی تھی۔ اس سے پہلے ہی پولیس پہنچ گئی اور وداعی سے پہلے لڑکی کے والدین، دولہااور رشتہ داروں کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے۔ وہیں دولہے سمیت دیگر ملزمین کی تلاش جاری ہے۔


حالانکہ اس طرح کا یہ پہلا معاملہ نہیں ہے۔ اس سے پہلے بھی پاکستان میں زمیں دار کے ساتھ 12 سال کی کے نکاح کا معاملہ سامنے آیاتھا۔ اس کے بعد سندھ میں ایک کمسن بچی زمیں دار کی بھینٹ چڑھنے سے بچ گئی۔ پولیس نے موقع پرپہنچ کر ملزم کو گرفتار کرلیا تھا۔

First published: Apr 07, 2020 08:33 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading