ہوم » نیوز » عالمی منظر

بڑی خبر: افغانستان میں ایک مرتبہ پھر طالبانی حملہ، 18 لوگوں کی موت

رپورٹ کے مطابق حملے کیلئے پولیس نے طالبان کو ذمہ دار بتایا کیونکہ طالبانی دہشت گردوں کا اس علاقے میں مضبوط پکڑ ہے۔

  • Share this:
بڑی خبر: افغانستان میں ایک مرتبہ پھر طالبانی حملہ، 18  لوگوں کی موت
رپورٹ کے مطابق حملے کیلئے پولیس نے طالبان کو ذمہ دار بتایا کیونکہ طالبانی دہشت گردوں کا اس علاقے میں مضبوط پکڑ ہے۔

افغانستان کے کابل میں الگ۔الگ حملوں میں 18 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔ مغربی گھور میں مقامی پولیس سربراہ فخر الدین(Fakhrudin) نے بتایا کہ طالبان باغیوں نے جمعہ کی دیر رات ایک پولیس چوکی پر حملہ کیا۔ اس دوران دس پولیس اہلکار Police Officers) کو ہلاک کردیا گیا۔ طالبان دہشت گردوں نے پولیس چوکی کو دھماکے سے اڑا دیا جس میں دس پولیس اہلکار ہلاک ہوگئے۔ انہوں نے بتایا کہ ضلع پاسابند کے سدور میں حملے کے بعد ایک پولیس اہلکار زخمی ہوگیا اور ایک لاپتہ ہے۔


چمعے کو بم دھماکےمیں چار مارے گئے

دینک جاگرن میں چھہی ایک رپورٹ کے مطابق حملے کیلئے پولیس نے طالبان کو ذمہ دار بتایا کیونکہ طالبانی دہشت گردوں کا اس علاقے میں مضبوط پکڑ ہے۔ حالانکہ طالبان نے گھور میں حملے پر کسی طرح کا بیان نہیں دیا ہے۔ پولیس ترجمان نے بتایا کہ حملے کے نشانے پر گزشتہ سال پارلیمانی انتخابات میں ہارنے واے امیدوار عبدالولی اخلاص (Abdul Wali Ekhlas) تھے۔ افغان حکومت کے افسر نےبتایا کہ مغربی کابل میں ایک مسجد میں جمعے کو بم دھماکہ ہوا جس میں کم سے کم چار افراد مارے گئے اور ایک نامعلوم شخص زخمی ہوگیا۔


امریکہ کے ساتھ امن مذاکرات کے بعد طالبان نے افغاستان (Afghanistan) پر اپنے حملے تیز کردئے ہیں۔ جمعے کی نماز کے دوران راجدھانی کابل مغرب میں واقع شیر شاہ سوری مسجد میں دھماکے میں امام سمیت 4 لوگوں کی موت (Death) ہوگئی ہے۔ بتایا جارہا ہے کہ اس دھماکے میں کئی لوگ زخمی بھی ہوئے ہیں۔ غور طلب ہے کہ اس سے پہلے 2 جون کو کابل کے ڈاؤن ٹاؤن میں بھی ایک مسجد میں دھماکہ ہواتھا۔

افغانستان کے افغانستان کی وزارت داخلہ نے کہا ہے کہ کوروناوائرس لاک ڈاؤن کے سبب کم ہی لوگ نماز کیلئے مسجد پہنچے تھے۔ اس لئے اس دھماکہ کی زد میں کم لوگ آئے ہیں۔ واقعہ کی جانکاری ملنے کے بعد مقامی پولیس اور بم اسکوائڈ دستہ موقع پر پہنچ گیا ہے۔ بتایا جارہا ہے کہ دھماکہ کو مسجد کے اندر چھپا کر رکھا گیا تھا۔
دو جون کو کابل میں بھی ہوا تھا دیگر مسجد میں دھماکہ

دو جون کو کابل میں وزیر اکبر خان مسجد میں ایک آئی آئی ڈی دھماکہ ہوا تھا جس میں مسجد کے امام عیاز نیازی کی موت ہوگئی تھی۔ حالانکہ اس واقعے کی ذمہ داری کسی تنظیم نے نہیں لی تھی۔
بتادیں کہ اس وقت افغانستان دوہری مار جھیل رہا ہے۔ اب تک کوروناوائرس کے 23000 سے زیادہ کیس سامنے آچکے ہیں۔ جبکہ 1000 سے زیادہ افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔
First published: Jun 13, 2020 07:13 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading