உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کیا آپ بھی food delivery app سے کھانا منگانے کے ہیں شوقین تو ہو جائیں محتاط! WHO نے کیا چونکانے والا انکشاف

    Youtube Video

    برطانیہ کی ایک تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ گھر پر food delivery app سے کھانا آرڈر کرکے منگوانا یعنی گھر پر بنائے کھانے کے مقابلے میں اوسطاً روزانہ 200 کیلوریز زیادہ لینا ۔ اس کا مطلب ہے کہ بچہ ہفتے میں 8 دن کا کھانا کھا رہا ہے۔

    • Share this:
      دنیا بھر میں موٹاپا ایک مسئلہ بن کر ابھر رہا ہے جس نے ہر کسی کو پریشان کر رکھا ہے۔ خاص بات یہ ہے کہ اس کا شکار ہونے والے زیادہ تر بچے ہیں۔ جسمانی مشقت کی کمی، بیٹھ کر کھانا کھانے اور جنک فوڈ کے رجحان نے موٹاپے کے مسئلے میں تیزی سے اضافہ کیا ہے۔ ساتھ ہی، کووڈ کے بعد، حالات بد سے بدتر ہوتے چلے گئے ہیں۔ ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن (ڈبلیو ایچ او) کے مطابق، یورپ میں 60 فیصد بالغ اور ایک تہائی بچے زیادہ وزن اور موٹے کا شکار ہیں۔ یورپ سے آگے امریکہ ہے جہاں موٹاپا وبا کی شکل اختیار کر چکا ہے۔

      حالات پہلے ہی خراب ہیں، ایسے میں فوڈ ڈلیوری ایپ کی وجہ سے لوگ مسلسل موٹاپے کا شکار ہوتے جا رہے ہیں۔ ڈبلیو ایچ او WHO کی ایک حالیہ رپورٹ کے مطابق یورپ میں ہونے والی تمام اموات میں سے 13 فیصد کے پیچھے کی ایک بڑی وجہ موٹاپا ہے۔ رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ یورپ میں سالانہ کم از کم 2 لاکھ افراد کی موت کینسر سے ہوتی ہے اور اس کی سب سے بڑی وجہ موٹاپا ہے۔

      موٹاپا ایک پیچیدہ چیلنج ۔
      جسم کی اضافی چربی کئی بیماریوں کو دعوت دیتی ہے۔ جس میں کینسر کی 13 اقسام، ٹائپ ٹو ذیابیطس، دل کا مسئلہ اور پھیپھڑوں کے امراض شامل ہیں۔ یہی نہیں بلکہ یہ معذوری کی بھی ایک بڑی وجہ ہے۔ موٹاپا ایک پیچیدہ بیماری ہے جو غیر صحت بخش خوراک کھانے اور جسمانی سرگرمی کی کمی کی وجہ سے پیدا ہوتی ہے۔
      ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے ریجنل ڈائریکٹر (یورپ) ڈاکٹر ہینس کلوگ کا کہنا ہے کہ موٹاپا ایک ایسی بیماری ہے جو کسی قسم کی حد کو ہیں مانتی ہے۔ یورپ کے کئی علاقوں میں لوگ کسی نہ کسی طرح موٹاپے کا شکار ہو رہے ہیں۔ اس پر قابو پانے کا واحد طریقہ صحت کا ایک مضبوط نظام تیار کرنا ہے۔


      فوڈ ڈیلیوری ایپ food delivery app کا کردار
      دنیا کے تمام ترقی یافتہ اور ترقی پذیر ممالک دن بہ دن ڈیجیٹل ہوتے جا رہے ہیں۔ کسی بھی قسم کی ضرورت کا حل فون میں موجود تمام ایپس میں موجود ہے۔ یورپ میں کھانے کے اس ڈیجیٹل ماحول کا بہت برا اثر ہوا ہے۔ لوگ کب، کیا اور کیسے کھاتے ہیں؟ اس پر وگٹ نظر رکھی جانی چاہیے کیونکہ یہ 'کھانے کی ڈیلیوری ایپس' زیادہ چکنائی، زیادہ چینی اور مشروبات کے استعمال میں اہم کردار ادا کر رہی ہیں۔

      مزید پڑھئے: لڑکی نے لائیو میچ میں بوائے فرینڈ کو کیا پرپوز، RCB فین لڑکے نے انگوٹھی پہننے کے بعد....

      برطانیہ کی ایک تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ گھر پر کھانا آرڈر کرکے منگوانا یعنی گھر پر بنائے کھانے کے مقابلے میں اوسطاً روزانہ  200 کیلوریز زیادہ لینا ۔ اس کا مطلب ہے کہ بچہ ہفتے میں 8 دن کا کھانا کھا رہا ہے۔

       
      Published by:Sana Naeem
      First published: