உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دہشت گرد تنظیم جیش محمد نے بدلا نام، ہندستان پر حملے کے لئے تیار کیا 30 خودکش حملہ آوروں کا دستہ: رپورٹ

    جیش سرغنہ مسعود اظہر: فائل فوٹو

    جیش سرغنہ مسعود اظہر: فائل فوٹو

    جیش سرغنہ مسعود اظہر کو اسی سال مارچ میں پاکستان میں گرفتار کیا گیا تھا۔ حالانکہ، کچھ رپورٹوں میں یہ بھی دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ عمران حکومت نے یہ قدم بس آنکھوں میں دھول جھونکنے کے ارادے سے ہی اٹھایا تھا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      دہشت گرد تنظیم جیش محمد نے اب اپنا نام بدل کر مجلس ورثہ شُہدا  جموں وکشمیر رکھ لیا ہے۔ انگریزی اخبار ہندستان ٹائمس کے مطابق اب اس کی کمان مسعود اظہر کے چھوٹے بھائی مفتی عبدالرؤف اصغر کے پاس ہے۔ بتا دیں کہ مسعود اظہر کو پہلے ہی عالمی دہشت گرد قرار دیا جاچکا ہے۔ بیمار مسعود اظہر ان دنوں پاکستان کے بہاول پور میں مرکز عثمان و علی میں رہتا ہے۔
      مجلس ورثہ شُہدا جموں و کشمیر  سے جڑے ایک لیڈر عابد مختار نے اس سال اپنی کشمیر ریلیوں میں ہندستان، امریکہ اور اسرائیل کے خلاف پہلے ہی جہاد کا اعلان کیا ہے۔ کہا جارہا ہے کہ دہشت گردانہ  سرگرمیوں کو انجام دینے کیلئے اس تنظیم نے 30خودکش حملہ آوروں کا ایک دستہ تیار کیا ہے۔ کہا جارہا ہے کہ یہ دہشت گرد آرمی کیمپ اور سکیورٹی فورسز کے قافلے پر حملہ کر سکتے ہیں۔
      مسعود کے چھوٹے بھائی عبدالرؤف نے اسی ماہ بالاکوٹ میں جیش کی ٹریننگ سینٹر کو پھر سے سرگرم کیا ہے۔ اس کے علاوہ بھوال پور اور سیالکوٹ میں دہشت گردوں کی بھرتیاں کی جا رہی ہیں۔

      بتا دیں کہ جیش سرغنہ مسعود اظہر کو اسی سال مارچ میں پاکستان میں گرفتار کیا گیا تھا۔ حالانکہ، کچھ رپورٹوں میں یہ بھی دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ عمران حکومت نے یہ قدم بس آنکھوں میں دھول جھونکنے کے ارادے سے ہی اٹھایا تھا۔ مسعود اظہر ہندوستان میں پارلیمنٹ، ممبئی، پلوامہ اور اری سمیت کئی حملوں کا ماسٹرمائنڈ ہے۔
      First published: