ہوم » نیوز » عالمی منظر

جنسی استحصال کے معاملے میں کورٹ نے دیا شخص کا عضو تناسل ناپنے کا حکم

نیوزی لینڈ سے ایک بیحد عجییب وغریب معاملہ سامنے آیا ہے ۔یہاں ایک خاتون نے ایک معمر شخص پر جنسی استحصال کا الزام لگایا تھا۔ جب بات کورٹ میں پہنچی تو جج نے معاملے کی جڑ تک جاتے ہوئے شخص کے عضو تناسل کی کی لمبائی ناپنے کے احکام دئے ہیں۔

  • News18.com
  • Last Updated: May 23, 2018 02:47 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
جنسی استحصال کے معاملے میں کورٹ نے دیا شخص کا عضو تناسل ناپنے کا حکم
Picture for representation.

نیوزی لینڈ سے ایک بیحد عجییب وغریب معاملہ سامنے آیا ہے ۔یہاں ایک خاتون نے ایک معمر شخص پر جنسی استحصال کا الزام لگایا تھا۔ جب بات کورٹ میں پہنچی تو جج نے معاملے کی جڑ تک جاتے ہوئے شخص کے عضو تناسل کی  کی لمبائی ناپنے کے احکام دئے ہیں۔یہ بھلی ہی اپنے آپ میں عجیب و غریب احکام لگے لیکن کورٹ نے اس کے ساتھ ہی ایک بات صاف کر دی کہ جنسی استحصال باکل بھی برداشت نہیں کیا جائے گا۔


اس شخص کا نام ڈیوڈ اسکاٹ ہے۔وہ ویلنگٹن کے پاس کاپتی کے کاؤنسلر ہیں۔یہ معاملہ گزشتہ سال ایک فنکشن کا ہے۔خاتون نے اسکاٹ پر ان سے جنسی استحصال کا الزام لگایا تھا ۔جب بات کورٹ میں پہنچی تو اسکاٹ نے خود کو بے قصور بتایا۔


خاتون نے بتایا کہ جس چیز نے اسے چھوا تھا اس کی لمبائی 4 سے 5 انچ رہیہوگی۔وہیں اسکاٹ کے وکیلوں  کا کہنا ہے کہ خاتون کو غلطی سے والٹ چھو گیا ہوگا۔لیکن خاتونکا کہنا ہے کہ کہ جس چیز نے اسے چھوا وہ والت یا فون نہیں بلکہ آدمی کا عضو تناسل ہی تھا۔


ایسے میں خاتون کے الزامات کی حقیقت جاننے کیلئے کورٹ نے یہ حکم دیا،جو کہ اب اگلی سماعت میں صاف ہو سکے گا۔
First published: May 23, 2018 02:47 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading