ہوم » نیوز » عالمی منظر

شوہر سے نہیں تھے اچھے تعلقات تو خاتون ٹیچر نے 15 سالہ لڑکے کو بھیجیں برہنہ تصویریں، پھر کھیت میں لے جاکر کیا سیکس اور پھر۔۔۔

خاتون ٹیچر نے سیکشوئل ایکٹ کرتے ہوئے مبینہ طور پر سیکس ٹوائز سے گھری اپنی کئی برہنہ تصویریں بھی لڑکے کو بھیجیں اور پھر کی ایسی گھنونی حرکت۔

  • Share this:
شوہر سے نہیں تھے اچھے تعلقات تو خاتون ٹیچر نے 15 سالہ لڑکے کو بھیجیں برہنہ تصویریں، پھر کھیت میں لے جاکر کیا سیکس اور پھر۔۔۔
شوہر سے نہیں تھے بہتر رشتے تو خاتون نے 15 سال کے لڑکے کا ساتھ کیا یہ گھنونا کام

ایک شادی شدہ ٹیچر (Married Teacher) نے 15 سال کے لڑکے کے ساتھ سیکس (Sex With Student) کیا اور اسے اپنی برہنہ تصویریں (Nude Photos) بھیجیں۔ 35 سالہ خاتون ٹیچر کینڈس باربر پر یہ بھی الزام ہے کہ اس نے لڑکے ساتھ جسمانی تعلقات بنانے کے بعد اس سے کہا کہ وہ حاملہ ہو گئی ہے۔ اس نے سیکشوئل ایکٹ کرتے ہوئے مبینہ طور پر سیکس ٹوائز سے گھری اپنی کئی تصویریں بھی لڑکے کو بھیجیں اور میسیج کیا کہ تم بہت فٹ نظر آرہے ہو۔ یہ خاتون ٹیچر جس کے خود کے بچے اسکول جانے لائق ہیں نے اس لڑکے کو ستمبر 2018 سے میسیج بھیجنے شروع کئے تھے۔

کھیت میں لے جاکر کیا سیکس

آئیلیسبری کراؤون کورٹ کو بتایا گیا کہ کس طرح خاتون ٹیچر نے لڑکے سے اس کا فون ماناگ کر اس کے اسنیپ چیٹ اکاؤنٹ میں اپنی ڈٹیل ڈال دیں۔ اس کے بعد ٹیچر نے مسلسل اس لڑکے کو میسیج کرنا شروع کر دئے۔ ایک بار اس نے لڑکے کو لکھ کر بھیجا کہہ وہ نہا رہی ہے اور کیا وہ اس وقت اس سے ملنا چاہتا ہے۔ اس کے بعد خاتون ٹیچر کینڈس باربر نے اسے اپنی گاڑی سے لیا اور ایک کھیت میں لے جاکر سیکس کیا۔ اس سے پہلے وہ اسنیپ چیٹ پر اسے اپنی برہنہ تصویر بھیج چکی تھی۔ اس کے بعد وہ صرف دو ہی بار سیکس کرنے کیلئے ملے کیونکہ ان کی تصویریں اسکول کے بچوں تک پہنچ گئی تھیں۔ عدالت کو بتایا گیا کہ 2018 میں ہیڈ ماسٹر نے ان تصویروں میں سے ایک کو دیکھ لیا تھا۔ گزشتہ سال باربر کو گرفتار کر لیا گیا۔


لڑکے نے دیا یہ بیان

حالانکہ لڑکے نے خاتون ٹیچر کے ساتھ جنسی تعلقات بنانے سے انکار کر دیا تھا لیکن پولیس جانچ میں لڑکے نے افسران کو بتایا کہ میں نے پہلے جھوٹ بولا کیونکہ اس نے کہا تھا کہ وہ میرے بچے کی ماں بننے والی ہیں۔ مجھے اس بات سے بہت گھبراہٹ ہونے لگی تھی۔ اس نے مجھے دھمکی دی کہ کہ اگر میں نے کسی کو اس کے بارے میں بتایا تو وہ اس کا جینا حرام کر دے گی۔ لڑکے نے اپنے بیان میں کہا کہ میں نے ٹیچر سے پوچھا کہ کیا تم مجھ پر ریپ کا الزام لگانے والی ہو اس نے سیدھا جواب نہیں دیا جس سے مجھے غصہ آگیا اور اس دن کے بعد میں نے اس سے بات نہیں کی۔

وکیل نے کہا لڑکا خاتون ٹیچر کے بیٹے کا دوست تھا
پراسیکیوٹر رچرڈ ملنیے نے عدالت کو بتایا کہ جب پہلی مرتبہ ٹیچر نے لڑکے سے رابطہ کرنے کی کوشش کی تو لڑکے کو بہت عجیب لگا تھا کیونکہ وہ خاتون ٹیچر کے بیٹے کا دوست تھا۔

شوہر سے نہیں تھے بہتر رشتے تو خاتون نے 15 سال کے لڑکے کا ساتھ کیا یہ گھنونا کام
اس 35 سالہ خاتون ٹیچر نے لڑکے کو برہنہ تصویر بھیجنے اور اس کے ساتھ سیکس کرنا قبول کیا۔ شروعات میں ٹیچر نے جسمانی تعلقات کی بات کو ماننے سے انکار کردیا تھا لیکن سوشل ورکر کے ساتھ بات کرتے ہوئے اس نے مانا کہ اس کے شوہر سے اس کے تعلقات ٹھیک نہیں چل رہے تھے۔ اس کا ایک اسقاط حمل ہوا جس سے وہ کافی پریشان تھی۔ خاتون ٹیچر پر بچے کے ساتھ سیکشوئل ایکٹ کرنے اور جسمانی تعلقات بنانےکیلئے اسے اکسانے اور کسی بچے کو سیکشوئل ایکٹوٹی دکھانے کا الزام مانا گیا ہے۔

 
Published by: sana Naeem
First published: Sep 04, 2020 07:01 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading