உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ٹوائلیٹ کی سیٹ پر بیٹھتے ہی لڑکی کو نظر آئی 'موت' ، چیختے ہوئے پہنچی اسپتال

    ٹوائلیٹ کی سیٹ پر بیٹھتے ہی لڑکی کو نظر آئی 'موت' ، چیختے ہوئے پہنچی اسپتال ۔ تصویر : فیس بک

    ٹوائلیٹ کی سیٹ پر بیٹھتے ہی لڑکی کو نظر آئی 'موت' ، چیختے ہوئے پہنچی اسپتال ۔ تصویر : فیس بک

    خاتون نے دیکھے بغیر ہی ٹوائلیٹ سیٹ استعمال کرلی ،لیکن اس کو کیا معلوم تھا کہ اوپر سے صاف نظر آنے والی سیٹ کے نیچے ایک زہریلی مکڑی چھپی ہے ۔ بیٹھنے کے فورا بعد ہی خاتون کو کافی تیز درد ہوا اور وہ چیختی ہوئی اسپتال پہنچی ۔

    • Share this:
      کیا آپ بھی ان لوگوں میں سے ہیں جو ٹوائلیٹ سیٹ چیک کئے بغیر استعمال کرلیتے ہیں ؟ ہم صرف صاف سیٹ دیکھتے ہیں اور استعمال کرلیتے ہیں ۔ حالانکہ ایسے کئی معاملات سامنے آتے ہیں ، جہاں ٹوائلیٹ سیٹ میں سانپ چھپے ملتے ہیں ۔ ایسے زیادہ تر معاملات آسٹریلیا میں دیکھنے کو ملتے ہیں ۔ حالانکہ گزشتہ دنوں برطانیہ میں ایک خاتون کو چیک کئے بغیر ٹوائلیٹ سیٹ کا استعمال کرنا بھاری پڑگیا ۔ خاتون نے دیکھے بغیر ہی ٹوائلیٹ سیٹ استعمال کرلی ،لیکن اس کو کیا معلوم تھا کہ اوپر سے صاف نظر آنے والی سیٹ کے نیچے ایک زہریلی مکڑی چھپی ہے ۔ بیٹھنے کے فورا بعد ہی خاتون کو کافی تیز درد ہوا اور وہ چیختی ہوئی اسپتال پہنچی ۔

      خاتون کو مکڑی کے کاٹنے کے بعد ایک ہفتے میں تین مرتبہ اسپتال میں داخل کرایا گیا ۔ اس کو مکڑی نے جانگھ کے پاس کاٹ لیا تھا ۔ یہ مکڑی سیٹ کے نیچے چھپ کر بیٹھی تھی ۔ مکڑی کے کاٹنے کے بعد جانگھ کے پاس ایک بڑا سا زخم ہوگیا ۔ بتایا جارہا ہے کہ یہ مکڑی فالس وڈو تھی ۔ یہ کافی زہریلی ہوتی ہے ۔ پیشہ سے ریڈیو پروڈیوسر جو کو ایک ہفتے میں تین مرتبہ اسپتال میں داخل کروانا پڑ گیا ۔ دراصل مکڑی اتنی زہریلی تھی کہ دوا کا اثر زہر پر کام نہیں کررہا تھا ۔ جو کو چلنے اور سونے میں پریشانی ہورہی تھی ۔



      34 سال کی جو نے بتایا کہ ڈاکٹرس کے مطابق اگر وہ فورا اسپتال نہیں پہنچتی تو شاید اس کی جان چلی جاتی ۔ مکڑی کے کاٹنے کے فورا بعد ہی جو کافی تیز درد ہونے لگا ۔ اس نے بتایا کہ اب اس کا زخم تو ٹھیک ہوگیا ہے ، لیکن ابھی بھی بیٹھنے اٹھنے میں اس کو کافی تکلیف ہوتی ہے ۔

      لیڈس میں رہنے والی جو کو بچپن سے ہی مکڑیوں سے ڈر لگتا ہے ۔ اب اس واقعہ کے بعد وہ مکڑیوں کا نام بھی سننا نہیں چاہتی ہیں ۔ واقعہ کو یاد کرتے ہوئے جو نے بتایا کہ وہ صبح آدھی نیند میں باتھ روم گئی تھی ۔ اس نے صرف سیٹ کے کوور کو اٹھایا اور بیٹھ گئی ۔ تبھی اس کو کافی تیز جلن ہوئی ۔ ایسا لگا جیسے کسی نے جلتی سگریٹ اس کو جسم کو چھو گئی ہو ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: