ہوم » نیوز » عالمی منظر

فلائٹ میں چڑھتے ہی ماڈل کو اتار دیا نیچے ، پہن رکھی تھی ایسی ڈریس ، سبھی سمجھ بیٹھے Nude

فٹنس ماڈل ڈینیز اسپینار (Deniz Saypinar) نے دعوی کیا ہے کہ امریکی ایئرلائنس (American Airlines) کے فلائٹ اٹینڈینٹس (Flight attendants) نے انہیں فلائٹ میں سوار ہونے سے روک دیا ۔ بتادیں کہ ڈینیز ترکی سے یو ایس منقل ہوچکی ہیں اور ان کے ساتھ جب یہ واقعہ پیش آیا تو وہ ٹیکساس سے میامی جانے والی تھیں ۔

  • Share this:
فلائٹ میں چڑھتے ہی ماڈل کو اتار دیا نیچے ، پہن رکھی تھی ایسی ڈریس ، سبھی سمجھ بیٹھے Nude
فلائٹ میں چڑھتے ہی ماڈل کو اتار دیا نیچے ، پہن رکھی تھی ایسی ڈریس ، سبھی سمجھ بیٹھے Nude ۔ (Image- Instagram/Deniz Saypinar)

اگر کوئی فلائٹ میں سفر کرتا ہے تو عام طور پر یہی دیکھا جاتا ہے کہ اس کے ساتھ ایئرلائنس کے اسٹاف اچھا سلوک کررہے ہیں ۔ حالانکہ کئی معاملات ایسے بھی سامنے آتے ہیں ، جس میں اس کے برعکس ہوتا ہے ۔ ایسا ہی کچھ ایک فٹنس ماڈل کے ساتھ ہوا ہے ۔  دراصل فٹنس ماڈل ڈینیز اسپینار نے دعوی کیا ہے کہ امریکی ایئرلائنس کے فلائٹ اٹینڈینٹس نے انہیں فلائٹ میں سوار ہونے سے روک دیا ۔ بتادیں کہ ڈینیز ترکی سے یو ایس منقل ہوچکی ہیں اور ان کے ساتھ جب یہ واقعہ پیش آیا تو وہ ٹیکساس سے میامی جانے والی تھیں ۔


ماڈل نے اپنے انسٹاگرام اکاونٹ پر آٹھ جولائی کو لوگوں کے ساتھ اپنا تجربہ شیئر کرتے ہوئے کہا کہ آپ یقین نہیں کریں گے کہ ٹیکساس ایئرپورٹ پر میرے ساتھ کیا ہوا ۔ روتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ انہیں فلائٹ میں نہیں جانے دیا گیا اور ان سے کہا گیا کہ آپ ننگی ہیں اور آپ کی وجہ سے دیگر مسافروں کو پریشانی ہورہی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ وہ امریکہ اس لئے آئی تھیں تاکہ انہیں بطور خاتون آزادی مل سکے ، لیکن یہاں انہیں ان کی ڈریس کی وجہ سے روک دیا گیا ۔


ماڈل ڈینیز کے ساتھ پیش آئے اس واقعہ کے بعد انہوں نے اپنے وہی کپڑے دکھائی ، جن کی وجہ سے انہیں فلائٹ پر نہیں جانے دیا گیا تھا ۔ آپ کو بتادیں کہ ڈینیز نے ایک نیوڈ کلر کا ٹیوب ٹاپ اور ڈینم ہاٹ پینٹس پہن رکھا تھا ، ساتھ ہی ان کی کمر پر ایک سفید ٹاپ بھی بندھا ہوا تھا ۔ انہوں نے کپڑے دکھاتے ہوئے کہا میں نیکڈ نہیں ہوں ۔ انہوں نے مزید بتایا کہ مججھے ایسے کپڑے پہننا پسند ہے ، لیکن میں کبھی ایسا بھی نہیں پہنتی جو کسی کو بھی برا لگے ۔ مجھے اتنی سمجھ ہے کہ میں یہ فیصلہ کرسکوں کہ کیا پہننا ہے اور کیا نہیں ۔


(Image- Instagram/Deniz Saypinar)
(Image- Instagram/Deniz Saypinar)


ان کے فینس نے ویڈیو دیکھنے کے بعد ایئرلائنس والوں کو کمنٹ سیکشن میں جم کر لتاڑ لگائی ۔ ایک یوزر نے کہا کہ یہ سال 2021 ہے ، لیکن پھر بھی یہاں آپ کو فلائٹ میں سفر کرنے کیلئے ڈریس کوڈ کی ضرورت ہے ، وہ بھی صرف اس وقت جب اگر آپ ایک خاتون ہیں ۔ وہیں ایک اور یوزر نے لکھا کہ سوسائٹی کو خواتین کی عزت کرنا سکھاو ۔

ایئرلائنس نے دیا بورڈنگ پالیسی کا حوالہ

حالانکہ اس معاملہ پر امریکی ایئرلائنس کے ترجمان کا کہنا ہے کہ آٹھ جولائی کو ایک کسٹمر کو سفر کرنے سے منع کردیا گیا تھا کیونکہ ان کی بارڈنگ پالیسی کے حساب سے سبھی کسٹمرس کو فلائٹ پر کسی بھی طرح کی قابل اعتراض ڈریس پہننے کی اجازت نہیں ہے ۔ جانکاری کے مطابق ایئرلائنس نے ڈینیز کیلئے دوسری فلائٹ بک کردی تھی اور وہ میامی پہنچ گئی تھیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 10, 2021 06:57 PM IST