ہوم » نیوز » عالمی منظر

شراب پی کر سمندر کنارے پیشاب کرنے گیا شخص ، پھر ہوا کچھ ایسا ، جان کر اڑجائیں گے ہوش

یہ واقعہ برازیل کے جباٹو ڈوس گوآرپیس کے پیڑادےبیچ پر 10 جولائی کو پیش آیا ۔ صبح بیچ پر واک کرنے پہنچے لوگوں نے دیکھا کہ سمندر کے کنارے کوئی بال جیسی چیز پڑی ہے ۔ اس کے بعد نزدیک سے دیکھنے پر سمجھ میں آیا کہ اصل میں وہ ایک لاش ہے ۔

  • Share this:
شراب پی کر سمندر کنارے پیشاب کرنے گیا شخص ، پھر ہوا کچھ ایسا ، جان کر اڑجائیں گے ہوش
شراب پی کر سمندر کنارے پیشاب کرنے گیا شخص ، پھر ہوا کچھ ایسا ، جان کر اڑجائیں گے ہوش

شراب پینا صحت کیلئے بالکل بھی اچھا نہیں ہوتا ہے ۔ نہ صرف یہ آپ کے جسم کو اندر سے نقصان پہنچاتا ہے بلکہ آپ کی سوچنے اور سمجھنے کی صلاحیت کو بھی ختم کردیتا ہے ۔ اس وجہ سے کئی مرتبہ نشے میں لوگوں کو کافی بڑا نقصان اٹھانا پڑتا ہے ۔ ایسا ہی ایک حیران کن معاملہ برازیل میں سامنے آیا ہے ، جہاں شراب کے نشے میں ایک شخص آدھی رات کو سمندر میں پیشاب کرنے چلا گیا ، لیکن شارک نے اس پر حملہ کردیا ، جس سے اس کی موت ہوگئی ۔ صبح اس کے جسم سے ہاتھ اور پاوں غائب ملے ۔


یہ واقعہ برازیل کے جباٹو ڈوس گوآرپیس کے پیڑادےبیچ پر 10 جولائی کو پیش آیا ۔ صبح بیچ پر واک کرنے پہنچے لوگوں نے دیکھا کہ سمندر کے کنارے کوئی بال جیسی چیز پڑی ہے ۔ اس کے بعد نزدیک سے دیکھنے پر سمجھ میں آیا کہ اصل میں وہ ایک لاش ہے ۔ جب پولیس نے چھان بین کی تو پتہ چلا کہ وہ لاش دراصل 51 سال کے مارسیلو روچا سینٹوس نام کے شخص کی تھی ، جس کو شارک نے آدھا کھا لیا تھا ۔ سینٹوس کے جسم کو اسپتال لے جایا گیا ، جہاں شارک حملہ سے اس کی موت کی تصدیق کی گئی ۔


دوستوں کے ساتھ بیچ پر کی تھی پارٹی


نو جولائی کو سینٹوس اپنے دوستوں کے ساتھ بیچ پر پارٹی کررہا تھا ۔ یہ بیچ پہلے سے ہی شارک حملہ کیلئے بدنام ہے ۔ سبھی دوستوں کو یہ بات معلوم تھی ۔ پارٹی کے دوران جم کر شراب کا دور چلا ۔ اس دوران سینٹوس نے کافی زیادہ پی لی ۔ آدھی رات کو اچانک سینٹوس کو پیشاب لگی ، جس کے بعد وہ سمندر کے نزدیک چلاگیا ۔ شراب کے نشے میں اس کو یاد ہی نہیں رہا کہ وہاں شارک حملہ کے واقعات پیش آتے رہتے ہیں اور اسی دوران یہ حادثہ پیش آگیا ۔



سرخ ہوگیا تھا پانی

صبح واک پر نکلے لوگ جب وہاں پہنچے تو ان کی نظر اس لاش پر پڑی ۔ شارک نے سینٹوس کا ایک ہاتھ اور ایک پاوں اکھاڑ کر کھا لیا تھا ۔ رات کو تقریبا دو بجے پیش آئے اس واقعہ کے بعد وہاں کا پانی پوری طرح سے سرخ ہوگیا تھا ۔ حالانکہ رات کو اس علاقہ میں ایک گارڈ تعینات تھا ، لیکن اس نے سمندر کی لہروں میں کچھ نہیں سنا ۔ وہیں بیچ پر موجود سینٹوس کے دیگر دوستوں نے بتایا کہ آس پاس باتھ روم کی سہولت نہیں ہونے کی وجہ سے لوگوں کو سمندر کے نزدیک جانا پڑتا ہے ۔ اس لئے شارک اٹیک کردیتے ہیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 13, 2021 11:38 PM IST