உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سڑک پر خاتون کے فیگر کو گھور گھور کر دیکھ رہے تھے لوگ، انڈر ویئر کی چیکنگ ہوتے ہی اڑگئے ہوش!

    سڑک پر خاتون کے فیگر کو گھور گھور کر دیکھ رہے تھے لوگ، انڈر ویئر کی چیکنگ ہوتے ہی اڑگئے ہوش! (Credit- SWNS)

    27 سال کی Toma Augustaityte اتنی بھولی بھالی لگ رہی تھی کہ یقین کرنا مشکل تھا وہ ایسا کام کرسکتی ہے ۔ عدالت میں بھی وہ ایک سافٹ ٹوائے (Woman reached court with teddy) لے کر پہنچی اور آنکھوں میں آنسو تھے ۔

    • Share this:
      دیکھنے میں انتہائی معصوم اور پیاری سی لگنے والی ایک خاتون (Toma Augustaityte)  کی کار کو جب پولیس نے ہیڈلائٹ ٹوٹی ہونے کی وجہ سے سڑک پر روکا تو انہیں معلوم نہیں تھا کہ انہیں کیا ملنے والا ہے ۔ گاڑی کی چیکنگ کے بعد ان کی نظر خاتون کے فیگر (Woman hid cash in underwear)  پر گئی ، جو تھوڑا عجیب تھا ۔ جب پولیس اسٹیشن میں اس کے انڈرویئر کی جانچ کی گئی تو پولیس کو یہاں پورا خزانہ مل گیا ۔

      Drug Dealing کرنے والے لوگ کئی مرتبہ غلطی سے اس جھانسے میں آجاتے ہیں ، لیکن اگر بار بار انہیں پکڑا جائے تو انہیں خطرناک مان لیا جاتا ہے ۔ روس میں بھی پکڑی گئی 27 سال کی Toma Augustaityte کا بھی ایسے ہی مجرموں میں شمار ہوتا ہے ۔ پولیس نے اس کو دوسری مرتبہ ڈرگس اسمگلنگ (Drugs Smuggling) کرتے ہوئے پکڑا ، لیکن حیرانی کی بات یہ ہے کہ جج پر ایک مرتبہ پھر اس کے آنسو اور معصوم چہرہ کام کرگیا اور انہوں نے اس کو جیل نہیں بھیجا ۔

      Coventry  کی رہنے والی توما لندن کی ڈائیگروسٹکس کمپنی میں سائسنداں کا کام کرتی ہے ۔ وہ جب اپنی کام سے جارہی تھی تو پولیس نے اس کو کار کی ہیڈ لائٹ ٹوٹی ہونے کی وجہ سے راستے میں روکا ۔ جب انہوں نے ڈرائیور سیٹ کی طرف دیکھا تو انہیں ڈرگس کی بو آئی ۔ اس سیٹ کے نیچے پولیس کو ویڈ سے بھرے دو بیگ ملے ۔ اس کے بعد پولیس کو توما کو دیکھ کر کچھ عجیب سا لگا ۔ جب پولیس اسٹیشن میں لاکر اس کی جانچ کی گئی تو اس کے انڈر ویئر سے 480 پاونڈ یعنی تقریبا 50 ہزار روپے کیش ملے ۔ بعد میں پولیس کو اس کے گھر سے بھی ڈرگس برآمد ہوئی ۔ توما کی کار سے 32 گرام کینابس برآمد ہوئی ، جس کی قیمت تقریبا 200 پاونڈ یعنی 21 ہزار روپے تک ہوگی ۔ پولیس کو بعد میں توما کے فون میں سبھی ایسے میسیجز ملے ، جس میں اس کے مسلسل پانچ مہینے سے ڈرگس سپلائی میں شامل ہونے کی جانکاری ملی ۔

      توما کو اس کے اس جرم کیلئے پولیس نے Warwick Crown Court میں پیش کیا ۔ اسی کورٹ میں پہلے بھی توما کے کیس کی سماعت ہوچکی ہے ۔ وکیل کا کہنا تھا کہ وہ پانچ مہینے میں ایک کلو ڈرگس کی سپلائی کرنے والی تھی اور دوسری مرتبہ اس کو اس جرم کیلئے گرفتار کیا گیا ہے ۔ ایسے میں وکیل نے اس کو جیل بھیجنے کی سفارش کی ۔

      پوری سماعت کے دوران ہاتھ میں ایک سافٹ ٹوائے کیلئے توما آنکھوں میں آنسو بھرے کھڑی رہی ۔ وکیل نے اس کو کم از کم ڈیڑھ سال کیلئے جیل بھیجنے کی سفارش کی ۔ پھر بھی جج کو اس کی معصوم شکل پر ترس آگیا ۔ انہوں نے توما کو جیل نہیں بھیجا اور اس کو اپنی زندگی ٹھیک طریقہ سے گزارنے کا موقع دیا ۔ جج کا کہنا تھا کہ وہ انہیں جیل نہ بھیج کر صرف ڈرگس رکھنے کا ملزم مان رہے ہیں ۔

      توما جیل نہ بھیجے جانے کا فیصلہ سن کر کافی خوش ہوگئی ۔ کچھ دیر پہلے رو رہی توما نے کورٹ سے باہر نکل کر اپنے ٹیڈی کے ساتھ ہنستے ہوئے پوز دئے ۔ وہ 25 ستمبر کو بھی ڈرگس رکھنے کے الزام میں گرفتار ہوئی تھی اور اس کو جیل نہیں ہوئی تھی ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: