உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    13 سال کے لڑکوں کو اپنی نیوڈ تصاویر بھیجتی تھی 40 سال کی ٹیچر، تعلقات بنانے کیلئے رہتی تھی پاگل! اور پھر ایک دن...

    13 سال کے لڑکوں کو اپنی نیوڈ تصاویر بھیجتی تھی 40 سال کی ٹیچر، تعلقات بنانے کیلئے رہتی تھی پاگل! اور پھر ایک دن... ( علامتی تصویر )

    13 سال کے لڑکوں کو اپنی نیوڈ تصاویر بھیجتی تھی 40 سال کی ٹیچر، تعلقات بنانے کیلئے رہتی تھی پاگل! اور پھر ایک دن... ( علامتی تصویر )

    امریکہ کے اوکلاہوما میں رہنے والی 40 سالہ جینیفر آرنلڈ پر الزام ہے کہ وہ 13 ۔14 سال کے بچوں کو اپنی نیوڈ تصاویر بھیجا کرتی تھی ۔ جینیفر کو جنوبی وسطی امریکی ریاست میں گرفتار کیا گیا ، جس کے بعد وہ 7.50 لاکھ روپے کے بانڈ کی ادائیگی کے بعد چھوٹ پائی ۔

    • Share this:
      استاد اور طالب علم کا رشتہ کافی پاک ہوتا ہے۔ ہندوستانی ثقافت میں گرو کو بھگوان کے اوپر کا درجہ دیا گیا ہے ، لیکن کچھ اساتذہ اپنی حدود کو بھول جاتے ہیں اور کچھ ایسا کرجاتے ہیں جس سے نہ صرف وہ اپنا نام خراب کرتے ہیں بلکہ اس پاک رشتے کو بھی بدنام کردیتے ہیں ۔ حال ہی میں ایک امریکی خاتون ٹیچر کو گرفتار کیا گیا ہے کیونکہ وہ ایسا کچھ کرتی ہوئی پکڑی گئی ہے ، جس کو جان کر ہر کوئی دنگ رہ جائے گا ۔

      امریکہ کے اوکلاہوما میں رہنے والی 40 سالہ جینیفر آرنلڈ پر الزام ہے کہ وہ 13 ۔14 سال کے بچوں کو اپنی نیوڈ تصاویر بھیجا کرتی تھی ۔ جینیفر کو جنوبی وسطی امریکی ریاست میں گرفتار کیا گیا ، جس کے بعد وہ 7.50 لاکھ روپے کے بانڈ کی ادائیگی کے بعد چھوٹ پائی ۔ ڈیلی اسٹار کی ایک رپورٹ کے مطابق جینیفر ایک سبسٹی ٹیوٹ ٹیچر تھی ، اس لیے وہ متاثرہ بچوں کو ہمیشہ نہیں پڑھاتی تھی ، مگر وہ ہمیشہ ان کے رابطے میں رہتی تھی ۔

      پولیس کے مطابق ویگنر کاؤنٹی شیرفس آفس کو حال ہی میں ایک شکایت موصول ہوئی ، جس میں انہیں بتایا گیا کہ ایک خاتون سوشل میڈیا کے ذریعہ اپنی عریاں تصاویر نابالغ بچوں کو بھیج رہی ہے اور ان کو بلاکر جسمانی تعلقات قائم کرنے کے لئے پاگل ہو رہی ہے ۔ پولیس کو ملی جانکاری کے مطابق خاتون کم عمر لڑکوں کو تصاویر بھیجتی تھی اور سوشل میڈیا پر ان سے بات چیت کرتی تھی ۔

      تفتیشی افسران کے مطابق خاتون نے ایک 15 سالہ لڑکے کو فحش تصاویر بھی بھیجی تھیں اور وہ اس سے تصاویر کا بھی مطالبہ کر رہی تھی ۔ رپورٹ کی مانیں تو متاثرہ بچوں نے اس کو بدلے میں تصاویر نہیں بھیجیں، بلکہ اس کو پوری طرح سے بلاک کر دیا ۔ تاہم ابھی تک یہ معلوم نہیں ہوسکا ہے کہ خاتون کو بچوں کا فون نمبر کیسے ملا ۔ ویگنر کاؤنٹی شیرف کرس ایلیٹ نے اس معاملہ پر کہا کہ اس طرح کے معاملات کو حل کرنا کافی مشکل ہوتا ہے اور وہ بہت افسوسناک بھی ہوتا ہے ۔ ہم ایک ایسی دنیا میں رہتے ہیں ، جہاں ہمیں اپنے بچوں کو ان کی معصومیت کھونے سے بچانا ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: