ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر: پلوامہ میں تصادم، ایک دہشت گرد اور ایک عام شہری جاں بحق

ذرائع نے بتایا کہ دہشت گردوں کی ابتدائی فائرنگ کے بعد طرفین کے درمیان تصادم چھڑ گیا جس میں ایک نامعلوم دہشت گرد مارا گیا جبکہ ایک مقامی دہشت گرد نے خود سپردگی اختیار کی۔

  • UNI
  • Last Updated: Nov 06, 2020 12:11 PM IST
  • Share this:
جموں وکشمیر: پلوامہ میں تصادم، ایک دہشت گرد اور ایک عام شہری جاں بحق
جموں وکشمیر: پلوامہ میں تصادم، ایک دہشت گرد اور ایک عام شہری جاں بحق

سری نگر۔ جنوبی کشمیر کے ضلع پلوامہ کے میج پانپور میں جمعرات کی شام شروع ہونے والے مسلح تصادم میں ایک نامعلوم دہشت گرد اور ایک عام شہری مارا گیا ہے۔ تصادم کے دوران ایک مقامی دہشت گرد نے سیکورٹی فورسز کے سامنے خود سپردگی اختیار کی ہے۔ جموں و کشمیر پولیس کے ایک ترجمان نے بتایا کہ پانپور میں ہونے والے مسلح تصادم میں ایک نامعلوم دہشت گرد مارا گیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ آپریشن کے دوران ایک مقامی دہشت گرد نے خود سپردگی اختیار کی ہے۔


سرکاری ذرائع نے بتایا کہ تصادم کی جگہ پر جمعرات کی شام زخمی ہونے والے دو عام شہریوں میں سے ایک سری نگر کے شری مہاراجہ ہری سنگھ ہسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا ہے۔ انہوں نے مہلوک شہری کی شناخت عابد نبی کے طور پر ظاہر کی ہے۔ ذرائع نے تفصیلات فراہم کرتے ہوئے بتایا کہ جموں و کشمیر پولیس، فوج کی 50 راشٹریہ رائفلز اور سی آر پی ایف کے اہلکاروں نے جب جمعرات کی شام میج پانپور میں ایک مشتبہ جگہ کو محاصرے میں لیا تو وہاں موجود دہشت گردوں نے ان کو نشانہ بنا کر فائرنگ کی اور گرینیڈ داغے۔



انہوں نے بتایا کہ واقعے میں دو عام شہری زخمی ہوئے ہیں جنہیں فوری طور پر ہسپتال منتقل کیا گیا۔ ان میں سے جہاں عابد نبی نامی شہری کی جمع کی صبح ایس ایم ایچ ایس ہسپتال میں موت ہو گئی، وہیں کفایت احمد سری نگر کے برزلہ علاقے میں قائم ہڈیوں و جوڑوں کے ہسپتال میں زیر علاج ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ دہشت گردوں کی ابتدائی فائرنگ کے بعد طرفین کے درمیان تصادم چھڑ گیا جس میں ایک نامعلوم دہشت گرد مارا گیا جبکہ ایک مقامی دہشت گرد نے خود سپردگی اختیار کی۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Nov 06, 2020 12:11 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading