உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Kashmir: کشمیر کی جامع مسجد کے اندر ’ملک مخالف‘ نعرے لگانے پر 13 افراد گرفتار، آخر کیا ہے معاملہ؟

    Youtube Video

    ایس ایس پی نے کہا کہ اس معاملے میں بعد میں گیارہ مزید ملزمان کو گرفتار کیا گیا جو جامع مسجد کے اندر اور گیٹ پر نعرے بازی اور غنڈہ گردی میں ملوث تھے۔ انہوں نے کہا کہ مزید کئی مشتبہ افراد سے تفتیش کی جا رہی ہے اور جیسے ہی اس معاملے میں ان کا کردار واضح ہو جائے گا انہیں باضابطہ طور پر گرفتار کر لیا جائے گا۔

    • Share this:
      پولیس نے ہفتہ کو بتایا کہ یہاں کی مشہور جامع مسجد کے اندر ’ملک مخالف‘ نعرے لگانے کے سلسلے میں تیرہ لوگوں کو گرفتار کیا گیا ہے اور ان کے خلاف بغاوت کا مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ سینئر سپرنٹنڈنٹ آف پولیس (ایس ایس پی) سری نگر راکیش بلوال نے کہا کہ ملزم کو دہشت گرد تنظیموں کے پاکستانی ہینڈلرز سے جمعہ کی نماز میں خلل ڈالنے اور لوگوں کو مشتعل کرکے امن و امان کی صورتحال پیدا کرنے کی ہدایات ملی تھیں۔

      بلوال نے کہا کہ نعرہ بازی جمعہ کے روز شہر کے نوہٹہ علاقے میں جامع مسجد میں اجتماعی نماز کے اختتام کے بعد ہوئی جس میں تقریباً 24 ہزار افراد نے شرکت کی۔ انہوں نے مزید کہا کہ بغاوت کے الزام کے علاوہ گرفتار ہونے والوں کے خلاف پبلک سیفٹی ایکٹ (PSA) کے تحت بھی مقدمہ درج کیا جائے گا۔

      انہوں نے کہا کہ تقریباً ایک درجن افراد نے کچھ دیر کے لیے ملک مخالف اور اشتعال انگیز نعرے بازی شروع کر دی۔ ان کے ساتھ چند اور لوگ بھی شامل ہو گئے حالانکہ زیادہ تر اجتماع الگ ہی رہا۔ انہوں نے مزید کہا کہ نعرے بازی میں ملوث افراد اور مسجد کی انتظامیہ (منیجنگ) کمیٹی کے رضاکاروں کے درمیان بھی ہاتھا پائی ہوئی جنہوں نے نعرے بازی اور غنڈہ گردی کو روکنے کی کوشش کی۔

      ایس ایس پی نے کہا کہ اس کی وجہ سے دونوں فریقوں کے درمیان جھڑپیں ہوئیں، انہوں نے مزید کہا کہ رضاکاروں نے ’لوگوں‘ کو مسجد سے نکال دیا۔ انہوں نے کہا کہ باہر آنے کے بعد بھی ان میں سے ایک درجن سے زیادہ لوگوں نے اشتعال انگیز نعرے لگاتے ہوئے دوسروں کو مشتعل کرنے کی کوشش کی لیکن ناکام رہے۔ پھر وہ آس پاس پولیس کی موجودگی کو دیکھ کر منتشر ہو گئے۔

      بلوال نے کہا کہ نوہٹہ پولیس اسٹیشن میں تعزیرات ہند کی دفعہ 124A (غداری) اور 447 (مجرمانہ خلاف ورزی) کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ تحقیقات کے دوران ’لوگوں‘ کی شناخت کے لیے تکنیکی ذرائع کو اپنایا گیا اور مختلف مقامات پر چھاپے مارے گئے جس کے نتیجے میں نعرے لگانے والے دو اہم عناصر کو گرفتار کیا گیا۔

      مزید پڑھیں: Hajj: سعودی حکومت کا بڑا فیصلہ: عازمین کو مناسک کی ادائیگی کے دوران احتیاطی تدابیر پر عمل کرنا ہوگا ضروری: یہاں جانئے گائیڈ لایئنس

      ایس ایس پی نے کہا کہ اس معاملے میں بعد میں گیارہ مزید ملزمان کو گرفتار کیا گیا جو جامع مسجد کے اندر اور گیٹ پر نعرے بازی اور غنڈہ گردی میں ملوث تھے۔ انہوں نے کہا کہ مزید کئی مشتبہ افراد سے تفتیش کی جا رہی ہے اور جیسے ہی اس معاملے میں ان کا کردار واضح ہو جائے گا انہیں باضابطہ طور پر گرفتار کر لیا جائے گا۔

      مزید پڑھیں: Ramazan 2022: کھجور قدرت کا ایک انمول تحفہ، افطار میں اچھا ذائقہ اور فوائد حاصل کرنے کیلئے بنائے یہ ڈش

      انہوں نے کہا کہ ان تمام ملزمان کے پبلک سیفٹی ایکٹ (PSA) کے ڈوزیئر بھی تیار کیے جا رہے ہیں تاکہ انہیں PSA ایکٹ کے تحت بھی بک کیا جا سکے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: