ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

سری نگر انکاؤنٹر: عرفان اور بلال نامی 2دہشت گردوں کو کیاگیاہلاک،اب تک مارے گئے 78دہشت گرد

جموں و کشمیر پولیس کے ایک ترجمان نے بتایا کہ سری نگر کے دنمار علمدار کالونی میں جمعے کی علی الصبح ہونے والے ایک مسلح تصادم کے دوران 2 دہشت گردوں کو ہلاک کیا گیا ہے۔ان کا مزید کہنا تھا: 'مہلوکین کی شناخت عرفان اور بلال کے طورپر کی گئی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jul 16, 2021 12:45 PM IST
  • Share this:
سری نگر انکاؤنٹر: عرفان اور بلال نامی 2دہشت گردوں کو کیاگیاہلاک،اب تک مارے گئے 78دہشت گرد
سری نگر کے دنمار علمدار کالونی میں جمعے کی علی الصبح ہونے والے ایک مسلح تصادم کے دوران ۲ دہشت گردوں کو ہلاک کیا گیا ہے

جموں و کشمیر کے سری نگر کے مضافاتی علاقہ دنمار علمدار کالونی میں جمعے کی علی الصبح سکیورٹی فورسز نے ایک آپریشن کے دوران دو دہشت گردوں کو ہلاک کیا ہے۔ دہشت گردوں کی فائرنگ سے سی آر پی ایف کے دو اہلکار زخمی ہوئے ہیں جنہیں علاج و معالجہ کے لئے فوجی اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔زخموں اہلکاروں کی شناخت 21 بٹالین کے سب انسپکٹر بوپندر شرما اور 73 بٹالین کے کانسٹیبل یونس احمد ڈار کے طور پر ہوئی ہے۔


جموں و کشمیر پولیس کے ایک ترجمان نے بتایا کہ سری نگر کے دنمار علمدار کالونی میں جمعے کی علی الصبح ہونے والے ایک مسلح تصادم کے دوران 2 دہشت گردوں کو ہلاک کیا گیا ہے۔ان کا مزید کہنا تھا: 'مہلوکین کی شناخت عرفان اور بلال کے طورپر کی گئی ہے۔ علاقے میں آپریشن جاری ہے'۔



کشمیر زون پولیس کے انسپکٹر جنرل وجے کمار کے مطابق سری نگر کے آپریشن میں دو دہشت گردوں کی ہلاکت کے ساتھ رواں سال اب تک مارے گئے دہشت گردوں کی تعداد بڑھ کر 78 ہو گئی ہے۔ان کا مزید کہنا تھا: 'ان 78 میں سے 39 کا تعلق لشکر طیبہ سے تھا جبکہ باقی حزب المجاہدین، البدر، جیش محمد اور انصار غزوۃ الہند سے وابستہ تھے'۔

سرکاری ذرائع نے تصادم کی تفصیلات فراہم کرتے ہوئے بتایا کہ سری نگر کے مضافاتی علاقہ دنمار علمدار کالونی میں دہشت گردوں کی موجودگی سے متعلق خفیہ اطلاع ملنے پر جموں و کشمیر پولیس اور سی آر پی ایف نے جمعے کی علی الصبح مذکورہ علاقے کو محاصرے میں لے کر تلاشی آپریشن شروع کیا۔

انہوں نے بتایا کہ ایک مشتبہ جگہ کی جانب پیش قدمی کے دوران وہاں موجود جنگجوئوں نے سکیورٹی فورسز پر فائرنگ کی جس کے بعد طرفین کے درمیان باضابطہ طور تصادم شروع ہوا۔سرکاری ذرائع نے بتایا کہ محاصرے میں پھنسنے والے دہشت گردوںکو خودسپردگی اختیار کرنے کی پیشکش کی گئی جو انہوں نے مسترد کی۔انہوں نے مزید بتایا کہ آخری اطلاعات ملنے تک مسلح تصادم میں دہشت گردمارے جا چکے تھے جن کی لاشیں برآمد کی گئی ہیں
Published by: Mirzaghani Baig
First published: Jul 16, 2021 09:43 AM IST