ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : کپواڑہ میں میاں ، بیوی اور تین بچوں سمیت پورا کنبہ آیا کورونا وائرس کی زد میں

اندرہامہ ریڈ زون علاقہ میں لوگوں پر کڑی نگاہ رکھی جارہی ہے ۔ تاکہ وہ کسی بھی قسم کی کوئی نقل وحمل نہ کرسکیں اور وہ کسی بھی طرح سے دیگر علاقوں میں جاکر لوگوں کو پریشانیوں میں مبتلا نہ کریں

  • Share this:
جموں و کشمیر : کپواڑہ میں میاں ، بیوی اور تین بچوں سمیت پورا کنبہ آیا کورونا وائرس کی زد میں
علامتی تصویر

کپوارہ ضلع کے اندرہامہ مقام شاہولی میں کورونا وائرس میں مبتلا مریضوں کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے ۔علاقہ میں اب تک اس بیماری میں مبتلا مریضوں کی تعداد 29 تک پہنچ گئی ہے ۔ ریڈ زون قرار دیئے گئے اس علاقہ میں صورتحال انتہائی ہیبت ناک ہے اور اب وہاں انسان انسان سے ڈر محسوس کر رہا ہے ۔ یہ علاقہ پچھلے سولہ روز سے سیل ہے ، جس کے باعث وہاں زندگی کی رفتار بھی تھم سی گئی ہے ۔ تازہ واقعہ میں ایک پورا کنبہ کورونا پازیٹیو آیا ہے ، جس میں میاں بیوی اور اس کے تین بچے شامل ہیں اور ان سب کو کووڈ اسپتال کپوارہ منتقل کیا گیا ہے۔


ادھر علاقہ سیل ہونے کی وجہ سے لوگوں کو کھیتی باڑی کرنے میں بھی شدید دشواریاں پیش آرہی ہیں ۔ بیچ کی بوائی کا سیزن ہے اور لوگوں کیلئے بیچوں کی بوائی کا کام بھی لاک ڈاون اور سیل کی وجہ سے ممکن نہیں ہورپا ہے ۔ حالانکہ اس پوری آبادی کا انحصار کھیتی باڑی کے کام پر ہے ۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ ان کے پاس پاس پیسے بھی نہیں ہیں کہ وہ اشیائے ضروریہ کی خریداری کرسکیں ۔ اس دوران رمضان المبارک کے مقدس ماہ کی بھی آمد ہوچکی ہے ، جس میں لوگوں کی پریشانیاں مزید بڑھ سکتی ہیں ۔


لوگ اب انتظامیہ سے مطالبہ کررہے ہیں کم ازکم ماہ رمضان میں علاقہ کے اندر کچھ رعایت دی جائے ۔ لوگوں کو کھیتی باڑی کے کام کی مرحلہ وار بنیادوں پر اجازت دی جائے ، کیونکہ بیچوں کی بوائی کا کام ابھی ہونا ہے اور اگر کچھ روز لوگوں کو راحت نہیں ملی تو علاقہ کے لوگوں کیلئے بیچوں کی بوائی کا کام کرنا ممکن نہیں ہو پائے گا ۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ انتظامیہ کو چاہئے کہ وہ کوئی گنجائش نکالے تاکہ لوگوں کیلئے کم از کم بیچوں کی بوائی کا کام ممکن ہوسکے اور وہ بھاری نقصان سے بچ جائیں ۔ اس کے علاوہ علاقہ میں بینکگ سہولیات بھی نہیں ہیں ۔


قابل ذکر ہے کہ اندرہامہ ریڈ زون علاقہ میں لوگوں پر کڑی نگاہ رکھی جارہی ہے ۔ تاکہ وہ کسی بھی قسم کی کوئی نقل وحمل نہ کرسکیں اور وہ کسی بھی طرح سے دیگر علاقوں میں جاکر لوگوں کو پریشانیوں میں مبتلا نہ کریں  ۔ پورے ضلع میں اب تک کورونا وائرس مریضوں کی کل تعداد 45 تک پہنچ گئی ہے ، جن میں اب تک 6 افراد صحتیاب بھی ہوگئے ہیں ۔
First published: Apr 24, 2020 09:18 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading