ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں کشمیر سے آرٹیکل 370 ہٹانے کے ایک سال مکمل ہونے پر بڑے فدائین حملے کا اندیشہ، سیکورٹی الرٹ

باوثوق ذرائع کے مطابق پاکستانی فوج اور آئی ایس آئی کی مدد سے یہ فدائین حملہ انجام دیا حاسکتا ہے۔

  • Share this:
جموں کشمیر سے آرٹیکل 370 ہٹانے کے ایک سال مکمل ہونے پر بڑے فدائین حملے کا اندیشہ، سیکورٹی الرٹ
فائل فوٹو

سری نگر۔ جموں کشمیر سے آرٹیکل 370 ہٹانے اور اسے یوٹی کا درجہ دینے کو ایک سال مکمل ہونے پر ملیٹنٹ ایک بڑے فدائین حملہ کرنے کی فراق میں ہیں۔ واضح رہے کہ 5 اگست 2019 کو مرکزی حکومت نے جموں کشمیر سے نہ صرف آرٹیکل 370 کو ہٹا دیا تھا بلکہ جموں کشمیر کے علاوہ لداخ کو الگ سے یوٹی کا درجہ بھی دیا تھا۔ اس موقع پر اگرچہ مرکزی حکومت کی جانب سے اُٹھائے گئے اقدامات کی وجہ سے ملیٹنٹوں اور ان کے آقاوں کو امن و امان درہم برہم کرنے کا کوئی موقع نہیں ملا تاہم اس بار انٹلی جنس ذرائع کے مطابق لشکر طیبہ اور جیش محمد سے وابستہ ملیٹنٹ جموں کشمیر سے 370 ہٹانے کے پہلے سال کے پورے ہونے پر کوئی بڑا فدائین حملہ انجام دے سکتے ہیں۔


باوثوق ذرائع کے مطابق پاکستانی فوج اور آئی ایس آئی کی مدد سے یہ فدائین حملہ انجام دیا حاسکتا ہے۔ کہا جارہا ہے کہ پاک مقبوضہ کشمیر اور پاکستان  کے کچھ علاقوں میں لشکر، جیش اور حزب المجاہدین سے وابستہ ملیٹنٹوں نے ایک مشترکہ میٹنگ منعقد کرکے اس حملے کی سازش رچی ہے۔ یہ بھی کہا جارہا ہے کہ حالیہ ایام میں جموں کے پونچھ ، راجوری اور کپواڑہ میں جو سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی ہوئی ہے اسی دوران ملیٹنٹوں کا ایک گروپ دراندازی کرنے میں کامیاب ہوا ہے اور ان ملیٹنٹوں کو 5 اگست کے آس پاس پلوامہ جیسا فدائین حملہ انجام دینے کو کہا گیا ہے۔


ذرائع کے حوالے سے ملی خبر کے مطابق، ملیٹنٹوں کو پہلے امرناتھ یاترا یا نیشنل ہائی وے پر حملہ کرنے کو کہا گیا تھا۔ تاہم امرناتھ یاترا منسوخ ہونے کی وجہ سے ملیٹنٹوں کو حملہ کرنے کا موقع نہیں ملا ۔ انٹلی جنس ذرائع کے مطابق کشمیر کے بارہمولہ ضلع میں چند روز پہلے ایک ماروتی گاری کی چوری ہوئی تھی اور فی الحال سیکیورٹی ایجنسیوں کو اس  گاڑی کے بارے میں کوئی سراغ نہیں ملا ہے ۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ پچھلے کچھ ماہ میں سیکیورٹی فورسز نے نہ صرف درجنوں ملیٹنٹوں کو مار گرایا ہے بلکہ اس دوران فورسز نے کئی اعلی کمانڈر بھی مار گرائے ہیں اور صورت حال یہاں تک پہنچ گئی کہ کشمیر میں ملیٹنٹ اس وقت قیادت سے محروم ہوگئے ہیں ۔ چنانچہ حالیہ کچھ مہینوں میں کشمیر میں ملیٹنٹوں کا صفایا دیکھ کر پاکستان بوکھلاہٹ کا شکار ہوگیا ہے اور اسی وجہ سے وہ 5 اگست کے آس پاس بڑا فدائین حملہ کرانے کی فراق میں ہے۔ تاکہ ہندوستان کو پریشان کرنے کے علاوہ پوری دنیا کو یہ باور کرایا جاسکے کہ کشمیر کے لوگ آرٹیکل 370 ہٹانے سے خوش نہیں ہیں۔


ادھر  اس حملے کے حوالے سے انٹلی جنس رپورٹ سامنے آنے کے بعد پورے جموں کشمیر میں سیکیورٹی کو الرٹ پر رکھا گیا ہے جب کہ جگہ جگہ ناکے لگانے کے علاوہ اہم تنصیبات پر بھی سیکیورٹی مزید بڑھا دی گئی ہے تاکہ ملیٹنٹوں کے عزائم کو ناکام کیا جاسکے۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Jul 23, 2020 11:41 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading