உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں وکشمیر: بارہمولہ گھریلو تشدد میں خاتون کی موت، پولیس نے ایس آئی ٹی کی تشکیل دی

    جموں وکشمیر: بارہمولہ گھریلو تشدد معاملے میں خاتون کی موت کی جانچ کے لئے ایس آئی ٹی کی کمیٹی تشکیل دی گئی ہے۔

    جموں وکشمیر: بارہمولہ گھریلو تشدد معاملے میں خاتون کی موت کی جانچ کے لئے ایس آئی ٹی کی کمیٹی تشکیل دی گئی ہے۔

    پولس نے ایڈیشنل سپرنٹنڈنٹ بارہمولہ کی سربراہی میں ایک خصوصی تحقیقاتی ٹیم تشکیل دی ہے، جس میں شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ کے وار پورہ پٹن سے تعلق رکھنے والی ایک خاتون کی مبینہ گھریلو تشدد سے موت کی تحقیقات کی جائیں گی۔

    • Share this:
    بارہمولہ: پولس نے ایڈیشنل سپرنٹنڈنٹ بارہمولہ کی سربراہی میں ایک خصوصی تحقیقاتی ٹیم تشکیل دی ہے، جس میں شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ کے وار پورہ پٹن سے تعلق رکھنے والی ایک خاتون کی مبینہ گھریلو تشدد سے موت کی تحقیقات کی جائیں گی۔ ایس ایس پی بارہمولہ نے اس سلسلے میں ایک حکم نامہ جاری کیا جس میں کہا گیا کہ پولیس اسٹیشن کریری میں مخت دفعات کے تحت کیس درج کرکے معاملے کی حساسیت کے پیش نظر کیس کی تیزی اور سنجیدگی سے جانچ کے لیے ایک خصوصی تحقیقاتی ٹیم تشکیل دی گئی ہے۔

    خصوصی کمیٹی کے سربراہ کے طور پر ایڈیشنل سپرنٹنڈنٹ بارہمولہ کے علاوہ، ایس آئی ٹی کے ارکان میں ایس ڈی پی او کریری، پولیس اسٹیشن کریری کے ایس ایچ او اور اے ایس آئی علی محمد اور محمد صادق شامل ہیں۔ ایس آئی ٹی کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ کیس کی تفتیش پیشہ ورانہ خطوط پر کرے اور اس بات کو یقینی بنائے کہ تفتیش میں کوئی خامی باقی نہ رہے۔

    یہ بھی پڑھیں۔

    جموں وکشمیر: پلوامہ میں پولیس کی کارروائی، اغوا کیس کو 24 گھنٹے کے اندر حل کردیا گیا

    اس کے علاوہ ایس ایس پی بارہمولہ نے ایس آئی ٹی کو ہفتہ وار بنیادوں پر اپنے دفتر کے ساتھ تفصیلات شیئر کرنے کا حکم بھی دیا ہے۔ اس سے قبل وہ خاتون جسے مبینہ طور پر اس کے سسرال والوں نے کچھ دن پہلے پٹائی کی تھی، اتوار کی شام اسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسی۔

    کہا جا رہا ہے کہ کریری کے کوکاتھل گاؤں میں عید کے دن شوہر اور سسرال والوں کی طرف سے مبینہ طور پر مار پیٹ کے بعد 28 سالہ خاتون کے سر پر شدید چوٹیں آئیں، جس کے بعد خاتون کو ایس ڈی ایچ کریری لے جایا گیا، جہاں سے ڈاکٹروں نے اسے نازک حالت دیکھ کر اسکمز صورہ منتقل کر دیا، جہاں خاتون کو اسپتال میں انتہائی نگہداشت یونٹ میں رکھا گیا تھا، جہاں بالآخر اس نے اتوار کی شام کو دم توڑ دیا۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: