ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر کے نوشہرہ سیکٹر میں پاکستان کی فائرنگ میں ایک جوان شہید

جموں وکشمیر کے ضلع راجوری میں لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے نوشہرہ سیکٹر میں پاکستانی فوج کی فائرنگ سے ہندوستانی فوج کا ایک حولدار جاں بحق ہوگیا ہے۔

  • Share this:
جموں وکشمیر کے نوشہرہ سیکٹر میں پاکستان کی فائرنگ میں ایک جوان شہید
جموں وکشمیر کے نوشہرہ سیکٹر میں پاکستان کی فائرنگ میں ایک جوان شہید

جموں: جموں وکشمیر کے ضلع راجوری میں لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے نوشہرہ سیکٹر میں پاکستانی فوج کی فائرنگ سے ہندوستانی فوج کا ایک حولدار جاں بحق ہوگیا ہے۔ جموں میں تعینات دفاعی ترجمان لیفٹیننٹ کرنل دیویندر آنند نے تفصیلات فراہم کرتے ہوئے کہا کہ 10 جولائی یعنی جمعہ کو پاکستانی فوج نے ضلع راجوری میں ایل او سی کے نوشہرہ سیکٹر میں بلا اشتعال جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی۔

انہوں نے کہا: 'ہمارے فوجیوں نے دشمن کی فائرنگ کا منہ توڑ جواب دیا۔ فائرنگ کے واقعہ میں حوالدار سامبور گورنگ شدید طور پر زخمی ہوئے اور بعد ازاں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئے'۔ دفاعی ترجمان نے مزید بتایا کہ حوالدار سامبور گورنگ ایک بہادر، انتہائی پرعزم اور ایک مخلص فوجی تھے۔ انہوں نے کہا کہ قوم مہلوک فوجی کی ہمیشہ احسان مند رہے گی۔ ادھر سرکاری ذرائع نے بتایا کہ حوالدار سامبور گورنگ جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب کو قریب ساڑھے بارہ بجے شدید طور پر زخمی ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ زخمی حوالدار کو فوری طور پر قریبی طبی مرکز لے جایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے انہیں مردہ قرار دیا۔



قابل ذکر ہے کہ سال 2003 میں جنگ بندی معاہدہ طے پانے اور سال رواں کے آغاز سے ہی کورونا وبا پھیلنے کے باوصف بھی طرفین کے درمیان بین الاقوامی سرحد اور ایل او سی پر نوک جھونک کا سلسلہ تھمنے کا نام ہی نہیں لے رہا ہے۔ سرکاری ذرائع کے مطابق امسال اب تک طرفین کے درمیان گولہ باری کے تبادلے کے زائد از دو ہزار واقعات رونما ہوئے ہیں جن میں دونوں ممالک کو نقصان سے دوچار ہونا پڑا ہے۔



نیوز ایجنسی یو این آئی اردو کے اِن پُٹ کے ساتھ۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 10, 2020 04:14 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading