ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

ممبئی سے سری نگر کیلئے 2100 کلو میٹر کے سفر پر سائیکل سے نکلا 36 سالہ محمد عارف ، یہ ہے اصل وجہ

عارف نے بتایا کہ میں نے جمعرات کو صبح 10 بجے کے آس پاس ٹاور کو چھوڑ دیا تھا ۔ اس نے بتایا کہ راستے میں کئی پولیس اہلکار ملے ، جنہیں اس نے اپنی پریشانی بتائی ۔ اس نے بتایا کہ اس کی مدد کسی نے نہیں کی ، لیکن اس کو روکا بھی نہیں ۔

  • Share this:
ممبئی سے سری نگر کیلئے 2100 کلو میٹر کے سفر پر سائیکل سے نکلا 36 سالہ محمد عارف ، یہ ہے اصل وجہ
ممبئی سے سری نگر کیلئے 2100 کلو میٹر کے سفر پر سائیکل سے نکلا 36 سالہ محمد عارف ، یہ ہے اصل وجہ

ممبئی سے اپنے بیمار والد کو دیکھنے کیلئے سائیکل سے سری نگر کیلئے نکلے محمد عارف کی مدد کیلئے اب انتظامیہ آگے آئی ہے اور گجرات سے اس کو ڈھونڈ نکالا ہے ۔ بتادیں کہ سی این این ۔ نیوز 18 کی چھوٹی سی کوشش نے رنگ دکھایا ہے اور اب گجرات پولیس نے عارف کو کشمیر جانے والے ایک ٹرک میں بیٹھا دیا ہے ، جہاں سے وہ آگے کا سفر طے کرے گا ۔ عارف کو سفر کے دوران کسی طرح کی کوئی پریشانی نہ ہوا ، اس کیلئے اس کو کھانے کا سامان بھی دیا گیا ہے ۔


بتادیں کہ محمد عارف ( 36 ) نام کا یہ شخص ممبئی کے باندرا میں تولا ٹاور میں ایک چوکیدار کی نوکری کرتا ہے ۔ عارف اپنے والد سے ملنے کیلئے ممبئی سے 2100 کلو میٹر دوری کا سفر سائیکل سے طے کر رہا تھا ۔ کچھ دن پہلے ہی عارف کو گھر سے فون آیا تھا کہ اس کے والد کو دل کا دورہ پڑا ہے اور وہ سنگین حالت میں ہیں ۔ اس کے بعد عارف نے ممبئی سے راجوری جانے کیلئے ہر ممکن کوشش کی ۔ اس نے بتایا کہ کورونا وائرس کی وبا کی وجہ سے ملک بھر میں لاک ڈاون کی وجہ سے کوئی ٹرین یا بس دستیاب نہیں تھی ۔ عارف نے پھر ایک ساتھی چوکیدار کو پانچ سو روپے دئے اور اس کی سائیکل لے لی ۔ عارف کا کہنا ہے کہ اس کو کسی بھی طرح اپنے والد کے پاس پہنچنا ہے اور پھر اس کیلئے اس کو خواہ کتنی بھی دیر سائیکل کیوں نہ چلانی پڑے ۔


عارف نے بتایا کہ میں نے جمعرات کو صبح 10 بجے کے آس پاس ٹاور کو چھوڑ دیا تھا ۔ اس نے بتایا کہ راستے میں کئی پولیس اہلکار ملے ، جنہیں اس نے اپنی پریشانی بتائی ۔ اس نے بتایا کہ اس کی مدد کسی نے نہیں کی ، لیکن اس کو روکا بھی نہیں ۔ لاک ڈاون کے بارے میں وہ جانتا ہے کہ جو جہاں ہے وہیں رہے ، لیکن اس کو آگے بڑھنا ہی ہوگا ۔ عارف نے کہا کہ میری بات پر ہر کسی کو یقین ہے ، تبھی ہر پولیس والا اس کو آگے جانے کی اجازت دے رہا ہے ۔


اتوار کی صبح جب سی این این ۔ نیوز 18 نے اس سے بات کی تو عارف نے بتایا کہ وہ گجرات ۔ راجستھان کی سرحد پر پہنچ گیا ہے ۔ عارف نے بتایا کہ اس نے پوری رات سائیکل چلائی ۔ آج صبح گجرات کے پولیس اہلکاروں نے مجھے ایک ٹرک میں بیٹھایا اور مجھے کھانے کیلئے کھانا بھی دیا ۔

اس درمیان سی آر پی ایف کے افسر راجوری ضلع میں عارف کے گھر گئے اور اس والد کو اسپتال میں بھرتی کرایا ۔ اسپیشل ڈی جی ( سی آر پی ایف ) ذوالفقار حسن نے سی این این ۔ نیوز 18 کو بتایا کہ ان کے والد کی حالت سنگین ہے ۔ اتوار کو کچھ ٹیسٹ اور کارروائی کی جائیں گی ۔ اگر ضروری ہوا تو ہم انہیں کٹرا کے نارائن اسپتال میں منتقل کردیں گے ۔
First published: Apr 05, 2020 06:24 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading