உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    والد کے ملک مخالف بتانے پر بولیں شہلا راشد۔ وہ بیوی سے مارپیٹ کرنے والے، ناکام آدمی

    شہلا راشد کی فائل فوٹو: فوٹو پی ٹی آئی

    شہلا راشد کی فائل فوٹو: فوٹو پی ٹی آئی

    جواہر لال نہرو یونیورسیٹی کی سابق طالبہ شہلا راشد ایک بار پھر چرچا میں ہیں۔ ان کے والد عبدالرشید شورا نے جموں وکشمیر کے ڈی جی پی کو مکتوب لکھ کر اپنی بیٹی شہلا راشد پر ملک مخالف ہونے کا الزام لگایا ہے۔ عبد الرشید نے دعویٰ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ شہلا راشد ملک مخالف سرگرمیوں میں شامل ہے۔ انہیں اپنی بیٹی سے جان کا خطرہ ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی۔ جواہر لال نہرو یونیورسیٹی (JNU) کی سابق طالبہ شہلا راشد ( Shehla Rashid) ایک بار پھر چرچا میں ہیں۔ ان کے والد عبدالرشید شورا (Abdul R Shohra) نے جموں وکشمیر (Jammu-Kashmir) کے ڈی جی پی کو مکتوب لکھ کر اپنی بیٹی شہلا راشد پر ملک مخالف ہونے کا الزام لگایا ہے۔ عبد الرشید نے دعویٰ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ شہلا راشد ملک مخالف سرگرمیوں میں شامل ہے۔ انہیں اپنی بیٹی سے جان کا خطرہ ہے۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے شہلا راشد کو ایک غیر ملکی این جی او سے فنڈنگ کی بات بھی کہی ہے۔

      وہیں، شہلا راشد نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے والد کے الزامات سے انکار کیا ہے۔ شہلا نے ٹویٹ کر لکھا ' کنبے میں ایسا نہیں ہوتا جیسا میرے والد نے کیا ہے۔ میرے ساتھ ساتھ میری ماں اور بہن پر بھی بے بنیاد الزامات لگائے ہیں'۔ شہلا آگے لکھتی ہیں ' وہ بیوی کو پیٹنے والے، بدسلوکی کرنے والے ایک ناکام انسان ہیں۔ ہم نے بالآخر ان کے خلاف کارووائی کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ یہ اسٹنٹ اسی کا ردعمل ہے'۔


      شہلا نے ایک ٹویٹ کرتے ہوئے کہا ' آپ میں سے بہت سے لوگوں نے میرے والد کا وہ ویڈیو دیکھا ہو گا جس میں وہ میرے اور میری ممی اور بہن کے خلاف اناپ شناپ الزام لگا رہے ہیں۔ سیدھے لفظوں میں کہیں تو وہ بیوی کو پیٹنے والے، بدسلوکی کرنے والے آدمی ہیں۔ شہلا نے گھریلو تشدد کو لے کر جو الزام لگائے ہیں ان پر عبدالرشید شورا نے کہا ' میں نے عدالت کے آرڈر پر اسٹے لیا ہے جس کے بعد مجھے گھر میں رکنے کی اجازت دی گئی ہے۔ لیکن، مجھے ایس ایچ او نے رکنے نہیں دیا جس کے بعد میں نے اس کی شکایت کی ہے۔


      کیا ہے پورا معاملہ؟

      دراصل، شہلا راشد کے والد عبدالرشید شورا نے ڈی جی پی سے خطاب کرتے ہوئے انگریزی میں 3 صفحات کا مکتوب لکھا ہے۔ اس میں عبدالرشید نے اپنی بیٹی شہلا کو ہی ملک مخالف بتاتے ہوئے کہا کہ وہ ملک مخالف سرگرمیوں میں شامل ہیں۔

       
      Published by:Nadeem Ahmad
      First published: