உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    تہوار کے سیزن سے قبل جموں و کشمیر میں دہشت گردانہ حملوں کا الرٹ جاری

    تہوار کے سیزن سے قبل جموں و کشمیر میں دہشت گردانہ حملوں کا الرٹ جاری

    تہوار کے سیزن سے قبل جموں و کشمیر میں دہشت گردانہ حملوں کا الرٹ جاری

    Jammu and Kashmir News : انٹیلی جنس ایجنسیوں کے مطابق انہیں لشکر طیبہ ، حرکت الانصار اور حزب المجاہدین کے دہشت گردوں کی نقل و حرکت سے متعلق ان پٹس ملے ہیں ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
    جموں : انٹیلی جنس ایجنسیوں نے دہشت گردانہ حملے کا الرٹ جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغان نژاد دہشت گردوں کے ساتھ ساتھ پاکستان میں مقیم دہشت گرد جموں و کشمیر میں آنے والے تہوار کے سیزن کے دوران دہشت گردانہ حملے کرسکتے ہیں ۔ انٹیلی جنس ایجنسیوں کے مطابق انہیں لشکر طیبہ ، حرکت الانصار اور حزب المجاہدین کے دہشت گردوں کی نقل و حرکت سے متعلق ان پٹس ملے ہیں ۔

    پاکستان میں موجود دہشت گرد تنظیمیں افغان نژاد دہشت گردوں کو ہندوستان میں داخل ہونے میں مدد فراہم کررہی ہیں ۔ ایک عہدیدار کے مطابق طالبان کے افغانستان میں حکومت سنبھالنے کے بعد ہمیں پاکستان میں موجود دہشت گرد تنظیموں کی مدد سے افغانستان میں مقیم دہشت گردوں کی نقل و حرکت کے بارے میں ان پٹس ملے ہیں ، جنہیں آئی ایس آئی کی حمایت حاصل ہے ۔ ایجنسیوں کو اطلاع ملی ہے کہ اس طرح کے 40 کے قریب دہشت گرد لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے قریب پاکستان کے نکیال سیکٹر میں ایک دہشت گرد کیمپ میں موجود ہیں ۔

    ان دہشت گردوں کو دریائے پونچھ عبور کرکے ہندوستان میں داخل ہونے کی تربیت دی گئی ہے اور انہیں ٹیوب اور سنور کلنگ کے ذریعہ دریا عبور کرنے کی تربیت دی گئی ہے تاکہ یہ دہشت گرد ایل او سی کو عبور کرکے ہندوستانی علاقے میں داخل ہوسکیں ۔ اطلاعات کے مطابق یہ دہشت گرد ٹفن بم بنانے کی تربیت حاصل کر چکے ہیں ۔ انھیں خام مال ہندوستان میں فعال سلیپر سیلز کے ذریعہ فراہم کیا جائے گا ۔

    متعلقہ ایجنسیوں ، ریاستی پولیس اور نیم فوجی دستوں کو انٹیل ان پٹ کے بارے میں الرٹ جاری کیا گیا ہے۔ عہدیدار نے مزید کہا کہ ان دہشت گردوں کو ہندوستانی علاقے میں داخل ہونے نہیں دیا جائے گا ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: