உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    J&K News: سابق صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند کو لے کر محبوبہ مفتی کے بیان پر الطاف بخاری نے کہا : وہ دوہری پالیسی اپنا رہی ہیں

    J&K News: سابق صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند کو لے کر محبوبہ مفتی کے بیان پر الطاف بخاری نے کہا : وہ دوہری پالیسی اپنا رہی ہیں

    J&K News: سابق صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند کو لے کر محبوبہ مفتی کے بیان پر الطاف بخاری نے کہا : وہ دوہری پالیسی اپنا رہی ہیں

    Jammu and Kashmir : جموں و کشمیر اپنی پارٹی کے سربراہ سید الطاف بخاری نے پی ڈی پی صدر محبوبہ مفتی کے سابق صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند کے متعلق دئے گئے بیان پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ محبوبہ مفتی دوہری پالیسی اپنانے کی عادی ہیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Jammu and Kashmir | Srinagar | Anantnag
    • Share this:
    جموں و کشمیر: جموں و کشمیر اپنی پارٹی کے سربراہ سید الطاف بخاری نے پی ڈی پی صدر محبوبہ مفتی کے سابق صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند کے متعلق دئے گئے بیان پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ محبوبہ مفتی دوہری پالیسی اپنانے کی عادی ہیں۔ سید الطاف بخاری نے کہا کہ جب رام ناتھ کووند صدارتی عہدے کے امیدوار تھے تب محبوبہ مفتی نے بھی انہیں اپنا ووٹ دیا تھا اور کاش کہ محبوبہ مفتی نے انہیں ووٹ نہیں دیا ہوتا تو آج ان کی باتوں میں وزن بھی ہوتا۔ الطاف بخاری نے کہا کہ پی ڈی پی کی صدر کو اس وقت ایسے امیدوار کو ووٹ دینا چاہئے تھا، جو بقول ان کے جموں و کشمیر کی سوچتا ، مگر محبوبہ مفتی نے ایسا نہیں کرنے کے باوجود آج اس طرح کا بیان دیا، جس سے ان کا دوہرا میعار ظاہر ہوتا ہے۔

    اننت ناگ میں پارٹی کارکنوں کے ایک اجلاس سے خطاب کے دوران بخاری نے کہا کہ دفعہ 370 کو صرف ملک کی سپریم کورٹ بحال کر سکتی ہے اور وہ جموں و کشمیر کے عوام کی خاطر ہر مرتبہ دہلی کے سامنے جھولی پھیلایئں گے۔ انہوں نے کہا کہ یہاں کی علاقائی سیاسی جماعتیں لوگوں کو دفعہ 370 اور 35 اے کے نام پر لگاتار گمراہ کرتی آئی ہیں اور اب بھی ایسا ہی کر رہی ہیں، لیکن سچ بات یہ ہے کہ دفعہ 370 یا 35 اے کو بنا سپریم کورٹ کے کوئی بھی بحال نہیں کر سکتا ہے۔

     

    یہ بھی پڑھئے: سری نگر کے تاریخی لال چوک کے گھنٹہ گھر پر لہرایا ترنگا


    الطاف بخاری نے دعویٰ کیا جو کچھ دفعہ 370 کے خاتمے کے بعد جموں و کشمیر نے کھویا تھا، اس کو اپنی پارٹی واپس لانے میں کامیاب ہوگئی ہے ۔ تاہم دفعہ 370 سے جموں و کشمیر کے عوام کے احساسات جڑے ہیں اور خدا کرے کہ سپریم کورٹ اس کی بحالی کے حق میں فیصلہ دے۔

     

    یہ بھی پڑھئے: راجناتھ سنگھ نے PoK کو بتایا ہندوستان کا حصہ، وزیر دفاع کا پاکستان کو سخت انتباہ


    الطاف بخاری نے مزید کہا کہ اپوزیشن جماعتیں انہیں دہلی کا ایجنٹ قرار دینے میں کوئی کسر باقی نہیں چھوڑ رہی ہیں اور الطاف بخاری سو بار دہلی کے سامنے اپنے لوگوں کی فلاح و بہبود کی خاطر ہاتھ پھیلانے کیلئے تیار ہے اور اس کیلئے اگر انہیں دہلی کا ایجنٹ قرار دیا جائے تو وہ دہلی کے ایجنٹ ہیں۔ یہ پوچھے جانے پر کہ اسمبلی انتخابات کے بعد اپنی پارٹی اپنے آپ کو کہاں پر دیکھتی ہے تو الطاف بخاری نے کہا کہ لوگوں کا جس طرح سے اپنی پارٹی کی جانب رحجان ہے تو یقینی طور پر اگلی حکومت اپنی پارٹی کی ہوگی اور وہ بھی اپنے بل بوتے پر۔

    اجلاس سے غلام حسن میر، رفیع احمد میر، ہلال احمد شاہ، عبدالرحیم راتھر، عبدالمجید پڈر سمیت پارٹی کے دیگر لیڈران نے بھی خطاب کیا۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: