உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    الطاف بخاری نے کہا- صدر جمہوریہ کا جموں وکشمیر دورہ ہمارے لئے خوش آئند

    الطاف بخاری نے کہا- صدر جمہوریہ کا جموں وکشمیر دورہ ہمارے لئے خوش آئند

    جموں و کشمیر اپنی پارٹی کے صدر سید محمد الطاف بخاری نے صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند کے دورہ جموں و کشمیر کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند کو اس دورے سے یہاں کے معاملات کا گہرائی سے تجزیہ کرنے کا موقع ملے گا۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      سری نگر: جموں و کشمیر اپنی پارٹی کے صدر سید محمد الطاف بخاری نے صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند کے دورہ جموں و کشمیر کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند کو اس دورے سے یہاں کے معاملات کا گہرائی سے تجزیہ کرنے کا موقع ملے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان بہتر تعلقات جموں و کشیمیر کے لئے سب سے اچھی بات ہے۔ سید محمد الطاف بخاری  نے ان باتوں کا اظہار منگل کے روز یہاں نامہ نگاروں کے ساتھ بات کرنے کے دوران کیا۔

      انہوں نے کہا: ’صدر جمہوریہ کی جموں وکشمیر آمد انتہائی خوش آئند بات ہے اس دورے سے انہیں یہاں کے معاملات کو گہرائی سے تجزیہ کرنے کا موقعہ ملے گا‘۔ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان بات چیت کا سلسلہ شروع ہونے کے بارے میں پوچھے جانے والے ایک سوال کے جواب میں سید محمد الطاف بخاری نے کہا: ’ہمارے وزیر اعظم اور وزیر خارجہ اس کے بارے میں بہتر جانتے ہیں تاہم دونوں ہمسایہ ملکوں کے درمیان بہتر تعلقات خاص طور پر ہمارے لئے اچھی بات ہے‘۔

      جموں و کشمیر اپنی پارٹی کے صدر سید محمد الطاف بخاری نے صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند کے دورہ جموں و کشمیر کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند کو اس دورے سے یہاں کے معاملات کا گہرائی سے تجزیہ کرنے کا موقع ملے گا۔
      جموں و کشمیر اپنی پارٹی کے صدر سید محمد الطاف بخاری نے صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند کے دورہ جموں و کشمیر کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند کو اس دورے سے یہاں کے معاملات کا گہرائی سے تجزیہ کرنے کا موقع ملے گا۔


      ان کا اسمبلی نشستوں کی سرنو حد بندی کے بارے میں پوچھے جانے پر کہا کہ ریاستی درجے کی فوری بحالی کے بعد یہاں اسمبلی انتخابات منعقد ہونے چاہئے تاکہ جمہوریت بنیادی سطح پر استوار ہوسکے۔


      کشمیر کی نئی پود کو اپنی عظیم وراثت سے سبق لینا چاہئے: رام ناتھ کووند

      سری نگر: صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند نے کشمیر کو ملک کے لئے امید کی ایک کرن قرار دیتے ہوئے یہاں کی نئی نسل کو اپنی عظیم وراثت سے سبق حاصل کرنے کی تاکید کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر کے ثقافتی و روحانی اثرات پورے ملک پر مرتسم ہوئے ہیں ان کا کہنا تھا کہ کشمیر میں زمانہ قدیم سے ہی مختلف مذہبوں کے لوگ مل جل کر رہے ہیں لیکن بدقسمتی سے یہاں کی اس غیر معمولی مذہبی رواداری کو ختم کرنے کی کوشش کی گئی۔ موصوف صدر جمہوریہ نے یہ باتیں منگل کو یہاں کشمیر یونیورسٹی کے 19 ویں سالانہ جلسہ تقسیم اسناد سے اپنے خطاب کے دوران کہیں۔

      صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند نے کشمیر کو ملک کے لئے امید کی ایک کرن قرار دیتے ہوئے یہاں کی نئی نسل کو اپنی عظیم وراثت سے سبق حاصل کرنے کی تاکید کی ہے۔
      صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند نے کشمیر کو ملک کے لئے امید کی ایک کرن قرار دیتے ہوئے یہاں کی نئی نسل کو اپنی عظیم وراثت سے سبق حاصل کرنے کی تاکید کی ہے۔


      انہوں نے کہا: 'میں کشمیر کی نئی نسل سے تاکید کرتا ہوں کہ وہ اپنی عظیم وراثت سے سیکھیں، انہیں یہ معلوم ہونا چاہئے کہ کشمیر ہمیشہ باقی ملک کے لئے امید کی ایک کرن رہا ہے اور کشمیر کے ثقافتی و روحانی اثرات باقی ملک پر مرتسم ہوئے ہیں'۔ ان کا کہنا تھا کہ کشمیر میں ہمیشہ سے مختلف مذہبوں کے لوگ مل جل کر رہے ہیں لیکن بدقسمتی سے اس غیر معمولی مذہبی رواداری کو ختم کرنے کی کوشش کی گئی اور تشدد جو کھی کشمیریت کا حصہ نہیں رہا ہے، معمول بن گیا۔
      صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند نے کہا کہ غیروں نے کشمیر پر مسلط ہونے کی کوشش کی جس کو ہم ایک عارضی وائرس ہی قرار دے سکتے ہیں جو جسم پر حملہ آور ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر میں اب نئی شروعات ہوئی ہیں تاکہ اس کی شان رفتہ کو بحال کیا جا سکے۔ صدر جمہوریہ نے کہا کہ کشمیر کے نوجوان مختلف شعبوں میں بلندیوں کو چھو کر اپنا لوہا منوا رہے ہیں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: