ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

امرناتھ یاترا کی بحالی کو لے کر کنفیوژن برقرار ، حکومت یاترا شروع کرنے کو لے کر فیصلہ لینے میں ناکام

یاترا میں ہوئی تاخیر اور حکومت کی جانب سے فیصلے میں دیری کو لیکر یاتریوں نے جموں میں احتجاج بھی کیا ۔ ان یاتریوں کا کہنا تھا کہ ان کے پاس پیسے بھی ختم ہوچکے ہیں اور یاترا میں اب صرف چند دن ہی رہ گئے ہیں ، جب کہ حکومت ابھی بھی یہ فیصلہ نہیں کر پائی ہے کہ یاترا ہوگی یا نہیں ۔

  • Share this:
امرناتھ یاترا کی بحالی کو لے کر کنفیوژن برقرار ، حکومت یاترا شروع کرنے کو لے کر فیصلہ لینے میں ناکام
امرناتھ یاترا کی بحالی کو لے کر کنفیوژن برقرار ، حکومت یاترا شروع کرنے کو لے کر فیصلہ لینے میں ناکام

شاید ہی زندگی کا کوئی ایسا شعبہ ہو جو کہ کورونا وائرس سے متاثر نہ ہوا ہو ۔ سماجی تقریبات کے ساتھ ساتھ مذہبی تقریبات بھی اس وائرس کے چلتے اثر انداز ہوئیں ۔ ہر سال ہونے والی روایتی امرناتھ یاترا اس سال کورونا وائرس کے چلتے نہ صرف تاخیر کی شکار ہوگئی ۔ بلکہ تاخیر کے باوجود ابھی بھی حکومت یاترا کی بحالی کو لیکر کوئی فیصلہ نہیں لے سکی ہے ۔ چانچہ یہ ایک عقیدت کا مسئلہ ہے اور اسی وجہ سے ملک کی کئی ریاستوں سے یاتری جموں پہنچ چکے ہیں ۔ تاہم یاترا شروع ہونے کو لے کر انہیں فی الحال در در کی ٹھوکریں کھانی پڑ رہی ہے اور یاترا کی بحالی کو لے کر کوئی انہیں صحیح جواب بھی نہیں دے رہا ۔


یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ ان یاتریوں نے نہ صرف پہلے ہی کووڈ ٹیسٹ کرایا ہے ، بلکہ یہ یاتری کورونا وائرس کے چلتے تمام گائیڈ لائنس پر عمل کر رہے ہیں ۔ ایک خاتون یاتری نے نیوز 18 اردو سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ وہ پچھلے ایک روز سے جموں میں یاترا شروع ہونے کو لے کر انتظار میں ہے ۔ تاہم یاترا شروع ہونے کو لے کر انہیں کوئی ٹھوس جواب نہیں دیتا ۔ مدھیہ پردیش سے آئے کچھ دیگر یاتری بھی اسی صورت حال سے دوچار ہیں ۔


قابل ذکر بات یہ ہے کہ حکومت نے یاتری نواس جو کہ جموں میں یاترا کا پہلا بیس کیمپ ہے ، میں تمام انتظامات کئے ہیں اور پہلی مرتبہ یاتری نواس میں سوشل ڈسٹنسنگ کا خیال رکھ کر بیڈ لگائے ہیں ۔ ایسا پہلی بار دیکھا گیا ہے کہ یاتری نواس میں بیڈ لگائے گئے ہیں جب کہ اس سے پہلے یاتری نواس میں چٹائیاں بچھائی جاتی تھیں اور یاتری ان ہی چٹائیوں پر بیٹھتے تھے ۔


ادھر یاترا میں ہوئی تاخیر اور حکومت کی جانب سے  فیصلے میں دیری کو لیکر یاتریوں نے جموں میں احتجاج بھی کیا ۔ ان یاتریوں کا کہنا تھا کہ ان کے پاس پیسے بھی ختم ہوچکے ہیں اور یاترا میں اب صرف چند دن ہی رہ گئے ہیں ، جب کہ حکومت ابھی بھی یہ فیصلہ نہیں کر پائی ہے کہ یاترا ہوگی یا نہیں ۔ ان احتجاجی یاتریوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ یاترا کی بحالی کو لے کر جلد فیصلہ کیا جائے ۔ادھر  نیوز 18 اردو سے بات کرتے ہوئے امرناتھ شرائن بورڈ کے سی ای او وپل پاٹھل کا کہنا تھا کہ یاتری کی بحالی کو لے کر آئندہ ایک دو دن میں فیصلہ کیا جائے گا ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 20, 2020 11:07 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading