ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

امرناتھ یاترا 2021 : یاتریوں کیلئے اضافی گروپ حادثاتی انشورنس کور فراہم کیا جائے گا

اجلاس کے دوران اس بات کی بھی جانکاری فراہم کی گئی کہ یاتریوں کے لئے اضافی گروپ حادثاتی انشورنس کور فراہم کیا جائے گا۔ پجاریوں کا معاوضہ ایک ہزار روپے سے بڑھا کر 1500 کر دیا گیا ہے۔

  • Share this:
امرناتھ یاترا 2021 : یاتریوں کیلئے اضافی گروپ حادثاتی انشورنس کور فراہم کیا جائے گا
امرناتھ یاترا 2021 : یاتریوں کیلئے اضافی گروپ حادثاتی انشورنس کور فراہم کیا جائے گا

جموں کشمیر :  شری امر ناتھ جی یاترا -2021 کا باضابطہ طور پر 28 جون سے آغاز ہونے والا ہے۔ اس سلسلے میں سیکورٹی سمیت تمام دیگر انتظامات کا جائزہ لیا گیا ہے۔  جبکہ جموں و کشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر نے شری امرناتھ جی شرائن بورڈ کے 40 ویں بورڈ اجلاس کی صدارت کی۔ اس دوران جانکاری دی گئی کہ اس سال کی امرناتھ یاترا56 دن کی ہوگی اور یاترا کا باضابطہ طور پر 28 جون سے آغاز  بیک وقت بالتل  اور روایتی راستے چندن واڑی سے ہوگا۔ اس دوران روزانہ بنیادوں پر  راستے سے چلنے والے یاتریوں کی تعداد  7500 سے  بڑھا کر 10000 فی دن کردی گئی ہے ۔ اس کے علاوہ ہیلی کاپٹروں کے ذریعہ یاترا کرنے والوں کی تعداد الگ سے مقرر کر دی جاۓ گی۔ ملک بھر میں اکھاڑوں و آچاریہ کونسلوں کو خصوصی دعوت نامے ، سادھو سنتوں و سماج کی ممتاز مذہبی شخصیات کی سہولیات کےلئے کئ مقامات پر کاؤنٹرز قائم کیے جائیں گے۔


اجلاس کے دوران اس بات کی بھی جانکاری فراہم کی گئی کہ یاتریوں کے لئے اضافی گروپ حادثاتی انشورنس کور فراہم کیا جائے گا۔ پجاریوں کا معاوضہ ایک ہزار روپے سے بڑھا کر 1500 کر دیا گیا ہے۔ جموں و کشمیر کے ایل جی نے مزید کہا کہ دونوں راستوں پر غیر معمولی طبی سہولیات کو اپ گریڈ کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔ آن  لائن میڈیکل لوازمات ، افرادی قوت کو بڑھانے کےلئے بھی خاص ہدایات دی گئی ہیں۔ شرائن بورڈ کی جانب سے دنیا بھر کے عقیدت مندوں کے لئے صبح اور شام کی آرتی کا براہ راست ٹیلی کاسٹ کیا جائے گا۔  بالتل  سے دو میل جانے والے زائرین کو لے جانے کے لئے بیٹری کاروں کو بھی اس بار متعارف کیا جائے گا۔


جنوبی کشمیر کے ہمالیائی پربتوں میں واقع مقدس گپھا تک کے راستوں پر مواصلاتی سہولیات بھی یاتریوں کو بہم پہنچائی جایئں گی ۔ لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا جو کہ شری امرناتھ جی شرائن بورڈ (ایس اے ایس بی) کے چیئرمین ہیں ، نے آج راج بھون میں منعقدہ 40 ویں بورڈ میٹنگ میں شریک افراد میں چیف سکریٹری بی وی آر سبرامنیم،  فنانشل کمشنراٹل ڈلو ، محکمہ صحت اور میڈیکل ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ اور بورڈ کے ممبران بشمول سوامی اودھیش آنند گری جی مہاراج؛ شری ڈی سی رینہ؛ پنڈت بھجن سوپوری؛ پروفیسر انیتا بلیاریا؛ ڈاکٹر سودرشن کمار ، ڈاکٹر سی ایم سیٹھ ، پروفیسر وشامورتی شاستری اور ڈاکٹر دیوی پرساد شیٹی نے بھی شرکت کی ۔


بورڈ نے یاتریوں کی حفاظت اور سلامتی کی اولین ترجیح کو مدنظر رکھتے ہوئے خصوصی اقدامات اٹھانے کا فیصلہ کیا ہے ۔ یاتریوں کی ایڈوانس رجسٹریشن یکم اپریل سے  ہوگی ۔ آن لائن ڈیجیٹل نظام کو مستحکم بنانے کے لئے خدمات انجام دینے کے لئے آر ایف آئی ڈی ٹریکنگ اور پری پیڈ خدمات حاصل کرنے پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ بورڈ نے الیکٹرانک اور پرنٹ میڈیا کے ذریعہ وسیع پیمانے پر تشہیر کی ہدایت دی۔ خواہش مند یاتریوں کو آگاہ کیا گیا ہے کہ وہ ریاست یا UTs کے ذریعہ نامزد ڈاکٹروں / اسپتالوں کے ذریعہ جاری کردہ لازمی صحت کے سرٹیفکیٹس کو بروقت محفوظ بنائیں۔

ادھر جموں و کشمیر کے ڈایریکٹر جنرل آف پولیس ، دلباغ سنگھ نے بھی یاترا کےلئے غیر معمولی سیکورٹی انتظامات کرنے کا یقین دلایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر پولیس یاتریوں کی حفاظت کو ممکن بنانے اور یاترا کے پر امن و خوشگوار انعقاد کےلئے خصوصی اقدامات اٹھا رہی ہے۔ جسکے لئے پولیس فوج اور نیم فوجی دستوں و دیگر سیکورٹی ایجنسیوں کے ساتھ ایک مشترکہ حکمت عملی وضع کر رہی ہے ۔ تاکہ یاتریوں کی حفاظت کو ہر صورت میں ممکن بنایا جا سکے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Mar 13, 2021 11:58 PM IST