உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Amarnath Yatra 2022: جموں میں یاترا کیلئے سبھی انتظامات مکمل، 30 جون سے شروع ہوگی یاترا

    Amarnath Yatra 2022: جموں میں یاترا کیلئے سبھی انتظامات مکمل، 30 جون سے شروع ہوگی یاترا

    Amarnath Yatra 2022: جموں میں یاترا کیلئے سبھی انتظامات مکمل، 30 جون سے شروع ہوگی یاترا

    Jammu and Kashmir: شری امرناتھ جی کی سالانہ یاترا 30 جون سے شروع ہونے جارہی ہے۔ یاتریوں کا پہلا قافلہ جموں سے مقدس گپھا کے لئے روانہ ہوگا، جو شری امرناتھ جی یاترا کا پہلا بیس کیمپ بھی ہے۔

    • Share this:
    جموں : شری امرناتھ جی کی سالانہ یاترا 30 جون سے شروع ہونے جارہی ہے۔ یاتریوں کا پہلا قافلہ جموں سے مقدس گپھا کے لئے روانہ ہوگا، جو شری امرناتھ جی یاترا کا پہلا بیس کیمپ بھی ہے۔ شری امرناتھ جی شرائن بورڈ، ایل جی انتظامیہ کے مختلف شاخیں اور سیکورٹی ایجنسیوں نے اس سال کی یاترا کو کامیاب بنانے کے لیے وسیع انتظامات کئے ہیں۔ یاترا سادھوؤں کے ایک گروپ سے شروع ہوگی ہے جو شری امرناتھ یاترا سے پہلے جموں شہر کے پرانی منڈی علاقے میں رام مندر پہنچتے ہی بھجن گا رہے ہیں اور 'بھم بھم بھولے' کا نعرہ لگا رہے ہیں۔ یہ سادھو ملک کے مختلف حصوں سے جموں پہنچے ہیں کیونکہ جموں امرناتھ جی یاتریوں کا پہلا بیس کیمپ ہے۔ ظاہر ہے یہ سبھی سادھو کافی پرجوش ہیں کیونکہ وہ دو سال کے وقفے کے بعد مقدس گپھا میں بابا بھولے ناتھ کے درشن کر سکیں گے کیونکہ شری امرناتھ جی یاترا کووڈ کی وجہ سے مسلسل دو سالوں سے معطل رہی۔

    ان سادھوؤں کو جموں شہر کے مختلف مندروں میں رکھا گیا ہے اور انہیں ہر طرح کی سہولیات فراہم کی جا رہی ہیں ۔ انتظامیہ اس سال 8 لاکھ سے زیادہ یاتریوں کی آمد کی توقع کر رہی ہے۔ واضح طور پر یہ ایک ریکارڈ توڑ یاترا ہوگی اور آنے والے دنوں میں یاتریوں کی اکثریت مختلف ذرائع نقل و حمل کے ذریعے جموں پہنچے گی۔ یاتری نواس جموں اور دیگر سرکاری عمارتوں اور ہوٹلوں میں انتظامات مکمل کر لیے گئے ہیں۔

     

    یہ بھی پڑھئے: پلوامہ میں این آئی اے کی کئی مقامات پر چھاپے ماری، جانئے کیا ہے وجہ


    جموں انتظامیہ اور مختلف ایجنسیوں اور محکموں جیسے جموں میونسپل کارپوریشن (جے ایم سی) نے پریشانی سے پاک یاترا کو یقینی بنانے کے لیے پوری طرح تیاریاں کی ہیں۔ مثال کے طور پر جے ایم سی اگلے کچھ دنوں میں شری امرناتھ جی یاتریوں کے جموں پہنچنے پر مہا کنبھ میلے جیسی سہولیات فراہم کرنے جا رہی ہے۔ لنگر حال اور دوسری جگہوں کے لیے مختلف  گاڑیوں میں میونسپل کمیٹیاں سالڈ ویسٹ کو اکٹھا کرنا اور نقل و حمل، جھاڑو لگانے اور میونسپل سالڈ ویسٹ اکٹھا کرنے کے لیے تین شفٹوں میں صفائی ملازمین کو تعیناتی کیا گیا ہے ۔

    وہیں سیکورٹی کے حوالے سے بھی تمام بند بست کیے گیے ہیں ۔ کئی دہشت گرد تنظیموں نے آنے والی شری امرناتھ یاترا کے دوران حملوں  کرنے کی دھمکی دی ہے۔ اس کو مدنظر رکھتے ہوئے اس سال یاترا کے لیے اعلیٰ سطحی حفاظتی انتظامات کیے گئے ہیں۔ مرکزی حکومت نے 43 دن طویل امرناتھ یاترا کو کسی ناخوشگوار واقعہ سے پاک کرنے کے لیے اضافی نیم فوجی کمپنیاں بھیجنے کا فیصلہ کیا ہے ۔

     

    یہ بھی پڑھئے: اگنی پتھ اسکیم کے خلاف جموں شہر میں زبردست احتجاج، کئی افراد کو پولیس نے کیا گرفتار


    اعلیٰ سطحی میٹنگوں کی ایک سیریز کے بعد حکومت نے امرناتھ یاترا کی گاڑیوں کے جموں و کشمیر میں داخل ہونے کے بعد انہیں محفوظ بنانے کے لیے سینکڑوں سی سی ٹی وی کیمرے نصب کرنے اور ریڈیو فریکوئنسی شناخت (آر ایف آئی ڈی) ٹیگ فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ چیکنگ کے لیے ڈرون کیمروں کا بھی استعمال کیا جائیے گا۔ اعلیٰ حفاظتی انتظامات میں حکومت نے کشمیر میں نیم فوجی دستوں کی 300 اضافی کمپنیاں بھیج کر کثیر سطحی حفاظتی احاطہ فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

    وہیں دوسری جانب یاترا سے جموں کے کاروباری کافی خوش نظر آرہے ہیں ۔ کچھ ٹریڈ یونین لیڈروں نے نیوز 18 کو بتایا کہ دو سال کے بعد یاترا شروع ہونے والی ہے اور یہاں کے ٹریڈرس کا کافی فائده ملنے والا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ دو سال کووڈ کی وبا سے یہاں کا کاروبار ٹھپ ہوگیا تھا اور انہیں کافی پریشانیوں سے دوچار ہونا پڑا ۔ انہوں یاترا خوش اسلوبی سے انجام تک پہنچنے کی خواہش ظاہر کی ۔ تاکہ انہیں اور دیگر یومیہ اجرتوں پر کام کرنے والے مزدوروں کو فائدہ پہنچے ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: