உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Jammu and Kashmir: امرناتھ یاترا دوبارہ بحال، جموں کشمیر کے ڈی جی پی نے کیا دورہ

    موسمی خرابی اور مسلسل بارشوں کی وجہ سے گزشتہ روز امرناتھ معطل رہنے کے بعد آج دوبارہ بحال کر دی گئی۔ اس سلسلے میں یاتریوں کا ایک اور جتھہ پہلگام کے نن ون یاترا بیس کیمپ سے مقدس گپھا کی جانب روانہ ہوا۔

    موسمی خرابی اور مسلسل بارشوں کی وجہ سے گزشتہ روز امرناتھ معطل رہنے کے بعد آج دوبارہ بحال کر دی گئی۔ اس سلسلے میں یاتریوں کا ایک اور جتھہ پہلگام کے نن ون یاترا بیس کیمپ سے مقدس گپھا کی جانب روانہ ہوا۔

    موسمی خرابی اور مسلسل بارشوں کی وجہ سے گزشتہ روز امرناتھ معطل رہنے کے بعد آج دوبارہ بحال کر دی گئی۔ اس سلسلے میں یاتریوں کا ایک اور جتھہ پہلگام کے نن ون یاترا بیس کیمپ سے مقدس گپھا کی جانب روانہ ہوا۔

    • Share this:
    جموں کشمیر: موسمی خرابی اور مسلسل بارشوں کی وجہ سے گزشتہ روز امرناتھ معطل رہنے کے بعد آج دوبارہ بحال کر دی گئی۔ اس سلسلے میں یاتریوں کا ایک اور جتھہ پہلگام کے نن ون یاترا بیس کیمپ سے مقدس گپھا کی جانب روانہ ہوا۔ اگرچہ یاترا کے مختلف پڑاؤں پر آج وقفے وقفے سے بارش ہوتی رہی، تاہم اس کے باوجود بھی یاترا کا سلسلہ جاری رہا۔ اس طرح سے اب تک ڈیڑھ لاکھ کے قریب یاتریوں نے مقدس امرناتھ گپھا میں پوتر شیو لنگم کے درشن کئے۔ یاتریوں نے انتظامات پر کافی خوشی کا اظہارکیا۔

    دوسری جانب، جموں وکشمیر کے ڈائریکٹر جنرل آف پولیس دلباغ سنگھ نے مقدس غار اور پنجترنی کا دورہ کیا، جہاں انہوں نے جاری شری امرناتھ جی یاترا کے انتظامات کا جائزہ لیا۔ انہوں نے مقدس غار اور پنجترنی میں سول اور سیکورٹی فورسز کے افسران سے بات چیت کی۔ انہوں نے شیش ناگ کیمپ کا بھی فضائی سروے بھی کیا۔

    مقدس غار اور پنجترنی میں تعینات تمام فورسز اور انتظامیہ کے سینئر افسران کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے، ڈی جی پی نے آفات کے بعد فوری ردعمل اور اس کے انتظام کے تمام اسٹیک ہولڈرز کی تعریف کی جنہوں نے یاتریوں کو نکالنے میں اپنی خدمات پیش کیں اور ہرممکن مدد اور امداد کو یقینی بنایا۔

    انہوں نے تمام افسران کو ہدایت کی کہ وہ کسی بھی قسم کے ناگہانی صورتحال سے نمٹنے کے لئے چوکس رہیں۔ انہوں نے کہا کہ یاتریوں کی حفاظت اور تحفظ اولین ترجیح ہے اورحکومت کی طرف سے جاری کردہ تازہ ترین رہنما خطوط اور ایس او پیز پر عمل درآمد کو یقینی بنانے پر بھی زور دیا۔
    ڈی جی پی نے یاتریوں کی ہر ممکن مدد اور امداد کو یقینی بنانے کے لیے تمام اسٹیک ہولڈرز کے درمیان ہم آہنگی کی اعلیٰ سطح پر زور دیا۔

    انہوں نے افسران کو ہدایت کی کہ قدرتی آفت سے متاثرہ تمام خدمات فراہم کرنے والوں کی مدد کریں۔ انہوں نے تمام افسروں اور جوانوں کو خراج تحسین پیش کیا جو یاتریوں کی حفاظت کے لیے سخت اور مخالف موسمی حالات میں بہت محنت کر رہے ہیں۔ انہوں نے تمام فورسز اور سول افسران و جوانوں کی آفات کے بعد کی جانے والی کوششوں کی بھی تعریف کی۔ انہوں نے یاتریوں اور اس سے وابستہ لوگوں کے لیے موثر خدمات کو یقینی بنانے کے لئے جموں و کشمیر پولیس کے ماونٹین ریسکیو ٹیم (ایم آرٹی) کی بھی تعریف کی۔

    سول، پولیس، سیکورٹی فورسزکے افسران نے ڈی جی پی کو اب تک کئے گئے اقدامات کے بارے میں بتایا جس میں ریسکیو آپریشنز اور اس واقعے کے بعد یاتریوں اور خدمت گزاروں کو فراہم کی جانے والی امداد شامل ہے۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: