உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Amarnath Yatra 2022: یاترا کیلئے پہلگام میں روٹ پلان مرتب، ڈی سی اننت ناگ نے جاری کئے احکامات

    Amarnath Yatra 2022: یاترا کیلئے پہلگام میں روٹ پلان مرتب، ڈی سی اننت ناگ نے جاری کئے احکامات

    Amarnath Yatra 2022: یاترا کیلئے پہلگام میں روٹ پلان مرتب، ڈی سی اننت ناگ نے جاری کئے احکامات

    Amarnath Yatra 2022 : شری امرناتھ جی یاترا- 2022 کے سلسلے میں سیکورٹی کو یقینی بنانے اور یاتریوں کی بنا خلل و احسن آمدو رفت کیلئے ڈی سی اننت ناگ ڈاکٹر پیوش سنگلا نے پہلگام اور ملحقہ علاقوں کیلئے روٹ پلان جاری کیا ہے ۔

    • Share this:
    جموں و کشمیر: شری امرناتھ جی یاترا- 2022 کے سلسلے میں سیکورٹی کو یقینی بنانے اور یاتریوں کی بنا خلل و احسن آمدو رفت کیلئے ڈی سی اننت ناگ ڈاکٹر پیوش سنگلا نے پہلگام اور ملحقہ علاقوں کیلئے روٹ پلان جاری کیا ہے ۔ ڈپٹی کمشنر اننت ناگ ڈاکٹر پیوش سنگلا نے 30 جون سے شروع ہونے والی شری امرناتھ جی یاترا کے پیش نظر ٹریفک کے ضابطے جاری کئے۔

     

    یہ بھی پڑھئے: سرکاری اراضی پر اسکولوں کے معاملہ میں ہائی کورٹ نے دی اسکول انتظامیہ کو بڑی راحت


    جاری کردہ حکم نامے کے مطابق 25 جون سے سیاحوں کی چندن واری، بے تاب ویلی ایکسس اور آرو ویلی محور کی طرف نقل و حرکت پر پابندیاں عائد کر دی گئی ہیں۔ مزید حکم میں کہا گیا ہے کہ یاتریوں کے علاوہ تمام گاڑیوں کو صرف سرکٹ روڈ سے جانے کی اجازت ہوگی اور صرف یاترا گاڑیوں کو سربل سے آگے پہلگام نن ون بیس کیمپ راستے سے جانے کی اجازت ہوگی۔

     

    یہ بھی پڑھئے: 'G20 کا 2023 اجلاس کشمیر میں منعقد کروانا سفارتی سطح پر ہندوستان کی بڑی کامیابی ہوگی ثابت'


    ڈپٹی کمشنر نے میونسپل کمیٹی پہلگام کو ہدایت دی ہے کہ سڑک کے کنارے پارکنگ کی جگہوں کی نشاندہی کرنے والے نشانات کو نصب کریں۔ نن ون بیس کیمپ میں پارکنگ کی مزید جگہ یاتریوں کی طرف سے چھوٹی گاڑیوں یعنی ایل ایم ویز کی پارکنگ کے لیے استعمال کی جائے گی۔  اس کے علاوہ پارکنگ کی جگہوں میں اضافہ کیا گیا ہے ، تاکہ مزید گاڑیوں کو ایڈجسٹ کیا جا سکے۔  ضلعی پولیس اور ٹریفک حکام کی مشاورت سے تفصیلی نقل و حرکت اور پارکنگ کے منصوبے بنائے گئے ہیں۔

    واضح رہے کہ رواں برس کے 30 جون سے اس سال کی شری امرناتھ یاترا 2019 کے بعد پہلی بار منعقد ہو رہی ہے۔ اس سلسلے میں سیکورٹی سمیت تمام تر انتظامات کو پہلے ہی مکمل کر دیا گیا۔ جبکہ یاتریوں کی سیکورٹی کو ممکن بنانے کیلئے اس بار آر ایف آئی ڈی اور جی پی ایس ٹیگ متعارف کئے گئے ہیں۔ ان ٹیکس کی مدد سے یاتریوں کی نقل و حرکت کو ٹریک کیا جائے گا۔ جبکہ یاترا بیس کیمپوں میں بھی سیکورٹی کو مزید بڑھا دیا گیا ہے۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: