உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    امرناتھ یاترا 2022: سیکورٹی امور کا جائزہ لینے کی غرض سے پولیس کے اعلیٰ افسران خود کر رہے ہیں نگرانی

    رواں سال کے 30 جون سے شروع ہونے والی امرناتھ یاترا کے لئے سیکورٹی امور کا جموں وکشمیر پولیس کے اعلیٰ عہدیداران بذات خود نگرانی کر رہے ہیں۔ اس سلسلے میں ڈائریکٹر جنرل آف پولیس اور آئی جی پی کشمیر کے ساتھ ساتھ آئی جی پی جموں بھی مسلسل سیکورٹی میٹنگوں میں سیکورٹی امور کا جائزہ لے رہے ہیں۔

    رواں سال کے 30 جون سے شروع ہونے والی امرناتھ یاترا کے لئے سیکورٹی امور کا جموں وکشمیر پولیس کے اعلیٰ عہدیداران بذات خود نگرانی کر رہے ہیں۔ اس سلسلے میں ڈائریکٹر جنرل آف پولیس اور آئی جی پی کشمیر کے ساتھ ساتھ آئی جی پی جموں بھی مسلسل سیکورٹی میٹنگوں میں سیکورٹی امور کا جائزہ لے رہے ہیں۔

    رواں سال کے 30 جون سے شروع ہونے والی امرناتھ یاترا کے لئے سیکورٹی امور کا جموں وکشمیر پولیس کے اعلیٰ عہدیداران بذات خود نگرانی کر رہے ہیں۔ اس سلسلے میں ڈائریکٹر جنرل آف پولیس اور آئی جی پی کشمیر کے ساتھ ساتھ آئی جی پی جموں بھی مسلسل سیکورٹی میٹنگوں میں سیکورٹی امور کا جائزہ لے رہے ہیں۔

    • Share this:
    جموں کشمیر: رواں سال کے 30 جون سے شروع ہونے والی امرناتھ یاترا کے لئے سیکورٹی امور کا جموں وکشمیر پولیس کے اعلیٰ عہدیداران بذات خود نگرانی کر رہے ہیں۔ اس سلسلے میں ڈائریکٹر جنرل آف پولیس اور آئی جی پی کشمیر کے ساتھ ساتھ آئی جی پی جموں بھی مسلسل سیکورٹی میٹنگوں میں سیکورٹی امور کا جائزہ لے رہے ہیں۔ اسی ضمن میں انسپکٹر جنرل آف پولیس (آئی جی پی) کشمیر زون، وجے کمار نے پہلگام میں نن ون یاترا کیمپ اور امرناتھ یاترا کے پہلے روایتی پڑھاو چندن واڑی کا دورہ کیا۔

    آئی جی پی کے ساتھ ڈپٹی انسپکٹر جنرل (ڈی آئی جی) جنوبی کشمیر رینج، سینئر سپرنٹنڈنٹ آف پولیس (ایس ایس پی) اننت ناگ اورسینٹرل ریزرو پولیس فورس (سی آرپی ایف) کے سی او بھی تھے۔ اس موقع پر افسران نے سالانہ امرناتھ یاترا کے لئے سیکورٹی انتظامات سے متعلق میٹنگ کی۔ عہدیداروں کے مطابق یاترا کے آسانی سے انعقاد کو یقینی بنانے کے لئے چندن واڑی میں پولیس چوکی، سی آر پی ایف کیمپ اور فوج کا کیمپ قائم کیا گیا ہے۔
    ڈائرکٹر جنرل آف پولس دلباغ سنگھ نے بالتل اور مقدس گپھا کے نزدیک دومیل میں بیس کیمپوں کا دورہ کیا، جہاں انہوں نے ان اہم مقامات اور امرناتھ یاترا کے راستے میں کئے گئے حفاظتی انتظامات کا جائزہ لیا۔  انہوں نے بالتل میں پولیس اور سی آر پی ایف کے افسران اور جوانوں سے بات چیت کی۔  ڈی جی پی کے ساتھ اسپیشل ڈی جی، سی آئی ڈی جے اینڈ کے آر آر سوین بھی تھے۔ اس موقع پرایس ایس پی گاندربل نکھل بورکر، سی آر پی ایف کے کمانڈنٹ راجندر سنگھ ہوم ہری، ایس ڈی پی او کنگن اور دیگر دائرہ اختیاری افسران موجود تھے۔
    دورے کے دوران، ڈی جی پی نے بالتل، دومیل اور راستے میں سیکورٹی اور لاجسٹک انتظامات کا جائزہ لیا اور یاتری گاڑیوں کے لئے پارکنگ کی سہولیات کا بھی معائنہ کیا۔ انہوں نے یاترا کے لئے پارکنگ کے مناسب انتظامات، ٹریفک کے بہتر انتظام اور سیکورٹی کے لئے ہدایات دیں۔ انہوں نے یاتریوں کو زحمت سے بچنے کے لئے اہم مقامات پرگراؤنڈ برابرکرکے پارکنگ کے لئے جگہ بڑھانے کی ہدایت کی۔
    ڈی جی پی نے بالتل میں پولیس کی تعیناتی، جے پی سی آر اور پولیس چوکی کا معائنہ کیا اور جوائنٹ کنٹرول رومز کے چوبیس گھنٹے کام کرنے اور سینئر افسران کے ذریعہ انتظامات کی نگرانی پر زور دیا۔ ڈی جی پی نے بالتل میں افسران اور اہلکاروں کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے امرناتھ یاترا کو آسانی سے چلانے کے لئے سازگارماحول پیدا کرنے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ یاترا کو مطلوبہ انداز میں منظم کرنے کے لئے سیکورٹی پروٹوکول کی سختی سے پابندی کو یقینی بنایا جائے۔ انہوں نے ہدایت دی کہ یاتریوں کو ہرممکن مدد فراہم کی جائے۔

    ڈی جی پی نے یاترا کے بہترین انعقاد کے لئے تمام ایجنسیوں کے درمیان بہتر تال میل کی ہدایت کی۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی خامی کو دورکرنے کے لئے ہدایات کی سختی سے تعمیل کو یقینی بنایا جائے۔ ڈی جی پی، جموں وکشمیر نے کہا کہ کوئیک رسپانس ٹیموں کو ہائی الرٹ پر رکھا جانا چاہئے تاکہ یاتریوں کو ضرورت پڑنے پر ضروری امداد فراہم کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ تعیناتی گرڈ کو مضبوط بنانے کے لئے مختلف سیکورٹی ایجنسیوں کی جانب سے کافی افرادی قوت کو ڈیوٹی پر لگایا جا رہا ہے۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: