உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Amarnath Yatra: شری امرناتھ جی یاترادوبارہ بحال، یاتریوں کاایک اور قافلہ برفانی باباکےدرشن کےلیےروانہ

    ہزاروں یاتریوں نے مقدس گپھا میں برفانی لنگم کے درشن کیے۔

    ہزاروں یاتریوں نے مقدس گپھا میں برفانی لنگم کے درشن کیے۔

    Amarnath Yatra: بال تل کے یاترا بیس کیمپ سے بھی یاتریوں کا ایک اور جتھا کڑے سیکورٹی بندو بست میں مقدس گپھا کی بجانب روانہ ہوا، جبکہ ہیلی کاپٹر سروس بھی آج دن پر چالو رہی۔ اس طرح سے آج بھی ہزاروں یاتریوں نے مقدس گپھا میں برفانی لنگم کے درشن کیے۔

    • Share this:
    منگل کے روز موسمی خرابی کی وجہ سے معطل رہنے کے بعد بدھ کو دوبارہ شری امرناتھ جی یاترا دوبارہ بحال ہوئی۔ پہلگام کے نن ون یاترا بیس کیمپ سے امرناتھ یاتریوں کا ایک اور قافلہ صبح سویرے مقدس گپھا میں پوتر شیو لنگم کے درشن کےلیے روانہ ہوا۔ ادھر بال تل کے یاترا بیس کیمپ سے بھی یاتریوں کا ایک اور جتھا کڑے سیکورٹی بندو بست میں مقدس گپھا کی بجانب روانہ ہوا، جبکہ ہیلی کاپٹر سروس بھی آج دن پر چالو رہی۔ اس طرح سے آج بھی ہزاروں یاتریوں نے مقدس گپھا میں برفانی لنگم کے درشن کیے۔

    ادھر جموں سے نکلنے والا ایک اور قافلے کے علاوہ جموں سرینگر قومی شاہراہ پر روکےگئے یاتریوں کو بھی کشمیر کی جانب بڑھنے کی اجازت دے دی گئی۔ رام بن اور دیگر مقامات پر ٹرانزٹ کیمپوں میں رات بھر قیام کے بعد امرناتھ یاتری پہلگام کے نن ون بیس کیمپ اور بال تل پہنچ گئے۔ اسطرح سے ابھی تک 70 ہزار کے قریب یاتریوں نے مقدس گپھا میں برفانی شیو لنگم کے درشن کئے ہیں۔ یاتریوں نے بیس کیمپوں کے علاوہ ہمالیائی گپھا تک کے پورے ٹریک پر سیکورٹی سمیت دیگر انتظامات کی سراہنا کی۔

    یہ بھی پڑھیں:

    راجستھان سے آنے والے آشیش نامی ایک یاتری نے کہا کہ لگ بھگ نن ون یاترا بیس کیمپ میں دو دن قیام کے بعد انہیں آج مقدس گپھا کی جانب درشن کے لیے جانے کی اجازت ملی اور موسم میں بہتری کے ساتھ ہی دیگر یاتریوں کو بھی جانے کی اجازت دی گئی۔ آشیش نے کہا کہ یاترا بیس کیمپ میں دو رات گزارنے کے بعد انہیں قطعی طور پر محسوس نہیں ہوا کہ وہ گھر سے دور ہیں۔ کیونکہ بیس کیمپ میں انہیں غیر معمولی انتظامات دیکھنے کو ملے جبکہ لنگروں میں بھی کھانے پینے کے اعلیٰ انتظامات کیے گئے ہیں۔

    مہاراشٹر سے آئے راجیو نامی ایک یاتری نے کہا کہ بیس کیمپوں کے ساتھ ساتھ مقدس گپھا تک پورے ہمالیائی ٹریک پر سیکورٹی سمیت دیگر انتظامات قابل سراہنا ہیں۔ ایسے میں یاتریوں کےلیے کسی قسم کی دشواری پیش نہیں آ رہی ہے جو ایک خوش آیند بات ہے۔ واضح رہے کہ رواں برس شری امرناتھ جی یاترا 2 سال کے وقفے بعد شروع ہوئی ہے۔ یاترا 11 اگست رکشا بندھن کے روز مقدس گپھا میں آخری درشن کے ساتھ ہی اختتام پزیر ہو گی۔
    Published by:Mirzaghani Baig
    First published: