உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Amarnath Yatra 2022: پہلگام اور بال تل سے 30 جون کو امرناتھ یاتریوں کا پہلا جتھا مقدس گپھا کی جانب ہوگا روانہ، تیاریاں مکمل

    Amarnath Yatra 2022: پہلگام اور بال تل سے 30 جون کو امرناتھ یاتریوں کا پہلا جتھا مقدس گپھا کی جانب ہوگا روانہ، تیاریاں مکمل

    Amarnath Yatra 2022: پہلگام اور بال تل سے 30 جون کو امرناتھ یاتریوں کا پہلا جتھا مقدس گپھا کی جانب ہوگا روانہ، تیاریاں مکمل

    Jammu and Kashmir : اس بار یاترا میں سیکورٹی کے غیر معمولی انتظامات کے علاوہ طبی و دیگر انتظامات کو بھی حتمی شکل دے دی گئی ہے اور مقدس گپھا تک یاترا ٹریک کو بھی قابل آمد و رفت بنادیا گیا ہے۔

    • Share this:
    جموں و کشمیر: شری امرناتھ جی یاترا 2022 کے حوالے سے تمام تر انتظامات کو مکمل کیا گیا ہے اور 30 جون کو پہلگام کے نن ون بیس کیمپ اور بال تل بیس کیمپ سے امرناتھ یاتریوں کا پہلا جتھا مقدس گپھا کی جانب برفانی شیو لنگم کے درشن کے لیے روانہ ہوگا۔ اس بار یاترا میں سیکورٹی کے غیر معمولی انتظامات کے علاوہ طبی و دیگر انتظامات کو بھی حتمی شکل دے دی گئی ہے اور مقدس گپھا تک یاترا ٹریک کو بھی قابل آمد و رفت بنادیا گیا ہے۔

    ہمالیا کی آغوش میں بابا برفانی کی گپھا میں مقدس شیو لنگم کے درشن کے سلسلے میں امرناتھ یاترا دو سال کے وقفے کے بعد اس سال منعقد ہوگی ۔ یاترا کے سلسلے میں پہلے ہی تمام تر انتظامات کو حتمی شکل دے دی گئی ہے۔ جبکہ چندن واڑی اور بال تل کے راستوں سے مقدس گپھا کو جانے والے ہمالیائی ٹریک کو آمد و رفت کے قابل بنانے کا کام بھی آخری مراحل میں ہے۔ انتظامیہ کے اہلکاروں نے پہلے ہی مختلف پڑاؤں سمیت مقدس گپھا تک پیش قدمی کی ہے اور بجلی و مواصلات سمیت تمام دیگر انتظامات کو مکمل کیا گیا ہے۔

     

    یہ بھی پڑھئے: بے گناہ کو چھیڑو مت اور گنہگار کو کسی بھی حال میں چھوڑو مت : منوج سنہا


    ڈاکٹر محمد حسین، تحصیلدار پہلگام و مجسٹریٹ نے نیوز 18 کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہا کہ یاتریوں کی رہائشی سہولیات سے لے کر طبی سہولیات اور پورے ٹریک سمیت تمام بیس کیمپوں میں بجلی، پانی، اور مواصلات کی سہولت کو بہم رکھا گیا ہے اور انتظامیہ پوری طرح سے یاتریوں کے استقبال کیلئے تیار ہے۔  امرناتھ یاترا کیلئے سیکورٹی ہمیشہ ایک چلینج رہتا ہے۔ اس بار چلینج سے نمٹنے کیلئے ہائی ٹیک انتظامات کو عمل میں لایا جا رہا ہے۔

    جموں سے کشمیر کسی بھی یاترا گاڑی کو بنا آر او پی چلنے کی اجازت نہیں ہوگی۔ سی سی ٹی وی اور ڈرون کیمروں کی خدمات کے علاوہ تین لیئر سیکورٹی گارڈ قائم کیا گیا ہے اور قومی شاہراہ و دیگر اہم شاہراہوں پر سیکورٹی کے غیر معمولی انتظامات عمل میں لائے گئے ہیں۔  جبکہ اس مرتبہ یاتریوں و سروس پروائیڈرس کی نقل و حمل پر نظر رکھنے کیلئے آر ایف آئی ڈی اور جی پی ایس چپس کا استعمال کیا جا رہا ہے۔ جموں و کشمیر پولیس کے علاوہ سی آر پی ایف، بی ایس ایف، ایس ایس بی و فوج کی خدمات بھی حاصل کی گئی ہیں۔

     

    یہ بھی پڑھئے: Amarnath Yatra 2022: پہلگام میں روٹ پلان مرتب، ڈی سی اننت ناگ نے جاری کئے احکامات


    امرناتھ یاتریوں کی طبی نگہداشت کیلئے ڈایرکٹوریٹ آف ہیلتھ سروسز کی جانب سے اس مرتبہ خاص انتظامات کئے گئے ہیں۔ جبکہ چندن واڑی اور بال تل میں ڈی آر ڈی او کے ہائی ٹیک اسپتال قائم کئے گئے ہیں۔ اس کے علاوہ تمام بیس اسپتالوں میں اس بار آکسجینیٹڈ بیڈوں کی تعداد میں اضافہ کیا گیا ہے۔

    واضح رہے کہ بابا امرناتھ کی مقدس گپھا سطح سمندر سے 12,756 فٹ کی بلندی پر واقع ہے اور اس سال 8 لاکھ کے قریب یاتریوں کی آمد متوقع ہے۔ جبکہ یہ یاترا صدیوں سے مذہبی بھائی چارے کی ایک مثال بھی ہے اور اس مرتبہ بھی مقامی لوگوں کو یاترا کا بے صبری سے انتظار ہے۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: