உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    امت شاہ کی افسران کو دو ٹوک- یا تو جموں وکشمیر میں دہشت گردی کو ختم کرنے کے لئے لڑیں یا پھر لے لیں ٹرانسفر

    جموں وکشمیر : امت شاہ نے کہا- دہشت گردی کو ختم کرنے کے لئے لڑیں یا پھر لے لیں ٹرانسفر

    جموں وکشمیر : امت شاہ نے کہا- دہشت گردی کو ختم کرنے کے لئے لڑیں یا پھر لے لیں ٹرانسفر

    Amit Shah Jammu Kashmir Visit: ذرائع نے سی این این-نیوز 18 کو بتایا کہ امت شاہ نے اپنے دورے میں سیکورٹی افسران سے سیدھے طور پر کہا کہ وہ جموں وکشمیر میں دہشت گردی (Terrorism) کو ختم کرنے کے پر اپنی پوری توجہ دیں۔

    • Share this:
      نئی دہلی: مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ (Amit Shah) جموں وکشمیر (Jammu Kashmir) کے تین روزہ دورے سے واپس لوٹ چکے ہیں۔ وزیر داخلہ 5 اگست 2019 کو آرٹیکل 370 ہٹنے کے بعد پہلی بار جموں وکشمیر پہنچے تھے۔ اپنے تین روزہ دورہ کے دوران انہوں نے اعلیٰ افسران کے ساتھ بھی میٹنگ کی۔ ذرائع نے سی این این نیوز 18 کو بتایا کہ امت شاہ نے اپنے دورے میں سیکورٹی افسران سے سیدھے طور پر کہا کہ وہ جموں وکشمیر میں دہشت گردی (Terrorism) کو ختم کرنے کے پر اپنی پوری توجہ دیں۔

      وزیر داخلہ نے اپنے سفر کے دوران ہفتہ کے روز جموں وکشمیر میں سیکورٹی کی صورتحال کا جائزہ لیا اور سیکورٹی افسران کے ساتھ میٹنگ کی۔ اس میٹنگ میں ان کے ساتھ لیفیٹننٹ گورنر منوج سنہا، جموں وکشمیر پولیس، فوج، نیم فوجی دستوں اور خفیہ ایجنسی کے اعلیٰ افسران شامل ہوئے تھے۔ وزیر داخلہ امت شاہ کا یہ دورہ ایسے وقت میں ہوا، جب حال ہی میں وادی میں کئی عام شہریوں کو قتل کئے جانے کا سانحہ سامنے آیا تھا۔

      جنہیں ڈر لگ رہا ہے وہ دوسری پوسٹنگ لے لیں

      ذرائع کے مطابق، اس اعلیٰ سطحی میٹنگ میں امت شاہ نے پہلے خفیہ محکمہ کے سربراہان کو خطاب کیا اور ان سے جموں وکشمیر میں دہشت گردی پر کس طرح سے روک لگائی جائے، اس کے لئے مناسب اقدامات کے بارے میں پوچھا۔ افسران نے وزیر داخلہ کو ان کے طریقہ کار کے بارے میں بتایا اور یہ بھی کہا کہ مقامی افسران انٹلی جنس کی طرف سے دی گئی انفارمیشن پر کام نہیں کرنا چاہتے۔ ذرائع نے کہا کہ امت شاہ نے اس پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ جن افسران کو ڈر لگتا ہے، انہیں کشمیر میں کام نہیں کرنا چاہئے، اس کے بجائے وہ انہیں دوسری جگہ پوسٹنگ لے لینی چاہئے۔

      11 دراندازی کے جواب میں وزیر داخلہ نے کہی یہ بات

      ذرائع کا کہنا ہے کہ انہوں نے یہ صرف ایک بار نہیں کہا بلکہ اس بات کو دو بار دوہرایا اور ایسے افسران کو یہاں سے فوراً جانیں کے لئے کہا ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ امت شاہ نے دورے کے دوران فوج کمانڈر سے بھی بات کی۔ افسر نے انہیں بتایا کہ دراندازی میں مسلسل کمی آرہی ہے۔ 2021 میں صرف 11 دراندازی ہوئی ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ اس پر امت شاہ نے جواب دیا کہ اگر دراندازی صرف 11 ہے تو قتل میں بھی کمی آنی چاہئے۔

      ذرائع کے مطابق، امت شاہ نے کہا کہ اگر صرف 11 دراندازی ہوئی ہے تو اب تک وادی میں دہشت گردی اور لوگوں کے قتل کے حادثات پوری طرح سے ختم ہوجانی چاہئے تھی، جو کہ نہیں ہوئی ہے۔ انہوں نے افسران سے کہا کہ کیا آپ کو لگتا ہے کہ یہ صحیح جواب ہے۔ میٹنگ میں حصہ لینے والے اعلیٰ افسران میں جموں وکشمیر کے لیفیٹننٹ گورنر منوج سنہا، جموں وکشمیر پولیس، ڈی جی پی کشمیر، آجی جی کشمیر، انٹلی جنس بیورو اور را سربراہ اور مرکزی داخلہ سکریٹری اجے بھلا شامل تھے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: