ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر: پلوامہ حملہ آورکا بھائی گرفتار، جیش محمد دہشت گردوں کو پہنچاتا تھا وادی

سمیر ڈار نام کے اس شخص نے بتایا ہے کہ دسمبر 2019 میں بھی اس نے ممنوعہ تنظیم جیش محمد کے دہشت گردوں کو وادی میں پہنچایا تھا۔

  • Share this:
جموں وکشمیر: پلوامہ حملہ آورکا بھائی گرفتار، جیش محمد دہشت گردوں کو پہنچاتا تھا وادی
جموں وکشمیر: پلوامہ حملہ آور کا بھائی گرفتار

جموں / سری نگر: جموں وکشمیر کے پلوامہ میں گزشتہ سال فروری میں خود کش حملہ کرکے 40 سی آرپی ایف جوانوں کو شہید کرنے والے عادل ڈارکے رشتےکے بھائی سمیر ڈار نے پوچھ گچھ میں بڑا انکشاف کیا ہے۔ اس نے بتایا کہ دسمبر 2019 میں بھی اس نے ممنوعہ تنظیم جیش محمد کے دہشت گردوں کو وادی میں پہنچایا تھا۔ افسران نے اتوار کو یہ اطلاع دی۔


سمیرڈارکو پولیس نے جمعہ کو اس وقت پکڑا، جب جیش محمدکے دہشت گردوں کے ذریعہ سیکورٹی اہلکاروں پرگولہ باری کےحادثہ کو انجام دیئے جانےکے بعد وہ نگروٹا سے بھاگ رہا تھا۔ جنوبی کشمیرکے پلوامہ ضلع واقع کاکپورہ علاقےکے رہنے والے سمیر نے اعتراف کیا ہےکہ وہ گزشتہ سال کامیابی کے ساتھ جیش محمد کے دہشت گردوں کو وادی کے پلوامہ تک پہنچایا تھا۔ سمیر نے دعویٰ کیاکہ پلوامہ چھوڑنےکے بعد دہشت گردوں کے ٹھکانوں کی اسے اطلاع نہیں ہے۔ حالانکہ، پوچھ گچھ کے دوران اس نے تسلیم کیا کہ دہشت گردوں کے پاس بختربند گاڑیوں میں سیندھ لگانےکےلئے 'اسٹیل کےکارتوس' سمیت بڑی مقدار میں گولہ بارود تھے۔




انکشاف سے سیکورٹی اہلکاروں کی تشویش میں اضافہ

سمیرڈارکے انکشاف سے پاکستان سے متصل بین الاقوامی سرحد کی حفاظت کررہے بارڈر سیکورٹی فورسز (بی ایس ایف) سمیت سیکورٹی ایجنسیوں کی تشویش میں اضافہ ہوگیا ہے، جو اب تک ہونے والی ملاقاتی میٹنگ میں دراندازی سے انکار کرتے رہے ہیں۔ قابل ذکرہےکہ گزشتہ سال 14 فروری کو سمیرڈار کے رشتےکے بھائی عادل نے دھماکہ خیز مواد سےلدی کار میں سی آرپی ایف کے بس کے قریب دھماکہ کردیا تھا، جس میں 40 جوان شہید ہوگئے تھے۔ افسران نے بتایا کہ سمیر ڈار نے پوچھ گچھ کرنے والے افسران کو بتایا کہ سرحد پر دراندازی جاری ہے اور دہشت گرد جنوبی کشمیرکے مختلف علاقوں خاص طور پر پلوامہ کے ترال علاقے میں سرگرم ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ سمیرکے مطابق دہشت گردوں کو جنوبی کشمیر کے کریم آباد علاقے میں چھوڑا گیا۔

جموں و کشمیر کے پلوامہ میں ہوئے دہشت گردانہ حملہ میں 40 جوان شہید ہوگئے تھے۔
جموں و کشمیر کے پلوامہ میں ہوئے دہشت گردانہ حملہ میں 40 جوان شہید ہوگئے تھے۔


افسران نے بتایا کہ گرفتار دہشت گرد نے جیش محمدکے دہشت گردوں کےپاس موجود ہتھیاروں کے بارے میں بھی اطلاع دی ہے، جس سے اشارہ ملتا ہےکہ تنظیم کے پاس ایم -4 کاربائن اور اسٹیل کےکارتوس ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ اسٹیل کےکارتوس بلیٹ پروف بنکر کےاندر بھی جاسکتے ہیں، جن کا استعمال دہشت گردانہ مخالف کارروائی کے دوران ہوتا ہے۔
First published: Feb 02, 2020 09:02 PM IST